وحدت اسلامی کے خلاف سازشیں از مجتبٰی علی ابن شجاعی

اس قتل کی ایف آئی آر میں کسے نامزد کیا جائے!

شریفوں کی کرپشن پاکستان تک محدود نہیں بین البراعظمی ہے، آصف زرداری

بشار الاسد کا تختہ الٹنے کی کسی بھی اسکیم کو مسترد کرتے ہیں: روس

جمہوریت کو کوئی خطرہ نہیں، ڈی جی آئی ایس پی آر

نفاذ شریعت کی ایک نئی تحریک

شام میں ترک کارروائی ’دہشت گردی کی معاونت‘ کے مترداف ہے، شامی صدر

یمن جنگ میں شریک ممالک کے لیے جرمن اسلحے کی فراہمی معطل

کابل ہوٹل حملے میں ہلاکتیں 43 ہوگئیں، 14 غیر ملکی شامل

بالی وڈ اسٹار خانز نے صہیونی وزیر اعظم سے ملنے سے انکار کردیا

چیف جسٹس دوسروں کے بجائے اپنے ادارے کو ٹھیک کریں: خورشید شاہ

اہل سنت کے علمائے دین ہماری آنکھوں کا سہرا ہیں

سعودی عرب کی ’توہین‘: کویتی بلاگر کو پانچ سال سزائے قید

دنیا، کس قسم کے افراد کو تباہ وبرباد کردیتی ہے؟

ٹرمپ کے خلاف لاکھوں امریکی خواتین کا تاریخی احتجاج

نقیب اللہ قتل؛ راؤ انوار کو پولیس پارٹی سمیت گرفتار کرنے کا فیصلہ

فتویٰ اور پارلیمینٹ

کل بھوشن کے بعد اب محمد شبیر

سعودیہ فوج میں زبردستی بھرتی پر مجبور ہوگیا ہے؛ یمنی نیوز

پاکستان کی غیر واضح خارجہ پالیسی سے معاملات الجھے رہیں گے

پارلیمنٹ پر لعنت

نائیجیریا میں آیت اللہ زکزکی کی حمایت میں مظاہرہ

ایٹمی معاہدے میں کوئی خامی نہیں، امریکی جوہری سائنسداں کا اعتراف

سعودی عرب کے ولیعہد محمد بن سلمان مکار، دھوکہ باز، حیلہ گر اور فریبکار ہیں: قطری شیخ

امریکا نے دہشت گردی کے بجائے چین اور روس کو خطرہ قرار دے دیا

سلامتی کونسل میں پاکستان اور امریکی مندوبین کے درمیان لفظی جنگ

ایک اورماورائے عدالت قتل

کالعدم سپاہ صحابہ کا سیاسی ونگ پاکستان راہ حق پارٹی بھی اھل سیاسی جماعتوں میں شامل

امریکہ اور دہشتگردی کا دوبارہ احیاء

ایرانی جوان پوری طرح اپنے سیاسی نظام کے حامی ہیں؛ ایشیا ٹائمز

دنیائے اسلام، فلسطین اور یمن کے بارے میں اپنی شجاعت کا مظاہرہ کرے

شام کے لیے نئی سازش کا منصوبہ تیار

پاک فوج کیخلاف لڑنا حرام ہے اگر فوج نہ ہوتی تو ملک تقسیم ہوچکا ہوتا: صوفی محمد

امام زمانہ عج کی حکومت میں مذہبی اقلیتوں کی صورت حال

سعودی عرب نائن الیون کے واقعے کا تاوان ادا کرے، لواحقین کا مطالبہ

امریکہ کو دوسرے ممالک کے بارے میں بات کرنے سے باز رہنا چاہیے: چین

پاکستان میں حقانی نیٹ ورک موجود نہیں

سعودی عرب نے یمن میں انسانی، اسلامی اور اخلاقی قوانین کا سر قلم کردیا

پاکستان کو ہم سے دشمن کی طرح برتاؤ نہیں کرنا چاہیے: اسرائیلی وزیراعظم

آرمی چیف نے 10 دہشت گردوں کی سزائے موت کی توثیق کردی

بھارت: ’حج سبسڈی کا خاتمہ، سات سو کروڑ لڑکیوں کی تعلیم کے لیے

صہیونی وزیر اعظم کے دورہ ہندوستان کی وجوہات کچھ اور

پاکستانی سرزمین پر امریکی ڈرون حملہ، عوام حکومتی ایکشن کے منتظر

روس، پاکستان کی دفاعی حمایت کے لئے تیار ہے؛ روسی وزیر خارجہ

عام انتخابات اپنے وقت پر ہونگے: وزیراعظم

ناصرشیرازی اور صاحبزادہ حامد رضا کی چوہدری پرویزالہیٰ سے ملاقات، ملکی سیاسی صورتحال پر تبادلہ خیال

