خدارا! اب تو جاگ جائیے

امریکی پیٹ میں پھر مروڑ: روس طالبان کو ہتھیار فراہم کر رہا ہے،امریکی جنرل

فوج کی دیانت اور سپریم کورٹ کی شہرت کا سوال

شمالی کوریا کی امریکی بحری بیڑے کو تباہ کرنے کی دھمکی: سپر پاور کیسے بھیگی بلی بن گیا؟

فرانس کا صدارتی انتخاب

ایران کے لیے پاکستان کی سیکیورٹی انتہائی اہم ہے، جواد ظریف

پاناما لیکس جے آئی ٹی: 'فوج شفاف، قانونی کردار ادا کرے گی'

ایران کے خلاف عرب یہودی اتحاد:  مسلم دنیا کے حکمرانوں کے اصل چہرے عیاں

پانامہ لیکس جے آئی ٹی: کیا عدلیہ نے نواز شریف کو بچاؤ کا راستہ دیا ہے؟

مخصوص ممالک کا فوجی اتحاد عالم اسلام کی وحدت کیخلاف امریکی سازش ہے، پاکستان کو کسی بھی سازش کا حصہ نہیں بننا چاہیئے، علامہ مختار امامی

اپنوں کو نوازنے کا سلسلہ جاری:‌شاہ سلمان نے اپنے بیٹے کو امریکا میں سفیر مقرر کر دیا

تہذیب نام تھا جس کا....... از نذر حافی

نواز شریف کب استعفیٰ دیں گے

قم میں حقیقی اسلام کا درس دیا جاتا ہے نہ کہ داعشی یا طالبانی اسلام کا۔ پاکستانی اسپیکر

ایاز صادق کی ایران کو سی پیک میں شمولیت کی دعوت

وزیر اعظم پر تنقید ہو سکتی ہے تو کوئی بھی مقدس گائے نہیں ، مریم نواز اور ڈی جی آئی ایس آئی کی انتہائی قریبی رشتہ داری ایک حقیقت ہے: اعتزاز احسن

راحیل شریف سعودیہ سدھار گئے

اضافی دستوں کی تعیناتی: کیا سعودیہ پاکستان سے درخواست کرتا ہے؟

سعودیہ بغاوت کے دہانے پر

پاناما فیصلہ، فلم ابھی باقی ہے!

امریکہ سعودیہ گٹھ جوڑ: امت مسلمہ کے داعی کا اصل چہرہ کیا ہے؟

شفقنا خصوصی:پاکستان، سعودی اتحاد اور یمن کے معصوم بچوں کا خون

سعودیہ اگلے مہینے سے اسرائیل کو پیٹرول برآمد کریگا

مودی دنیا کا دوسرا ہٹلر ہے، اسے سبق سکھانے کےلیے کلبھوشن کو پھانسی دی جائے، منموہن سنگھ

اولاند: ٹرمپ، داعش کو منہ بولا بیٹا ماننے کو تیار ہیں

سعودی اتحاد کے منفی عزائم:  کیا پاکستان کو دھوکے میں رکھا گیا ہے؟

سیاسی جماعتوں میں انتہا پسند عناصر میں اضافہ

النصرہ کے کیمیائی ہتھیاروں کے کنگ کون؟

 امریکی منافقت:‌داعش کو عراق میں کیمیائی ہتھیار استعمال کرنے کی کھلی چھٹٰی کیوں؟

وزیراعظم صادق و امین نہیں رہے، جسٹس گلزار کا اختلافی نوٹ

سابق ایرانی صدر احمدی نژاد صدارتی انتخاب کیلئے نااہل قرار

پاکستان کے خبر نگار کا دورہ شام، لوگوں کو بشار اسد سے کوئی مشکل نہیں

ٹوپی ڈرامہ جاری رہے: سپریم کورٹ کا فیصلہ

'سپریم کورٹ جو نہ کرسکی وہ 19 گریڈ کے افسر کریں گے؟'

پاناما کیس: سپریم کورٹ کا جے آئی ٹی بنانے کا فیصلہ

رینجرز اختیارات میں توسیع : سندھ حکومت خائف کیوں ہے؟

 جعلی ریفرنڈم: کیا ترک عوام ڈکٹیٹر شپ چاہتے ہیں؟

شفقنا تجزیہ: وزیراعظم اہل یا نا اہل، پانامہ لیکس کیا لے کر آرہا ہے؟

پانامہ لیکس فیصلہ: کیا ن لیگ تشدد کی راہ اختیار کرے گی؟

آرمی چیف نے 30 دہشتگردوں کی سزائے موت کی توثیق کردی

اتحاد بین المسلمین کے حوالہ سے پاکستان میں ایک اہم پیش رفت ،اتحاد امت مصطفیٰ فورم کی تشکیل

