یکم مئی، روز معلم

سعودی عرب کی ’توہین‘: کویتی بلاگر کو پانچ سال سزائے قید

دنیا، کس قسم کے افراد کو تباہ وبرباد کردیتی ہے؟

ٹرمپ کے خلاف لاکھوں امریکی خواتین کا تاریخی احتجاج

نقیب اللہ قتل؛ راؤ انوار کو پولیس پارٹی سمیت گرفتار کرنے کا فیصلہ

فتویٰ اور پارلیمینٹ

کل بھوشن کے بعد اب محمد شبیر

سعودیہ فوج میں زبردستی بھرتی پر مجبور ہوگیا ہے؛ یمنی نیوز

پاکستان کی غیر واضح خارجہ پالیسی سے معاملات الجھے رہیں گے

پارلیمنٹ پر لعنت

نائیجیریا میں آیت اللہ زکزکی کی حمایت میں مظاہرہ

ایٹمی معاہدے میں کوئی خامی نہیں، امریکی جوہری سائنسداں کا اعتراف

سعودی عرب کے ولیعہد محمد بن سلمان مکار، دھوکہ باز، حیلہ گر اور فریبکار ہیں: قطری شیخ

امریکا نے دہشت گردی کے بجائے چین اور روس کو خطرہ قرار دے دیا

سلامتی کونسل میں پاکستان اور امریکی مندوبین کے درمیان لفظی جنگ

ایک اورماورائے عدالت قتل

کالعدم سپاہ صحابہ کا سیاسی ونگ پاکستان راہ حق پارٹی بھی اھل سیاسی جماعتوں میں شامل

امریکہ اور دہشتگردی کا دوبارہ احیاء

ایرانی جوان پوری طرح اپنے سیاسی نظام کے حامی ہیں؛ ایشیا ٹائمز

دنیائے اسلام، فلسطین اور یمن کے بارے میں اپنی شجاعت کا مظاہرہ کرے

شام کے لیے نئی سازش کا منصوبہ تیار

پاک فوج کیخلاف لڑنا حرام ہے اگر فوج نہ ہوتی تو ملک تقسیم ہوچکا ہوتا: صوفی محمد

امام زمانہ عج کی حکومت میں مذہبی اقلیتوں کی صورت حال

سعودی عرب نائن الیون کے واقعے کا تاوان ادا کرے، لواحقین کا مطالبہ

امریکہ کو دوسرے ممالک کے بارے میں بات کرنے سے باز رہنا چاہیے: چین

پاکستان میں حقانی نیٹ ورک موجود نہیں

سعودی عرب نے یمن میں انسانی، اسلامی اور اخلاقی قوانین کا سر قلم کردیا

پاکستان کو ہم سے دشمن کی طرح برتاؤ نہیں کرنا چاہیے: اسرائیلی وزیراعظم

آرمی چیف نے 10 دہشت گردوں کی سزائے موت کی توثیق کردی

بھارت: ’حج سبسڈی کا خاتمہ، سات سو کروڑ لڑکیوں کی تعلیم کے لیے

صہیونی وزیر اعظم کے دورہ ہندوستان کی وجوہات کچھ اور

پاکستانی سرزمین پر امریکی ڈرون حملہ، عوام حکومتی ایکشن کے منتظر

روس، پاکستان کی دفاعی حمایت کے لئے تیار ہے؛ روسی وزیر خارجہ

عام انتخابات اپنے وقت پر ہونگے: وزیراعظم

ناصرشیرازی اور صاحبزادہ حامد رضا کی چوہدری پرویزالہیٰ سے ملاقات، ملکی سیاسی صورتحال پر تبادلہ خیال

پارلیمنٹ نمائندہ ادارہ ہے اسے گالی نہیں دی جاسکتی: آصف زرداری

زائرین کے لیے خوشخبری: پاک ایران مسافر ٹرین سروس بحال کرنے کا فیصلہ

شریف خاندان نے اپنے ملازموں کے ذریعے منی لانڈرنگ کرائی، عمران خان

امریکہ کی افغانستان میں موجودگی ایران، روس اور چین کو کنٹرول کرنے کے لئے ہے

ایرانی پارلیمنٹ اسپیکر کی تہران اسلام آباد سیکورٹی تعاون بڑھانے پر تاکید

دورہ بھارت سے نیتن یاہو کے مقاصد اور ماحصل

ایوان صدر میں منعقد پیغام امن کانفرنس میں داعش سے منسلک افراد کی شرکت

امریکہ، مضبوط افغانستان نہیں چاہتا

عربوں نے اسرائیل کے خلاف جنگ میں اپنی شکست خود رقم کی

سیاسی لیڈر کا قتل

مقاصد الگ لیکن نفرت مشترکہ ہے

انتہا پسندی فتوؤں اور بیانات سے ختم نہیں ہوگی!