پارلیمنٹ نمائندہ ادارہ ہے اسے گالی نہیں دی جاسکتی: آصف زرداری

زائرین کے لیے خوشخبری: پاک ایران مسافر ٹرین سروس بحال کرنے کا فیصلہ

شریف خاندان نے اپنے ملازموں کے ذریعے منی لانڈرنگ کرائی، عمران خان

امریکہ کی افغانستان میں موجودگی ایران، روس اور چین کو کنٹرول کرنے کے لئے ہے

ایرانی پارلیمنٹ اسپیکر کی تہران اسلام آباد سیکورٹی تعاون بڑھانے پر تاکید

دورہ بھارت سے نیتن یاہو کے مقاصد اور ماحصل

ایوان صدر میں منعقد پیغام امن کانفرنس میں داعش سے منسلک افراد کی شرکت

امریکہ، مضبوط افغانستان نہیں چاہتا

عربوں نے اسرائیل کے خلاف جنگ میں اپنی شکست خود رقم کی

سیاسی لیڈر کا قتل

مقاصد الگ لیکن نفرت مشترکہ ہے

انتہا پسندی فتوؤں اور بیانات سے ختم نہیں ہوگی!

تہران میں او آئی سی کانفرنس، فلسطین ایجنڈہ سرفہرست

زینب کے قاتل کی گرفتاری کے حوالے سے شہباز شریف کی بے بسی

یورپ کی جانب سے جامع ایٹمی معاہدے کی حمایت کا اعادہ

بن گورین ڈاکٹرین میں ہندوستان کی اہمیت

دہشت گردی کے خلاف متفقہ فتویٰ

شام میں امریکی منصوبہ؛ کُرد، موجودہ حکومت کی جگہ لینگے

شفقنا خصوصی: کیا زینب کے قاتل کی گرفتاری کو سیاسی مقاصد کے لیے چھپایا جا رہا ہے؟

مسئلہ فلسطین، عالم اسلام کا اہم ترین مسئلہ ہے

پاپ کی طرف سے میانمار کے مسلمانوں کی عالمی سطح پر حمایت

امریکا مشترکہ مفادات کی بنیاد پر پاکستان سے نئے تعلقات بنانا چاہتا ہے، ایلیس ویلز