پاناما کیس فیصلہ: حکمراں جماعت میں قبل از وقت انتخابات پر بحث

سعودی اتحاد کی بلی تھیلے سے باہر: نام نہاد اتحادی مسلم فوج کا حوثی افواج کے خلاف کارروائی کا عندیہ

ڈونلڈ ٹرمپ خطرناک صدر نہیں :احمدی نژاد

شفقنا خصوصی: بشار الاسد کے خلاف اوچھے ہتھکنڈے

یمن: یمنی افواج نے سعودی ہیلی کاپٹر مار گرایا'12 فوجی اہلکار ہلاک

عراقی اہلسنت کو کمزور کرنے کے لئے، سعودی بادشاہ کے مشیر کا دورہ کردستان

سپریم کورٹ پاناما کیس کا فیصلہ 20 اپریل کو سنائے گی

مشال کے قاتلوں کے نام نہ بتانے کیلیے حلف لینے کی وڈیو منظر عام پر آگئی

ریفرنڈم نے ترک عوام کو تقسیم کر دیا

امریکی فوجی کارروائی کا نتیجہ صرف جنگ ہوگی، شمالی کوریا

معاملہ گستاخی نہیں، مشعال کے خلاف سازش تھی: عمران خان

دال میں کالا: امریکہ شام میں کیمیائی حملوں کی تحقیقات سے گریزاں کیوں؟

 سعودی فوجی اتحاد، امریکہ کا غلام ہے: اہلسنت عالم دین حامد سعید کاظمی کا کھرا سچ

اسرائیل اور بھارت کی بے مثال دوستی

نورین کی بازیابی اور پاکستان میں‌داعش

قطر میں ہونے والی ممکنہ بغاوت کی تفصیلات

’ٹی ٹی پی ترجمان احسان اللہ احسان نے خود کو فورسز کے حوالے کردیا‘

'مذہبی انتہاپسندی اور عوامی حقوق میں تمیز کی ضرورت'

لاہور سے گرفتار نورین لغاری تربیت کیلئے شام بھی گئی

افغانستان پر جدید اسلحے کا استعمال: مقصد داعش کا خاتمہ یا روس کے لیے طاقت کا مظاہرہ

شفقنا خصوصی: ٹرمپ دنیا کو عالمی جنگ کا ایندھن بنانے پر تیار

ترک حکومت کا تاریخی ریفرنڈم میں کامیابی کا دعویٰ

آیت اللہ خامنہ ای شدید علیل ہیں، سابق ایرانی صدر کی ہرزہ سرائی

سعودیہ کی ننگی جارحیت: یمن میں قحط کے ساتھ ادویات کی بھی شدید قلت

کیا پیوٹن، شام اور ایران کا ساتھ چھوڑ دینگے؟

وزیراعظم کا افسوس، مشعل خان کو انصاف اور حکومت کی رٹ

ڈونلڈ ٹرمپ کے خلاف خلا میں بھی احتجاج

شفقنا خصوصی: سعودی اتحاد کے ٹی او آرز کا ناٹک

امریکہ کی توجہ ایشیا پر کیوں؟

174000 سے زائد 'غیر ملکیوں' کے شناختی کارڈ منسوخ

2017-02-15 17:32:48

خدارا! اب تو جاگ جائیے

سدھماکہ تو اسی دن ہو گیا تھا جس دن سپریم کورٹ کے احکامات کو جوتے کی نوک پر رکھنے والے داخلی سلامتی کے وزیر نے کالعدم تنظیموں کے وفد سے دارالحکومت میں ملاقات کی تھی، لاہور میں تو بس اس دھماکے کی آواز گونجی ہے کہ شاید کوئی جاگ جائے۔ مگر جنہیں خوفناک بم دھماکوں کی سینکڑوں ہولناک آوازیں ، زخمیوں کی سسکیاں، شہیدوں کی سوال پوچھتی نگاہیں ، یتیموں اور بیواؤں کے آنسو اور بین نہ جگا سکے ہوں انہیں صرف صور اسرافیل ہی جگا سکتا ہے۔ حالات میں تبدیلی کیلئے تبدیلی ناگزیر ہوتی ہے۔ ایسا کچھ تو ہے کہ اہل پاکستان سالوں سے لاشوں پر بین کر رہے ہیں مگر ان کے آنسو پوچھنے والا کوئی نہیں۔ ایسا کچھ تو ہے کہ ہم دہشتگردی کے عفریت پر قابو پانے میں ناکام ہیں اور اب ایسا کچھ تو کرنا ہو گا کہ معصوموں کا خون بہنا بند ہو۔