تہران میں او آئی سی کانفرنس، فلسطین ایجنڈہ سرفہرست

زینب کے قاتل کی گرفتاری کے حوالے سے شہباز شریف کی بے بسی

یورپ کی جانب سے جامع ایٹمی معاہدے کی حمایت کا اعادہ

بن گورین ڈاکٹرین میں ہندوستان کی اہمیت

دہشت گردی کے خلاف متفقہ فتویٰ

شام میں امریکی منصوبہ؛ کُرد، موجودہ حکومت کی جگہ لینگے

شفقنا خصوصی: کیا زینب کے قاتل کی گرفتاری کو سیاسی مقاصد کے لیے چھپایا جا رہا ہے؟

مسئلہ فلسطین، عالم اسلام کا اہم ترین مسئلہ ہے

پاپ کی طرف سے میانمار کے مسلمانوں کی عالمی سطح پر حمایت

امریکا مشترکہ مفادات کی بنیاد پر پاکستان سے نئے تعلقات بنانا چاہتا ہے، ایلیس ویلز

کالعدم تحریک طالبان پاکستان کا بینظیر بھٹو کو قتل کرنے کا دعویٰ

امریکہ، بیت المقدس کے بارے میں اپنے ناپاک منصوبوں ميں کامیاب نہیں ہوگا

پاکستان کے ساتھ تعلقات مزید مستحکم کرنےکےلیے پرعزم ہیں: امریکی جنرل جوزف ڈنفورڈ

اسلامی ممالک کو اختلافات دور کرنے اور باہمی اتحاد پر توجہ مبذول کرنی چاہیے

بھارت ایسے اقدامات سے باز رہے جن سے صورتحال خراب ہو، چین

عمران خان اور آصف زرداری کل ایک ہی اسٹیج سے خطاب کریں گے، طاہرالقادری

اسرائیلی وزیراعظم کا 6 روزہ دورہ بھارت؛ کیا پاکستان اور ایران کے روایتی دشمنوں کیخلاف علاقائی اتحاد ناگزیر نہیں؟

