حجاب اہم ہے یا لڑکیوں کی تعلیم؟ نواز لیگ کی انتہا پسندانہ سوچ

استعفے کی وجوہات بیان کیں تو پارٹی کو نقصان ہوگا، چوہدری نثار

 کیا بھارت محمود اچکزئی کو خرید چکا ہے؟

حیدرآباد سے ایک اور لڑکی داعش میں شامل

بحرین کے بارے میں امریکی وزیر خارجہ کی باتیں کس حد تک سنجیدہ ہیں؟

راحیل شریف پاکستان میں 3 سالہ حکومت قائم کرکے احتساب کریں گے: پاکستانی میڈیا

نواز شریف اور اہل خانہ کا نیب کے سامنے پیشی سے انکار توہین عدالت ہے: علامہ ناصر عباس جعفری

ایران اور عراق کے مشترکہ مفادات کے خلاف موقف اختیار نہیں کریں گے: مقتدی صدر

وزیرآباد میں آج ہونے والا نواز شریف کا جلسہ کیوں منسوخ کر دیا گیا؟

چودھری نثار، پرویز رشید کی لفظی جنگ نے لیگی قیادت کو پریشان کر دیا

تفتان بارڈر پر زائرین کیساتھ بدترین سلوک انسانیت کی تذلیل اور ناقابل برداشت ہے

عراقی وزیر اعظم نے تلعفر کو آزاد کرانے کا حکم صادر کردیا

امریکا میں نسل پرستی کے خلاف ہزاروں افراد کی ریلی، پولیس سے جھڑپیں

شریف خاندان آج بھی نیب میں پیش نہ ہوا

پاکستان امریکہ کا کوئی ڈومور مطالبہ قبول نہیں کرے گا

سعودی حکومت یمن جنگ میں اپنا سب کچھ داؤ پر لگانے کے باوجود شکست سے دوچار ہے

سعودی عرب نفسیاتی محاصرے سے باہر نکلنے کے لئے اب عراق کا سہارا لے رہا ہے

شریف برادران کی فطرت میں ہے کہ وہ سیدھی بات کرنے والےکو پسند نہیں کرتے

مسجد اقصیٰ آج بھی جل رہی ہے!

شام،لبنان تعلقات لازوال ہیں، شام پر صہیونی جارحیت کے امکان کو رد نہیں کیا جاسکتا: شامی سفیر

دہشتگردی کا کسی بھی نسل یا مذہب سے کوئی تعلق نہیں: ایران

امریکہ اور اس کے اتحادی ممالک نے دہشت گردوں کو کیمیائی ہتھیار فراہم کئے

نوازشریف نے آئین و قانون کے خلاف علم بغاوت بلند کردیا ہے: شیخ رشید

عمران خان کے خلاف توہین عدالت کی باضابطہ کارروائی شروع کرنے کا فیصلہ

دبئی کے حکام کی ابوظہبی سے آزادی کے لئے منصوبہ بندی شروع

سپین میں دولت اسلامیہ کی دہشت گردی

مقبوضہ کشمیر کوفلسطین بنانے کی سازش

بدلتے پاکستان کی مزاحمت

قطری حاجیوں کی سلامتی کے معاملے پر تشویش ہے: شیخ محمد بن عبدالرحمان ثانی

میڈرڈ سے مانچسٹر تا بارسلونا: دہشت گردانہ واقعات کا سلسلہ

سعودی عرب کی قطر پر مہربانی کا آغاز کیوں ہوا؟

ن لیگ کے حوالے سے مولانا فضل الرحمان کا فیصلہ

خاص خبر: ڈان لیکس پر فارغ پرویز رشید کے سنسنی خیز انکشاف

سعودی بادشاہ کے خرچ پرقطری شہریوں کے حج کی مخالفت

ہارٹ اٹیک سے 1 ماہ قبل سامنے آنے والی علامات

زائرین کی توہین ناقابل برداشت عمل ہے حکومت و ریاستی ادارے پاکستانی زائرین کے مسائل حل کریں: شیعہ علماء کونسل پاکستان

اعلیٰ عدلیہ کے فیصلے پر نواز شریف کا واویلا چور مچائے شور کے مصداق ہے: علامہ ناصرعباس جعفری

شایک اور نیو لبرل نواز شریف کا طبلچی – عامر حسینی

شکریہ پاکستانی حکمرانوں : ہر پاکستانی تقریباً 95,000 روپے کا مقروض ہے، وزارتِ خزانہ

پاکستان نے پاک ایران سرحد پر گیٹ تو تعمیرکر دیا لیکن زائرین کی مدد کے حوالے سے کچھ نہ ہو سکا

