شکر ھے ھمارا کوئی نھیں تھا

شیعہ اور اہل سنت علماء نے توحید کو زندہ کرنے میں اہم کردار ادا کیا ہے

دعا کو زبان پر لانے کی اتنی تاکید کیوں؟

ملی یکجہتی کونسل کی جانب سے ناصر شیرازی کی بازیابی کامطالبہ

جب شامی عوام کے سر کاٹے جارہے تھے اس وقت عرب لیگ کہاں تھی؟

نائجیریا کی مسجد میں خودکش حملے میں 50 افراد جاں بحق

سپریم کورٹ نے اسلام آباد دھرنے کا نوٹس لے لیا

کویت میں اسرائیل مخالف کانفرنس منعقد

افریقی مہاجرین کی بطور غلام نیلامی

عمران خان کی طالبان کے باپ سمیع الحق سے ملاقات کیا رنگ لائے گی؟

سعودی بادشاہی دربار کا تازہ ترین راز فاش

’بوسنیا کے قصائی‘ کی کہانی کا المناک اختتام

فیض آباد دھرنا

نواز شریف کیسے نظریہ بن رہا ہے

داعش کی شکست کے بعد اس کے حامی نئے منصوبوں پر کام کریں گے: ایران

عرب لیگ کا بیانیہ مضحکہ خیز ہے: سید حسن نصر اللہ

سعودیہ کے نام نہاد عسکری اتحاد کا تشکیل کے دو سال بعد پہلا اجلاس

اسرائیل کے کئی مسلم ممالک سے خفیہ رابطے ہیں: صہیونی وزیر کا دعویٰ

ربیع الاول کا مہینہ دیگر تمام مہینوں پر شرافت رکھتا ہے

سازشی چاہتے ہیں ملک میں لال مسجد اور ماڈل ٹاؤن جیسا واقعہ ہو: وزیر داخلہ

ناصر شیرازی کی بازیابی کے لئےآل پارٹیز کانفرنس

لبنان ہر طرح کی جارحیت کا منہ توڑ جواب دے گا

ایران کے خلاف اسرائیل اور سعودی عرب کے درمیان تعاون جاری

سعودی عرب کو خطے میں جنگی جنون اور تفرقہ کے بجائے امن و ثبات کے لئے تلاش کرنی چاہیے

امام حسن(ع) کی معاویہ کےساتھ صلح، آپ کی مظلومیت کی دلیل تھی

انتظار کی فضیلت اور منتظر کا ثواب

دھرنا ختم کرنے کے لیے آپریشن کسی بھی وقت کیا جاسکتا ہے: وزیر داخلہ

قطر کا ایران کے ساتھ رابطہ منفرد اور بے مثال

داعش نے پہلی بار کشمیر میں حملے کی ذمہ داری قبول کرلی

دائیں بازو کی جماعتوں کی صف بندی کیا رنگ لائے گی؟

شیعوں کی بیداری، امریکہ اور سعودیہ کے لئے ایک بڑا خطرہ

ارب پتی شہزادہ ولید بن طلال کی خود کشی کرنے کی کوشش

اسرائیل:دشمن ملک سے اتحادی ملک تک کا سفر

امام حسن مجتبی (ع) کےنورانی اقوال

اچهی زندگی کے لیے امام حسن (ع) کی تعلیمات

امام رضا علیہ السلام کی شہادت کے بارے میں موجود نظریات کا جائزہ

القاعدہ برصغیر کا بھارتی خفیہ ایجنسی "را" کیساتھ گٹھ جوڑ کا انکشاف

مقبوضہ کشمیر میں رحلت رسول و شہادت نواسہ رسول(ص) کی مناسبت سے جلوس و مجالس عزاء کا اہتمام

رسول اکرم (ص) کی رحلت اور امام حسن مجتبی (ع) کی شہادت کی مناسبت سے عالم اسلام سوگوار

’’نا اہل‘‘ قرار دیا گیا تو سیاست چھوڑ دوں گا،عمران خان

فیض آباد کا دھرنا اور مذہبی حرمت کا سوال

جب حکومت اغوا برائے تاوان میں ملوث ہو ۔۔۔۔!