یقینا وزیر داخلہ جناب چوہدری نثار علی خان لاہور دھماکے پر جلد دھواں دار پریس کانفرنس کریں گے۔ قوم کو بتائیں گے کہ دہشت گرد کہاں سے آیا، کس کے پاس رکا، کس نے اس بمبار کی سہولت کاری کی، اور کس نے اس چلتی پھرتی لاش کو بے گناہوں کی موت کا سامان بنایا۔ وزیر موصوف کو سب کچھ معلوم ہو گا۔ اگر علم نہیں ہو گا تو صرف اس بات کا کہ مستقبل میں ایسے سانحات سے بچنے کیلئے کیا کرنا ہے۔ اگر علم نہیں ہو گا تو یہ کہ دہشتگردی کی از سر نو تفہیم کس طرح کرنی ہے۔ اگر وہ نہیں جانتے ہوں گے تو یہ کہ جن امن دشمنوں کو پوری قوم جانتی اور پہچانتی ہے وہ وزیر موصوف کی آنکھوں سے اوجھل کیوں ہیں۔ وہ امن دشمن چوہدری صاحب کو اس لئے نظر نہیں آتے کہ وہ ان کے پہلو میں لگے بیٹھے ہیں۔
 
لاہور دھماکے کی تفصیلات اور حملہ آور کی شناخت کی خوشخبری سنانے کے بعد وزیر داخلہ قوم کو منی لانڈرنگ کیس، عمران فاروق قتل کیس اور الطاف حسین کے گرد گھیرا تنگ ہونے کی نوید سنانا ہرگز نہیں بھولیں گے کیونکہ یہ ریاست کی رٹ اور مجرم کو منطقی انجام تک پہنچانے کا معاملہ ہے۔ ایسا کیسے ہو سکتا ہے کہ سات سمندر پار بھی کوئی شخص کسی پاکستانی شہری کو قتل کرے یا کروائے اور اسلامی جمہوریہ پاکستان اسے انجام تک نہ پہنچائے۔ چوہدری صاحب کے بقول ریاست اپنا فرض بخوبی نبھائے گی۔ ایسی لن ترانیاں سن کر تو شاید ”شرم کو بھی شرم “ آتی ہو گی مگر اہل اقتدار کو پھر بھی سب اچھا دکھتا ہے۔
 
نیشنل ایکشن پلان مرتب ہونے کے بعد بھی ہزاروں پاکستانی شدت پسندی کا شکار ہو کر قبرستانوں میں ابدی نیند سو چکے ہیں مگر اب بھی اس پلان پر اسی طرح شور و غوغا ہے جس طرح اس وقت ہوا تھا جب آرمی پبلک اسکول میں ننھے طلبا کی لاشیں گرائی گئی تھیں۔ بڑے افسوس کے ساتھ یہ کہنا پڑتا ہے کہ اگر یہی سانحہ کسی باشعور قوم کے ساتھ پیش آیا ہوتا تو یقینا یہ آخری سانحہ ہوتا۔ مگر ہم نہ تو باشعور ہیں اور نہ ہی قوم۔ ہر گلی ، ہر گلی ، ہر قصبے اور ہر شہر میں شدت پسندی کا کھلے عام پرچار کیا جا رہا ہے۔ مولوی اور ملا جہاد کے فتوے بانٹ رہے ہیں۔ فساد فی الارض پھیلا رہے ہیں۔ مگر کوئی ان کی زبان روکنے والا نہیں۔ کیونکہ ملا کو کسی کا خوف نہیں۔ جب ایسے ملاؤں کے سرپرست اعلیٰ حکمرانوں کی بغل میں بیٹھے ہوں، ان کی حکومت گرانے کی کوشش کرنے والوں کو دن رات گالیاں دے رہے ہیں اور حکمران جوابی کرم نوازی کا مظاہرہ کر رہے ہیں تو کس کافر کو سزا کا خوف ہو گا۔
 
وزیراعظم ، آرمی چیف، وفاقی وزیر داخلہ ، وزیراعلیٰ پنجاب اور اعلیٰ عہدوں پر متمکن باعزت لوگ اب بھی یہی دعویٰ کر رہے ہیں کہ ہم دہشت گردی کے خلاف جنگ جیت چکے ہیں۔ آخری دہشت گرد کے خاتمے تک چین سے نہیں بیٹھیں گے۔ بیانات کا یہ تضاد تو کجا ایسے بیانات سن کو قوم کو بھی شرم آنے لگی ہے مگر اعلیٰ صفات سے عاری حکمران آج بھی بڑی ڈھٹائی کے ساتھ روایتی بیان بازی کر کے قوم کے زخموں پر نمک چھڑک رہے ہیں۔ خدارا! اب تو جاگ جائیے ، خدارا اب تو ہوش سے کام لیجئے، خدارا اب تو روایتی بیان بازی سے ہٹ کر کچھ عملی اقدامات کیجئے کہ صبر کا پیمانہ لبریز ہو رہا ہے۔ اس سے پہلے کہ خلق خدا اس نظام کو لپیٹ کر آپ کے منہ پر دے مارے، خدارا! جاگ جائیے۔
 تحریر: آصف عباس

 

زمرہ جات:  
ٹیگز:  
دیگر ایجنسیوں سے (آراس‌اس ریدر)

Two die in Venezuela protests

- دنیا نیوز