مجھے کیوں نکالا گیا؟

شفقنا خصوصی: امریکہ تحریک کشمیر کو دبانے کے لیے کس طرح بھارت کی مدد کر رہا ہے؟

یمن جنگ طویل ہونے کی اصل وجہ، منصور ہادی ہیں

میرا ساتھ دو میں انقلاب لاؤں‌گا

قطر اور سعودی عرب کے درمیان گذشتہ 6 برس سے جاری جنگ کہاں لڑی جا رہی ہے؟

زرداری نواز مڈھ بھیڑ اور بیچاری جمہوریت

بارسلونا میں دہشت گردی، داعش نے حملے کی ذمہ داری قبول کر لی

نوجوان داعش سے منسلک تنظیموں سے بہت زیادہ محتاط رہیں، سربراہ پاک فوج

حزب المجاہدین کو دہشت گرد تنظیم قراردینے پرپاکستان کی مایوسی

مسئلہ کشمیر اور مودی کی سیاست

چوہدری نثار کے پارٹی کے قائم مقام صدر کے انتخاب کے طریقہ کار پر شدید تحفظات

نواز شریف اور ان کے خاندان کو آئندہ سیاست میں نہیں دیکھ رہا: آصف زرداری

ترکی اور ایران کی عراقی کردستان میں ریفرنڈم کی مخالفت

آل شریف کا اقتدار اور پاکستان کی سلامتی کولاحق خطرا ت

 خفیہ ڈیل: کیا ن لیگ آصف زرداری کو صدر بنا رہی ہے؟

ظہران، سعودی عرب میں موجود مذہبی تضادات کا منہ بولتا ثبوت

جماعت الدعوہ کا سیاسی چہرہ

ٹرمپ نے امریکا میں نسل پرستی کی آگ پر تیل چھڑک دیا

چین اور بھارتی افواج میں جھڑپ، سرحد پر شدید کشیدگی

ماڈل ٹاؤن کیس میں شریف برادران کو ہر صورت پھانسی ہو گی: طاہرالقادری

کیا سعودیہ یمن جنگ سے فرار کا رستہ ڈھونڈ رہا ہے؟

نوازشریف کاسفر لاہور

پاکستان میں جاری دہشتگردی کا تعلق نظریے سے نہیں بلکہ پیسوں سے ہے۔ وزیراعلی بلوچستان

سعودی شہزادوں کا غیاب: محمد بن سلمان کامخالفین کو پیغام

یوم آزادی پہ تاریخ کے سیاہ اوراق کیوں پلٹے جارہے ہیں ؟

سعودی عرب کا جنگ یمن میں ناکامی کا اعتراف

سعودی عرب اور عراق کا 27 سال بعد سرحد کھولنے کا فیصلہ

ایران کی ایٹمی معاہدہ ختم کرنے کی دھمکی

وہ غذائیں جن کے کھانے سے کمزور بالوں اور گنج پن سے نجات ملتی ہے

گالی سے نہ گولی سے، مسئلہ کشمیر گلے لگانے سے حل ہو گا: نریندر مودی کا اعتراف

سری لنکن کرکٹ بورڈ نے دورہ پاکستان کی منظوری دیدی

2017-03-18 11:58:20

حجاب اہم ہے یا لڑکیوں کی تعلیم؟ نواز لیگ کی انتہا پسندانہ سوچ

 

 

Hijab

پنجاب کے وزیرہائر ایجوکیشن نے تجویز پیش کی ہے کہ حجاب اوڑھنے والی طالبات کو پانچ نمبر اضافی دیے جائیں گے؟ جس پر اس کے حق اور مخالفت میں میں ایک نئی بحث شروع ہوگئی ہے۔

 

سوشل میڈیا میں سینئر صحافی حسین نقی نے کمنٹ کرتے ہوئے دو سوال اٹھائے

 

حجاب اہم ہے یا لڑکیوں کی تعلیم؟

 

حجاب اہم ہے یا صوبے میں صحت کی سہولتوں کی فراہمی؟

 

ایک مولانا نے لکھا کہ

 

حافظ قرآن کے دس نمبر ہوں یا حجاب کے پانچ ۔۔۔۔۔ یہ درست اقدام نہیں کہلایا جا سکتا۔

 

 

 

دستور پاکستان میں ریاست جہاں اسلامی اقدار کو فروغ دینے کی پابند ہے وہیں اس کے لیے یہ بھی لازم ہے کہ کسی کی حق تلفی نہ ہو۔منصب کا تعلق اہلیت سے ہے تقوے سے نہیں۔ ہمیں ایسا ڈاکٹر انجینئر وکیل جج وغیرہ چاہئیں جو اپنے شعبے میں مہارت رکھتے ہوں۔

