شکر ھے ھمارا کوئی نھیں تھا

پاکستان نے ہاں کر دی: اسلامی اتحادی افواج کی کمان راحیل شریف سنبھالیں گے

پورا سچ بتائیں یا قوم پر رحم کریں

ایران کے ایٹمی معاہدے پر دوبارہ مذاکرات ناممکن ہیں: یورپی یونین

پاک فوج کا نیا اور غیر واضح کردار

افغان طالبان کی پاکستان آمد، داعش کے خلاف حکمت عملی؟

نواز شریف کی جلاوطنی کی پس پردہ حقیقت فاش

شیعہ افراد کو غیر مسلم شمار کرنے پر افسران معطل

روس پر طالبان کو اسلحہ فراہمی کا الزام: امریکہ کی اپنی ناکامیوں کو چھپانے کی کوشش

شفقنا خصوصی: کیا پیپلز پارٹی غدار ہے؟

جماعت الدعوہ کی لاہور ریلی: دہشت گردی کے خلاف جنگ کا مذاق

ابراہیم شریف کے خلاف کاروائی بحرینی سرگرم کارکنوں کو خاموش کرانے حکومتی مہم کا حصہ ،ایمنسٹی

'حسین حقانی کو ویزا جاری کرنے کا اختیار یوسف گیلانی نے دیا'

پورا سچ بتائیں یا قوم پر رحم کریں

ایک حقیقی المیہ:  کیا پاکستان میں انتہا پسندوں کو سیاست میں حصہ لینے سے روکا جا سکتا ہے؟

شفقنا خصوصی: برطانیہ اپنے ہی پالے سانپوں شکار

سعودیہ کے 5 ٹھکانوں پر یمن کی کامیاب کارروائی؛ 40 فوجی ہلاک اور زخمی

شیعوں‌کو حقیر قرار دینے کی سازش: کے پی کے حکومت کے پس پردہ عزائم کیا ہیں؟

ایٹمی معاہدے کے باوجود بھی اسرائیل کیلئے ایران اہم ترین خطرہ ،موساد سربراہ

فسادیوں کا قصہ

۲۳ مارچ ۔۔۔ ہماری کسرِ نفسی اور ہماراپاکستان ~ نذر حافی

یوم تجدید عہد کے تقاضے

  شفقنا خصوصی: چین اقوام متحدہ کو جوتے کی نوک پر کیوں رکھتا ہے؟

 ہندو انتہا پسندی کی انتہا : بھارت پاکستان پر حملے کا آغاز کرسکتا ہے

اسرائیل روئے زمین کا خبیث ترین قابض

مقدس ہستیوں کی توہین: کیا سوشل میڈیا کو بند کردینا ہی مسئلے کا حل ہے؟

ملک بھر میں یوم پاکستان آج ملی جوش و جذبے سے منایا جائے گا

لندن میں دہشتگردی کے واقعے میں حملہ آور سمیت 4 افراد ہلاک، 20 زخمی

برطانوی پارلیمنٹ کے باہر فائرنگ سے 12 افراد زخمی

یمنی کاروائیوں کا اگلا مرحلہ جنگ کا نقشہ تبدیل کردے گا: یمنی مقبول افواج

لحاف اور مونگ پھلی سے باہر کی دنیا

اصطلاحات کا کھیل اور معذرت کی لوریاں ~ نذر حافی

بیجنگ کے جنوبی ایشیائی ممالک کے تعلقات پر بھارت مداخلت سے بازرہے: چین کی تنبیہ

لبنان کے خلاف سعودیہ کی بھیانک سازش

فوجی عدالتوں سے سیاسی قوتیں خائف کیوں؟

شفقنا خاص : اسلامی جمعیت طلبا نے پاکستان کے تعلیمی اداروں کی کیسے یرغمال بنایا ہوا ہے؟

پس پردہ کہانی: برطانیہ الطاف حسین کے خلاف ایکشن لینے سے گریزاں کیوں؟

The art of hand clapping makes comeback in Egypt

11 ستمبر کے واقعات میں ہلاک ہونےوالوں کے اہل خانہ کی سعودی عرب کے خلاف قانونی کارروائی

یمن کے مظلوم عوام کے قتل عام کےلئے فرانس کی جانب سے سعودی عرب کو ہتھیاروں کی فروخت

امریکا نے 7 اور برطانیہ نے 6 مسلم ممالک کے مسافروں پر نئی پابندی لگا دی

امریکا کے ساتھ جنگ کی صلاحیت رکھتے ہیں: جنوبی کوریا

بانی ایم ایم کیو ایم سے متعلق پاکستان کی تشویش کوسمجھ سکتے ہیں: برطانوی وزیر داخلہ