وزیرخزانہ اسحاق ڈار نے استعفیٰ دے دیا

ترکی کا امریکہ کی طرف سے دہشت گردوں کی حمایت پر مبنی اسناد فاش کرنے کا اعلان

فرانس کو ایران کے داخلی امور میں مداخلت نہ کرنے کا مشورہ

سعودی عرب اور امارات کو بین الاقوامی قوانین کا احترام کرنا چاہیے

سعودی عرب نے جرمنی سے اپنا سفیر احتجاجا واپس بلالیا

اسلام آباد میں دھرنا مظاہرین کے خلاف آپریشن 24 گھنٹے کیلئے موخر

الحوثی: بحیرہ احمر سے تیل منتقل کرنے کا راستہ بند کردینگے

مشر ق وسطیٰ ایک نئے طوفان کی جانب گامزن

داعش کی پسپائی کے بعد کیا اب حزب اللہ نشانے پر ہے؟

سعودیہ کے داخلی اختلافات، کس کے حق میں ہیں؟ امریکہ یا روس

'یمن کی سرحدیں نہ کھولی گئیں تو لاکھوں افراد ہلاک ہوجائیں گے'

ناصرشیرازی کی غیر قانونی گرفتاری، دوسرے ہفتے بھی پنجاب حکومت مخالف ملک گیر احتجاج

سعودی عرب تاریخی حقائق سے چشم پوشی کر رہا ہے: ایران

عراق میں داعش کا کام تمام، آخری شہر راوہ بھی آزاد

ایران کے زلزلہ زدگان کے لیے پاکستان کی امداد

پیغمبر اسلام (ص) کی اپنے اہلبیت (ع) سے محبت نیز اخلاق، نیکی اور مہربانی پر تاکید

دھرنا ختم نہ ہوا تو حکومت کو مجبوراً عدالتی حکم پرعمل کرنا ہوگا: احسن اقبال

تصاویر: کربلائے معلی میں شیعوں کا عظيم اجتماع

درگاہ لعل شہباز قلندر دھماکے کا مرکزی ملزم گرفتار

فرانس کے بیان پر ایران کا رد عمل

سعودی شاہ سلمان کا بیٹے کے حق میں تخت سے دستبرداری کا امکان

لبنانی عوام نے باہمی اتحاد سے سعودی عرب کی سازش کو ناکام بنادیا

سعودی مفتی کو تل ابیب آنے کی دعوت دی گئی

کیا امت مسلمہ اور عرب دنیا کے لئے اصل خطرہ ایران ہے ؟؟؟

تربت کے قریب 15 افراد کا قتل: دہشت گردی یا انسانی اسمگلنگ؟

سعودی شاہی خاندان کے اندرونی جھگڑوں کی داستان

’اسرائیل،سعودی عرب سے ایران سے متعلق انٹیلیجنس شیئرنگ کیلئے تیار‘

دھرنا مافیا کے سامنے وزیر قانون اور اسلام آباد ہائی کورٹ کی بے بسی

کائنات میں سرورکائنات اور سبط اکبر کا ماتم

2017-02-17 14:05:28

شکر ھے ھمارا کوئی نھیں تھا

hand-writing-1237735                                                                                     سناؤ! کیسے ھو بھابھی بچے