کالعدم تحریک طالبان پاکستان کا بینظیر بھٹو کو قتل کرنے کا دعویٰ

امریکہ، بیت المقدس کے بارے میں اپنے ناپاک منصوبوں ميں کامیاب نہیں ہوگا

پاکستان کے ساتھ تعلقات مزید مستحکم کرنےکےلیے پرعزم ہیں: امریکی جنرل جوزف ڈنفورڈ

2017-01-19 12:46:36

وحدت اسلامی کے خلاف سازشیں از مجتبٰی علی ابن شجاعی

farhangnews_245810-631663-1481787225ہر ایک قوم و ملت کی کامیابی، سرفرازی اور ناکامی کا دارومدار اتحاد و اتفاق پر ہوتا ہے۔ کیونکہ اتحاد ہی ایک ایسا پائیدار اور مضبوط ہتھیار ہوتا ہے کہ اگر قوم و ملت کے صفوں کے درمیان برقرار رہے تو کوئی دوسری قوم اس قوم سے مقابلہ تو کیا میلی آنکھ اٹھا کر بھی نہیں دیکھ سکتی۔ اور اگر اسی اتحاد کے ہتھیار میں کوئی نقص پیدا ہوگیا تو قوم کو صفحہ ہستی سے مٹنے میں کوئی دیر نہیں لگے گا ۔بالکل اسی طرح جس طرح حرف غلط ہمیشہ ہمیشہ کے لئے صفحہ کتاب سے مٹ جاتا ہے۔
تاریخ اس بات پر شاہد ہے کہ ابتدا سے لیکر آج تک مدافعان اسلام نے صرف اور صرف وحدت، ھمدردی، برادری، بھائی چارہ اور مساوات کے ذریعہ سے ہی اپنے مد مقابل دشمن قوموں اور جماعتوں کو دندان شکن جواب دے کر ان پر غلبہ پالیا۔ ورنہ ہمیشہ اہل حق  ناحق کے مقابلے میں قلیل ہوتے تھے اور آج بھی یہ روایت بالکل برقرار ہے ۔ 
ہمارے لئے تو رسول اسلام  (ص) کی ذات گرامی مشعل راہ ہے ہم تبھی اپنے اصل منزل و مقصود تک کی رسائی کو ممکن بناسکتے ہیں جب ہم قرآنی تعلیمات کے ساتھ ساتھ اسوہ رسول  (ص) اور سیرت اہلبیت (ع) پر عمل پیرا ہوجائیں گے۔ چونکہ قرآن پاک میں بھی اتحاد کی تاکید گئی ہے اور رسول اسلام و اہلبیت کرام نے بھی وحدت اسلامی کی بہت زیادہ تاکید کی ہے۔ نہ صرف امت کو تاکید کی بلکہ اپنی زندگی کے لمحہ لمحہ میں اس کا عملی مظاہرہ بھی کیا یہی وجہ تھا کہ دشمنان اسلام کے مقابلے میں انتہائی کم لشکر  ہوکر بھی تمام غزوات کو فتح کر لیا ۔یہی مثال کربلا کے میدان میں بھی ملتی ہے اور دور حاضر میں پھر اس کی مثال ایرانی اسلامی انقلاب سے ملتی ہے ۔
عزیز بھائیو۔ دنیا میں اس وقت مسلمانوں کی آبادی اربوں میں ہے اور اسلام کی طرف رحجان میں روز بروز اضافہ ہوتا جا رہا ہے اس رحجان کو ریکھ کر سامراجیوں نے ان اربوں مسلمانوں کو ایک دوسرے سے الگ تھلگ رکھنے کے لئے سازشیں رچائی ہیں۔ اور مختلف پروپیگنڈوں اور حربوں کو استعمال میں لا کر ایک مسلمان ملک میں اپنے چیلوں کو پیدا کرکے کرسی کی جھنگ چھیڑ دی دوسرے میں مسلکی بنیاد پر اختلافات کو ہوا دیا تیسرے میں شہریت کے نام پر مسلمانوں کا خون بہادیا غرض تمام اسلامی مملکتوں میں بدامنی کی چنگاری ڈال کر فوٹ ڈالو سیاست کرو کی فارمولہ اپنا کر روئے زمین پر اپنے مذموم کوششوں سے مسلمانوں کو کمزور کرکے ھزاروں مسلمانوں کا خون بہایا۔