ہفنگٹن پوسٹ: سعودیہ دہشتگردی کا حامی ہے، ایران نہیں

شہنشاہانہ عیاش پرستیاں:‌سعودی فرمانروا کا پرتعیش دورہ ایشیاء

امت مسلمہ کو واضح پیغام: اقوام متحدہ اسرائیل کی کٹھ پتلی

پاکستان میں داعشی مراکزکی بھرتی:پاکستانی خواتین کی بھی داعش میں شمولیت

The Fatwa you Didn’t Hear about that Should be Going Viral

ٹی ایم او بنوں کے متنازعہ اشتہار: 6 کروڑ اہل تشیع کے جذبات مجروح کیئے، ذمہ داروں کو کڑی سزادی جائے: ناصر شیرازی

اس ریجن میں پاکستان کی مفادات کیخلاف سب سے بڑا جاسوسی کا اڈہ امریکن ایمبیسی اسلام آباد بنا ہوا ہے: علامہ راجہ ناصرعباس

نیشنل ایکشن پلان کو سیاسی پلان نہ بنایا جائے ، ثروت اعجاز

سندھ طاس معاہدہ، پاکستان کے لئے اہم کیوں؟

یمن : سعودی ہیلی کاپٹر کا صومالی مہاجرین کی کشتی پہ حملہ ،40 ہلاک، متعدد زخمی ہوگئے – مستجاب حیدر

ضرب عضب کے بعد ملک میں کسی دہشتگرد تنظیم کا ہیڈ کوارٹر نہیں: چوہدری نثار

 آل خلیفہ حکومت انسانی حقوق کی سرخ لائن بھی عبور کر گئی: بحرینی جیلوں میں قیدیوں کے لئے مذہبی عبادات کی ادائیگی بھی جرم

مودی حکومت کے کالے کرتوت: بھارت میں مسلمانوں کی جائیداد پر قبضہ کرنے کا کالا قانون منظور

تعلیم حکومت کی ذمہ داری یا مذہبی تنظیموں کی؟

 شاہ سلمان کا دورہ مالدیپ ملتوی: وجہ سوائن فلو یا عوام کا احتجاج

ROOTS OF CONFLICT CONFERENCE – Shafaqna Exclusive

بھارت میں ہندو انتہا پسندی تباہی کا راستہ ہے

دنیا کے گوشہ و کنار میں صدیقہ طاہرہ سلام اللہ علیھا کا جشن ولادت

عراق کے وزیر اعظم امریکہ روانہ ہوگئے

تصاویر: بنگلہ دیش میں ٹرین کا سفر کرنا ناخوشگوار

شرجیل میمن کی اہم پریس کانفرنس، بڑے انکشافات

بھارتی مخالفت کے باوجود سلامتی کونسل نے پاک چین اقتصادی راہداری کی حمایت کردی

عدالت نوازشریف کا موقف تسلیم نہیں کریگی: اعتزاز احسن

شام میں جنگ کے تمام اخراجات عرب ممالک نے دیئے ہیں : سید حسن نصر اللہ

پاک چین اقتصادی راہداری منصوبے سے بھارت کی بے چینی میں اضافہ

 فوعہ اور کفریا کے شہری، موت کے دہانے پر: ثنا خوان انسانی حقوق کہاں ہیں؟

ملٹری کورٹس پر تحفظات اور جمہوری اخلاقیات: رضا ربانی اپنے لیڈر کی کرپشن پر خاموش کیوں؟

واشنگٹن کے راستے اسلام آباد پہنچنے کی خواہش

2017-02-17 14:05:28

شکر ھے ھمارا کوئی نھیں تھا

hand-writing-1237735                                                                                     سناؤ! کیسے ھو بھابھی بچے