مودی، یاہو اور ٹرمپ کی مثلث

سید علی خامنہ ای، دنیا کے تمام مسلمانوں کے لیڈر ہیں؛ آذربائیجانی عوام

لسانی حمایت کافی نہیں، ایرانی معترضین تک اسلحہ پہنچایا جائے؛ صہیونی ادارہ

خود کش حملے حرام ہیں، پاکستانی علما کا فتوی

پاکستان افغان جنگ میں قربانی کا بکرا نہیں بنے گا ، وزیردفاع

امریکہ کے شمالی کوریا پر حملے کا وقت آن پہنچا ہے؛ فارن پالیسی

یمن پر مسلط کردہ قبیلۂ آل سعود کی جنگ پر ایک طائرانہ نظر

2016-05-02 19:30:57

یکم مئی، روز معلم

تحریر: ایس ایم شاہ4460546_494

حضرت علیؑ کا فرمان ہے: جس نے مجھے ایک حرف سکھایااس نے مجھے اپنا غلام بنا لیا، روایات کی رو سے ہر شخص کے تین باپ ہوتے ہیں، صلبی باپ، بیوی کا باپ یعنی سسر، وہ باپ جس نے اسے تعلیم دی ہے۔صلبی باپ اپنے بچے کو دنیا میں لانے کا سبب بنتا ہے، سسر اپنی بیٹی کی اچھی تعلیم و تربیت اور اس کے حوالے سے ہر قسم کی مشکلات برداشت کرتا ہے، یعنی ایک بہترین امانتدار کی مانند اس کی ہر طرح سے حفاظت کرتا رہتا ہے، پھر عالم شباب تک پہنچتے ہی اسے عقد ازدواج سے منسلک کردیتا ہے، استاد وہ باعظمت ہستی ہے جو انسان کو انسان بناتا ہے، ہدف انسانیت سے اسے آشنا کرتا ہے، انفرادی اور اجتماعی ذمہ داریوں کے حوالے سے اسے آگاہ کرتا ہے، اسے معاشرے اور ملک کے لیے ایک مفید شہری بنا تا ہے، اسے نشہ اور لہو لعب سے بچاتا ہے، ان حوالوں سے دیکھاجائے تو معلوم ہوتا ہے کہ استاد کا حق بھی اپنے صلبی باپ سے کم نہیں، اللہ تعالی نے اپنے پیغمبروں کی بنیادی ذمہ داریوں میں سے ایک بہترین استاد ہونا قرار دیا ہے، روایات میں سب سے بخیل اس شخص کو قرار دیا گیا ہے جو اپنے علم کو دوسروں کو سکھانےمیں بخل سے کام لیتا ہے، ساتھ ہی دوسروں کو تعلیم دینے کو علم کی زکوۃ قرار دیاگیا ہے، جس معاشرے میں جتنا استاد کا احترام زیادہ ہوگااتنا ہی وہ معاشرہ علمی اور دوسرے میدانوں میں زیادہ ترقی کر پائے گا، ترقی یافتہ ممالک میں استاد کو سرکاری وزیروں سے بھی زیادہ اہمیت اور احترام حاصل ہے، اسی وجہ سے وہ زندگی کےمختلف شعبوں میں دن بہ دن ترقی کی راہ پر گامزن ہیں، جبکہ ہمارا معاشرہ ایک اسلامی معاشرہ ہونے اور آیات و روایات میں استاد کا اتنا بڑا مقام بیان ہونے کے باوجودبھی ہمارے ہاں ان کا کماحقہ احترام نہیں کیا جاتا، استاد کی اسی اہمیت کو اجاگر کرنے کی خاطر یکم مئی کو استاد شہید مطہری کی یوم شہادت کی مناسبت سے اسے پورے ایران میں روز معلم کے عنوان سے منایا جاتا ہے، شہید جہاں ایک بہت بڑے فلاسفر، متکلم اور جدید اور قدیم علوم سے سرشار تھے وہاں ایک بہترین پروفیسربھی تھے، آپ نے مختلف موضوعات پر تیس سے زائد ضخیم کتابیں تالیف کیں، جن میں سے ہر ایک پی ایچ ڈی تھیسس کی مانند ہے،آپ کی کتابیں معلومات کا خزانہ ہیں، یونیورسٹیوں میں آپ نے کثیر تعداد میں برجستہ شاگردوں کی تربیت کی، اسی اہمیت کے پیش نظر اس دن کو یوم معلم کا نام دیا گیا ہے، تاکہ نئی نسل کو استاد کی اہمیت اور اس کے مقام سے آگاہ رکھا جاسکے، ہم جہاں مزدوروں کے حقوق کے دفاع کے لیے مزدور ڈے مناسکتے ہیں، کشمیر ڈے مناسکتے ہیں، مادر ڈے مناسکتے ہیں تو کیوں نہ ایک دن ہم اپنے اساتذہ سے منسوب کریں، اگر یہی اساتذہ نہ ہوتے تو ہمارےمعاشرے میں جہالت کا دور دورہ ہوتا، زندگی کے کسی بھی شعبے میں ترقی ممکن نہ ہوتی، نت نئے ایجادات سامنے نہ آتے، چھوٹے بڑے کا احترام نہ ہوتا، اگرچہ ہر دن روز معلم ہے، لیکن ایک خاص دن کو ان سے منسوب کرنے کا مطلب یہ ہوتا ہے کہ ان کے مقام اور رتبے کو قومی سطح پر بلند کیا جائے، یعنی استاد کے احترام کا دن، استاد کی خدمات کی قدردانی کا دن، استاد کی حوصلہ افزائی کا دن، استاد سے ایک نئے جذبے کے ساتھ تجدید عہد کا دن، معاشرے میں استاد کی اہمیت کو اجاگر کرنے کا دن، آج ہم اپنے اساتذہ کرام سے بھی تجدید عہد کرتے ہیں کہ ہم کبھی ان کی زحمتوں کو رائیگاں نہیں ہونے دیں گے،ہم ان کی بے لوث خدمات پر انھیں خراج تحسین پیش کرتے ہیں، ان کے حوصلوں کی قدردانی کرتے ہیں، آج ہم اس حقیقت کے اعتراف کو اپنے لیے ایک اخلاقی اور شرعی وظیفہ سمجھتے ہیں کہ مستقبل میں قریب میں ہماری تمام کامیابیوں میں ان کا عمل دخل ہے، ہمارے ہر کار خیر میں ان کا بھی ناقابل فراموش حصہ ہےکیونکہ، رحمت عالم کے فرمان کے مطابق جو کوئی سنت حسنہ چھوڑ کر چلاجائے تو اسے اس کا ثواب ملنے کے ساتھ ساتھ اس پر عمل کرنے والے کا ثواب بھی ملتا رہتا ہے، بغیر اس کے کہ اس عمل کرنے والے کے ثواب میں کوئی کمی واقع ہوجائے، ان میں سے ایک اہم سنت حسنہ اچھے شاگردوں کی تربیت ہے، شاگرد اپنے استاد سے تربیت پانے کے بعد اگر خدانخواستہ وہ استاد اس دنیا سے چلا بھی جائے تب بھی اس شاگرد کے ہر کار خیر میں قیام قیامت تک وہ استاد بھی شریک رہتا ہے ، ہم اپنے اساتذہ کرام کو سلام عقیدت پیش کرتے ہیں جنھوں نے اپنی آسائشوں کو ہماری خاطر قربان کیا، جنھوں نے ہماری تربیت کی خاطر خون دل بہائے، جنہوں نےہمیں شفقت پدری سے نوازا، جنہوں نے ہمیں بلنداہداف سے آشنا کیا، جنہوں نے ہمیں غلط سوسائٹی سے بچائے رکھا، جنہوں نے ہماری کامیابی کی خاطر طرح طرح کی زحمتیں اٹھائیں، جن کی راتیں ہمیں پڑھانے کا حق ادا کرنے کی خاطر مطالعے میں بیت گئیں، جنہوں نے اپنے نیک دعاؤں میں ہمیں شریک رکھا، اگر ہم نے معاشرے میں تعلیم و تربیت کو عام کرنا ہے اور ہمارے نئی نسل کے مستقبل کو تابناک بنانا ہے تو سب سے پہلے اچھے اساتذہ کی تربیت دینی ہوگی، پھر ان کے احترام کو معاشرے میں عام کرنا ہوگا، ان کی ضروریات کو پورا کرنا ہوگا تاکہ وہ بغیر کسی مشکل کے اپنی پوری توجہ بچوں کی تعلیم و تربیت پر صرف کرسکیں، جب معاشرے میں اساتذہ کا احترام بڑھے گا تب اچھے اچھے افراد اس فیلڈ کا انتخاب کریں گے، جب اچھے افراد اس لائن میں آجائیں گے تب ہماری اولاد کے لیے اچھے اساتذہ میسر آئیں گے، جب ان کے لیے اچھے اساتذہ فراہم ہوں گے تب وہ اچھے شاگردوں کی