آج عالم اسلام کی دردناک صورتحال کا بغور مشاہدہ کیجئے روئے زمین پر کہاں اور کس غیر اسلامی ممالک میں بد امنی ،بے چینی اور قتل و غارتگری پائی جاتی ہے  یہ رچائی ہوئی سازش نہیں تو اور کیا ہوسکتی۔ اسلام کے نام پر نام نہاد دہشت گرد تنظیموں کو وجود میں لایا گیا ہے اور یہ مسلمانوں کے ہی خون کے پیاسے ہیں اور اسلام کے نام پر ایسی حرکتیں کررہے ہیں جن سے شیطان بھی شرما رہا ہے ۔ڈالروں میں خرید کر ان ذر خرید ایجنٹوں کے ذریعے ظلم و تشدد، قتل و غارتگری ، غیر اسلامی اور غیر انسانی حرکات کروا کر اسلام کو بدنام کرنے کی کوشش کی جارہی ہے۔ اور ان بری حرکات کو میڈیا پر اتنا فروغ دیا جارہا ہے کہ دنیا کے گوشہ و کنار میں رہ رہے افراد مسلمانوں کو دہشتگرد کے القاب سے پکار رہے ہیں اور مسلمان نام سے ڈر محسوس کررہے ہیں۔
کتنی افسوس کی بات ہے کہ ان سامراجی زرخرید تنظیموں کے غیر انسانی و غیر اسلامی حرکات دیکھ کر بھی عالم اسلام کے صفوں میں ایسے بھی ٹھیکہ دار ہیں جو ان تنظیموں کی حمایت کرکے حلب کی بربادی کے نعرے لگا لگا کر مگر مچھ کے آنسو بہا رہے ہیں اور حلب کی تباہی کا ذمہ دار اسد حکومت، حزب اللہ اور جمہوری اسلامی ایران کو ٹھہرا رہے ہیں۔ اصل میں یہ اسلامی ٹھیکہ دارحقیقت سے بخوبی واقف ہیں لیکن محض مسلکی اختلافات کو جنم دینے کے لئے سازشوں کا ماحول سازگار بنا رہے ہیں ورنہ فلسطین ، بحرین، نائجیریا، میانمار اور یمن وغیرہ میں بھی بے گناہ مسلمانوں کا خون ناحق بہہ رہا ہے اور ایسے سنگین قلب افراد کے منھ سے آہ تک بھی نہیں نکلتی ہے ۔ تعجب اس بات پر ہے کہ سامراجی ذرخرید قلمکار، مقرر اور ملت فروش خطیب مسلم دنیا کی بدامنی کا ذمہ دار جمہوری اسلامی ایران کو ٹھہرا رہے ہیں تاکہ عالم اسلام کے دو بڑے مسلکوں شیعہ اور سنی کے درمیان اختلاف پیدا ہوجائے ورنہ نہ فقط عالم اسلام بلکہ پوری دنیا جانتی ہے کہ جمہوری اسلامی ایران نے مسلمانان عالم کے درمیان اتحاد و اتفاق برقرار رکھنے کے لئے کتنی قربانیاں دی ہیں۔ اور آج جو عالم اسلام کے درمیان اتحاد برقرار ہے وہ ان ہی قربانیوں کا ثمرہ ہے ۔
ابھی کچھ دنوں پہلے کی بات ہے وادی کشمیر میں شر پسند اور اتحاد مخالف عناصر نے ایران کے صدر اور مجاہد و مدافع اسلام سید حسن نصراللہ کے تصاویر نظر آتش کردئے یہ بھی اسی سازش کی ایک کڑی تھی کیونکہ وادی کے عوام نے ہمیشہ سے باہمی برادری اخوت اور اتحاد کی ایک روایت برقرار رکھی ۔اور ہمیشہ دشمن کی سازشوں کا مقابلہ ایک ساتھ کرتے رہے ۔ یہ اتحاد کے خلاف سازش تھی اور کچھ نہیں ورنہ دنیا اس بات سے بخوبی واقف ہے کہ جو رہنما اسرائیلی بموں اور توپوں سے نہ ڈرے اور صرف تینتیس دنوں میں اسرائیل کے ماتھے پر تھپڑ رسید کی  وہ گنے چنے دو چار افراد کی دھمکیوں سے کیا ڈر محسوس کرے گا 
اس وقت تکفیریت تن تنہا رہ گئی ہے میدان جنگ میں شکست کھانے کے بعد انہوں نے میدان سازش میں قدم رکھا ہے اسی لئے آئے روز نئے نئے حربے استعمال کرکے مسلکی منافرت پھیلا کر ایک بار پھر سر نکالنے کی کوشش کر رہے ہیں۔ لیکن امت مسلمہ کا اتحاد مضبوط اور مستحکم ہے اور خدا رسول ایک ہونے کے ساتھ ساتھ مسلمانوں کا دستور بھی ایک ہے۔مسلمانوں کے اندر کافی حد تک اتحاد و اتفاق کا جذبہ کار فرما نظر آتا ہے وہ اسی اتحاد کے ذریعے تمام مشکلات و مصائب کا حل نکالیں گے ۔
 
 
زمرہ جات:   Horizontal 5 ،
دیگر ایجنسیوں سے (آراس‌اس ریدر)

تو بھی تو دل دار نہیں ! 

- ایکسپریس نیوز

یوں ہی منو بھائی…

- ایکسپریس نیوز

دنیا 100 سیکنڈ میں

- سحر ٹی وی

ایک فتویٰ ادھر بھی

- مجلس وحدت المسلمین