کیسے ھیں؟ بس یار کیا بتاؤں رات بھت پریشانی و اضطراب میں کٹی پوری رات سو نھیں پایا.کیوں کیا ھوا خیر تو ھے؟ یار کیا بتاؤں احمد کو شدید بخار تھا نه میں سو پایا نه اسکی ماں پوری رات اس کے پاس بیٹھے رھے ایک طرف میں اور ایک طرف اسکی ماں, بس صبح کچھ بھتر ھوا تو میں آفس آگیا ورنه آج آفس آنا بھی مشکل ھو جاتا.ھاں یار کل ھمارے صاحبزادے نے بھی بھت پریشان کیا بھاگتے بھاگتے گر گیا ناک سے ایسا خون شروع ھوا که پهر بند ھونے کا نام ھی نه لے, الله الله کرکے پانچ سات منٹ تک خون رکا تو ھماری جان میں جان آئی. بس یار کیا کریں بچے بعض اوقات بھت پریشان کرتے ھیں.ھاں بات تو یھی ھے بچوں کو کچھ ھو تو جان نکلتی ھے.                                                                                                                                                    اچھا اور سناؤ کوئی نئی تازی! سنا ھے رات پھر کھیں دھماکه ھوا میں نے تو رات خبریں ھی نھیں سنیں بچے ڈرامه دیکھ رھے تھے.ھاں یار کوئی اتنا بڑا دھماکه نھیں تھا بس تقریبا 100 لوگ جاں بحق ھوئے.ھوں اتنی بڑی تعداد نھیں تھی  سنا ھے سندھ میں ھوا.ھاں یار بس شکر ھے اسلام آباد میں سیکیوریٹی اچھی ھے. مرنے والے کون لوگ تھے؟ سنا ھے شیعه تھے.اچھا!چلو وه بیچارے تو مرتے ھی رھتے ھیں کوئی نئی بات نھیں.هاں یار لیکن مسئله یه ھے که پهر یه احتجاج کے لیے سڑکوں پے نکل آتے ھیں اور لوگوں کو اذیت ھوتی ھے.صحیح بات ھے ایسے واقعات نھیں ھونے چاھییں لیکن اسکا یه مطلب نھیں که دوسروں کو اذیت دی جائے.                                                                                         هاں آج اس طرح کی بہت سی بحثیں پاکستان کے مختلف سرکاری و غیر سرکاری اداروں,کالجوں یونیورسٹیوں,چوکوں,چوراھوں اور ھوٹلوں میں ھورھی ھونگی.آج یه ملک جسے اسلام کے نام په لیا گیا تھا قتل و غارت گری کی آماجگاه بن چکا ھے.اگر آپ 20 کروڑ کی آبادی میں زنده ضمیر لوگ ڈھونڈنیں نکلیں تو چند لوگ ھی مل پائیں گے.                                            قرآن نے کها ایک انسان کا قتل ساری انسانیت کا قتل ھے اور ھم نے ساتھ کچھ اضافے اپنی طرف سے کرلیے شیعه انسان,سنی انسان,عیسائی انسان,ھندو انسان,سندھی انسان,پنجابی انسان وغیره.ھمارے ضمیر مرده ھوچکے ھیں روزانه اتنی خبریں سنتے ھیں که 50 60 لوگوں کا مرجانا ھمارے لیے انتھائی معمولی بات ھے.                                                                                                        ھمارے نبی أکرم نے فرمایا: جس نے صبح کی اور مسلمانوں کے حالات سے بے خبر رھا وه درحقیقت مسلمان کهلانے کا حقدار نھیں لیکن ھم جب صبح کسی مسلمان کا گلا کٹنے کی خبر سنتے ھیں تو شکر کرتے ھیں که ھمارا رشته دار نھیں تھا, ھمارے قوم یا فرقے کا نھیں تھا, شکر ھے دھماکه ھمارے شھر میں نھیں ھوا.                         کیا انسانیت اسی کا نام ھے,کیا عقلانیت اور اسلام ھمیں ھمدردی کے یھی معیار عطا کرتے ھیں.اگرچے میرے سب عزیز سلامت ھیں لیکن وه ٹکڑوں میں بٹ جانے والے لوگ بھی کسی کے عزیز ھیں.                                               سو لاشیں یعنی سو خاندانوں کی زندگیاں اجڑ گئیں,کتنے بچے یتیم ھوگئے کتنی ماؤں کی گودیاں ویراں ھوگئیں کتنی بھنوں سے بھائی چھن گئے. کیا ھمارے درمیان انسانیت کا رشته اسلام کا رشته پاکستانیت کا رشته جیسی کوئی چیز وجود نھیں رکھتی.اور پهر ھمارا معاشرے انھیں احتجاج کا حق بھی نھیں دیتا حکومتی اداروں اور عدالتوں میں ان دکھیاروں کی کوئی شنوائی نھیں ھوتی.                                                                                                   اس ظلم کے خلاف بولنا پڑے گا ورنه آگ کسی کی دوست نھیں ھوتی یه آگ جب پهیلے گی تو سب کو لپیٹ میں لے لے گی.ریاستی ادارے بھی یهی سوچ رھے ھونگے که کوئی بات نھیں آج تو شیعوں کا نقصان ھوا ھے,نھیں یه پاکستان کا نقصان ھے 100 محب وطن و باوفا لوگوں کا خون بھا ھے.حکمرانوں خدارا پاکستان کو تبائی سے بچالو ورنه کف افسوس ملتے رھو گے.اور اے میری قوم خدارا ان بے گناھوں کا درد محسوس کرو تبھی مسلمان اور انسان کھلانے کے لائق ھو سکتے ھو.                                                                                    اخوت اس کو کهتے ھیں چبھے کانٹا جو کابل میں.                                                                  تو دلی کا ھر اک پیر و جواں بیتاب ھو جائے

تحریر۔ سید حسن رضا نقوی 

 

زمرہ جات:   Horizontal 3 ،
ٹیگز:   شیعه ،
دیگر ایجنسیوں سے (آراس‌اس ریدر)

اسلام کی معرفت

- سحر ٹی وی

یادوں کے جھروکے

- سحر ٹی وی

The Other Side 25 March 2017

- وقت نیوز

Game Beat 25 March 2017

- وقت نیوز