بھرپور تربیت کرسکیں گے، جب ایسے افراد سے تربیت یافتہ افراد معاشرے میں قدم رکھیں گے تو ان کے قدم سے معاشرہ ہر جہت سے رشد اور ترقی کی راہ پر گامزن ہوگا، یاد رکھئے کہ بہترین استاد ہی بہترین نسلوں کی تربیت کا ضامن ہوا کرتا ہے۔اللہ تعالی کی بارگاہ میں دعاگو ہوں کہ رب العزت ہمارےگزشتہ اساتذہ کرام اور موجود اساتذہ کرام کی ان بے لوث خدمات کو شرف قبولیت عطا کرے اور ہمیں ان سے بھرپور رہنمائی لیکر اسے ملک و ملت کی ترقی اور سربلندی کے لیے وسیلہ بنانے کی توفیق دے، آمین ثم آمین

1. مجموعه رسائل در شرح احاديثى از كافى / ج1 / ص : 321

2. «مَن عَلّمني حَرفاً، فقد صَيَّرني عبداً»

3. مشكاة الأنوار في غرر الأخبار / النص / 246 / الفصل الأول في عيوب النفس و مجاهدتها ….. ص : 244

4. قَالَ النَّبِيُّ ص مَنْ سَنَ سُنَّةً حَسَنَةً فَلَهُ أَجْرُهَا وَ أَجْرُ مَنْ عَمِلَ بِهَا إِلَى يَوْمِ الْقِيَامَةِ مِنْ غَيْرِ أَنْ يَنْتَقِصَ مِنْ أُجُورِهِمْ شَيْءٌ.

5. زوَّجک و بصائر الدرجات في فضائل آل محمد صلى الله عليهم / ج1 / 3 / 2 باب ثواب العالم و المتعلم ….. ص : 3

6. قَالَ رَسُولُ اللَّهِ ص إِنَّ مُعَلِّمَ الْخَيْرِ يَسْتَغْفِرُ لَهُ دَوَابُّ الْأَرْضِ وَ حِيتَانُ الْبَحْرِ وَ كُلُّ ذِي رُوحٍ فِي الْهَوَاءِ وَ جَمِيعُ أَهْلِ السَّمَاءِ وَ الْأَرْضِ

7. رَبَّنا وَ ابْعَثْ فيهِمْ رَسُولاً مِنْهُمْ يَتْلُوا عَلَيْهِمْ آياتِكَ وَ يُعَلِّمُهُمُ الْكِتابَ وَ الْحِكْمَةَ وَ يُزَكِّيهِمْ إِنَّكَ أَنْتَ الْعَزيزُ الْحَكيم (البقرة : 129

زمرہ جات:   Horizontal 5 ،
ٹیگز:  
دیگر ایجنسیوں سے (آراس‌اس ریدر)

کراچی سے سامارو تک

- ایکسپریس نیوز

اسٹیٹ بینک کی رپورٹ

- ایکسپریس نیوز

دنیا 100 سیکنڈ میں

- سحر ٹی وی

گالی ہی تہذیب ہے

- بی بی سی اردو