کیسے ھیں؟ بس یار کیا بتاؤں رات بھت پریشانی و اضطراب میں کٹی پوری رات سو نھیں پایا.کیوں کیا ھوا خیر تو ھے؟ یار کیا بتاؤں احمد کو شدید بخار تھا نه میں سو پایا نه اسکی ماں پوری رات اس کے پاس بیٹھے رھے ایک طرف میں اور ایک طرف اسکی ماں, بس صبح کچھ بھتر ھوا تو میں آفس آگیا ورنه آج آفس آنا بھی مشکل ھو جاتا.ھاں یار کل ھمارے صاحبزادے نے بھی بھت پریشان کیا بھاگتے بھاگتے گر گیا ناک سے ایسا خون شروع ھوا که پهر بند ھونے کا نام ھی نه لے, الله الله کرکے پانچ سات منٹ تک خون رکا تو ھماری جان میں جان آئی. بس یار کیا کریں بچے بعض اوقات بھت پریشان کرتے ھیں.ھاں بات تو یھی ھے بچوں کو کچھ ھو تو جان نکلتی ھے.                                                                                                                                                    اچھا اور سناؤ کوئی نئی تازی! سنا ھے رات پھر کھیں دھماکه ھوا میں نے تو رات خبریں ھی نھیں سنیں بچے ڈرامه دیکھ رھے تھے.ھاں یار کوئی اتنا بڑا دھماکه نھیں تھا بس تقریبا 100 لوگ جاں بحق ھوئے.ھوں اتنی بڑی تعداد نھیں تھی  سنا ھے سندھ میں ھوا.ھاں یار بس شکر ھے اسلام آباد میں سیکیوریٹی اچھی ھے. مرنے والے کون لوگ تھے؟ سنا ھے شیعه تھے.اچھا!چلو وه بیچارے تو مرتے ھی رھتے ھیں کوئی نئی بات نھیں.هاں یار لیکن مسئله یه ھے که پهر یه احتجاج کے لیے سڑکوں پے نکل آتے ھیں اور لوگوں کو اذیت ھوتی ھے.صحیح بات ھے ایسے واقعات نھیں ھونے چاھییں لیکن اسکا یه مطلب نھیں که دوسروں کو اذیت دی جائے.                                                                                         هاں آج اس طرح کی بہت سی بحثیں پاکستان کے مختلف سرکاری و غیر سرکاری اداروں,کالجوں یونیورسٹیوں,چوکوں,چوراھوں اور ھوٹلوں میں ھورھی ھونگی.آج یه ملک جسے اسلام کے نام په لیا گیا تھا قتل و غارت گری کی آماجگاه بن چکا ھے.اگر آپ 20 کروڑ کی آبادی میں زنده ضمیر لوگ ڈھونڈنیں نکلیں تو چند لوگ ھی مل پائیں گے.                                            قرآن نے کها ایک انسان کا قتل ساری انسانیت کا قتل ھے اور ھم نے ساتھ کچھ اضافے اپنی طرف سے کرلیے شیعه انسان,سنی انسان,عیسائی انسان,ھندو انسان,سندھی انسان,پنجابی انسان وغیره.ھمارے ضمیر مرده ھوچکے ھیں روزانه اتنی خبریں سنتے ھیں که 50 60 لوگوں کا مرجانا ھمارے لیے انتھائی معمولی بات ھے.                                                                                                        ھمارے نبی أکرم نے فرمایا: جس نے صبح کی اور مسلمانوں کے حالات سے بے خبر رھا وه درحقیقت مسلمان کهلانے کا حقدار نھیں لیکن ھم جب صبح کسی مسلمان کا گلا کٹنے کی خبر سنتے ھیں تو شکر کرتے ھیں که ھمارا رشته دار نھیں تھا, ھمارے قوم یا فرقے کا نھیں تھا, شکر ھے دھماکه ھمارے شھر میں نھیں ھوا.                         کیا انسانیت اسی کا نام ھے,کیا عقلانیت اور اسلام ھمیں ھمدردی کے یھی معیار عطا کرتے ھیں.اگرچے میرے سب عزیز سلامت ھیں لیکن وه ٹکڑوں میں بٹ جانے والے لوگ بھی کسی کے عزیز ھیں.                                               سو لاشیں یعنی سو خاندانوں کی زندگیاں اجڑ گئیں,کتنے بچے یتیم ھوگئے کتنی ماؤں کی گودیاں ویراں ھوگئیں کتنی بھنوں سے بھائی چھن گئے. کیا ھمارے درمیان انسانیت کا رشته اسلام کا رشته پاکستانیت کا رشته جیسی کوئی چیز وجود نھیں رکھتی.اور پهر ھمارا معاشرے انھیں احتجاج کا حق بھی نھیں دیتا حکومتی اداروں اور عدالتوں میں ان دکھیاروں کی کوئی شنوائی نھیں ھوتی.                                                                                                   اس ظلم کے خلاف بولنا پڑے گا ورنه آگ کسی کی دوست نھیں ھوتی یه آگ جب پهیلے گی تو سب کو لپیٹ میں لے لے گی.ریاستی ادارے بھی یهی سوچ رھے ھونگے که کوئی بات نھیں آج تو شیعوں کا نقصان ھوا ھے,نھیں یه پاکستان کا نقصان ھے 100 محب وطن و باوفا لوگوں کا خون بھا ھے.حکمرانوں خدارا پاکستان کو تبائی سے بچالو ورنه کف افسوس ملتے رھو گے.اور اے میری قوم خدارا ان بے گناھوں کا درد محسوس کرو تبھی مسلمان اور انسان کھلانے کے لائق ھو سکتے ھو.                                                                                    اخوت اس کو کهتے ھیں چبھے کانٹا جو کابل میں.                                                                  تو دلی کا ھر اک پیر و جواں بیتاب ھو جائے

تحریر۔ سید حسن رضا نقوی 

 

زمرہ جات:   Horizontal 3 ،
ٹیگز:   شیعه ،
دیگر ایجنسیوں سے (آراس‌اس ریدر)