 

ہم ایک قابل ڈاکٹر کے پاس علاج کے لیے جاتے ہیں بھلے وہ حافظ قرآن ہو یا نہ ہو اور حجاب لے یا نہ لے۔ اسلام آباد میں اپنے۔ بچوں کے علاج کے لیے میری ہی نہیں اکثریت کی اولین ترجیح ڈاکٹر جے کرشن ہوتے ہیں۔ جے کرشن واقعی ایک مسیحا ہیں۔ لوگ سفارشیں تلاش کرتے پھرتے ہیں کہ جے سے وقت مل جائے۔ سوال ہے کہ۔ کیوں؟ اور جواب ہے اس کی دیانت اور قابلیت۔ سوچیے اگر کوئی بچی قابلیت کی بنیاد پر میرٹ پر پورا نہیں اترتی تو کیا اسے اس وجہ سے ڈاکٹر بنا کر لوگوں کی زندگی سے کھیلنے کا موقع دیا جاءے کہ وہ حجاب کرتی تھی اور حافظ قرآن تھی؟

 

حجاب کیجیے اچھی چیز ہے اور قرآن بھی حفظ کیجیے کہ سعادت کی بات ہے لیکن نمبروں کے لالچ میں نہیں۔ لالچ سے بے نیاز ہو کر۔ ریاست کو سمجھنا ہو گا کہ مذہبی اقدار کے فروغ کے لیے تربیت کا میدان موجود ہے ادھر کا رخ کرے۔ ایسے اقدامات کا کوئی فائدہ نہیں۔ نہ دنیا میں نہ دین میں۔۔پانچ نمبروں کی خاطر حجاب لینے والی بہنیں بیٹیاں صرف قوم کی اجتماعی منافقت اور مفاد پرست رویے میں فروغ کا باعث بنیں گی۔ ان سے خیر کی توقع عبث ہے۔

 

سوال یہ ہے کہ حکومت کی کیا ترجیحات ہیں؟ مذہب کے نام پر عوام کو بے وقوف بنانا یا انہیں صحت و تعلیم کی سہولیات مہیا کرنا۔افسوس سے کہنا پڑتا ہے کہ شہباز شریف جو کہ ایک لمبے عرصے سے پنجاب کے وزیر اعلیٰ چلے آرہے ہیں اپنے صوبے میں تعلیم اور صحت کی سہولیات مہیا کرنےمیں ناکام رہے ہیں۔ان کی تمام تر توجہ پنجاب کے چند بڑے شہروں میں سڑکیں تعمیر کرنا ہے۔

 

پاکستان خاص کر صوبہ پنجاب میں تعلیم کی صورتحال انتہائی دگرگوں ہے۔ سکولوں کو بند کیا جارہا ہے اور دیہاتوں میں تو ان کی عمارتیں مویشی باندھنے کے کام آرہی ہیں۔بی بی سی نے پنجاب کی ایک طالبہ سے تعلیم حاصل کرنے کے متعلق پوچھا تو وہ کہنے لگی کہ میں نے تو ڈاکٹر بننے کا خواب دیکھنا بھی چھوڑ دیا ہے۔ میرا یہ خواب اس وقت ٹوٹ گیا جب میرا سکول بغیر بتائے بند کر دیا گیا۔ ہم سکول جاتے مگر اساتذہ نہیں آتے، کئی دن ایسا چلتا رہا اور بلآخر سکول بند کر دیا گیا۔ اتنا عرصہ گزرنے کے بعد بھی مجھے نہیں بتایا کہ کیا میں کبھی سکول جا سکوں گی یا نہیں۔ اب تو میری سکول جانے کی عمر بھی نکلتی جا رہی ہے۔‘۔

 

چودہ سالہ غزالہ چوتھی جماعت میں تھیں جب ان کے گاؤں رام نگر میں قائم لڑکیوں کا سرکاری سکول بند کر دیا گیا۔ اس علاقے کی لڑکیوں کے لیے یہ واحد سکول تھا جسے انتظامیہ نے آٹھ برس پہلے بند کر دیا۔ پہلے سے خستہ حال سکول کی عمارت اب ایسے ڈھانچے کی مانند ہے جو کسی وقت بھی مکمل منہدم ہو جائے گی۔ گاؤں کی لگ بھگ تمام لڑکیاں ہی اب سکول کی سہولت سے محروم ہیں۔

 

غزالہ کا شمار ان ڈھائی کروڑ بچوں میں ہوتا ہے جن کے پڑھنے لکھنے کا خواب ادھورا رہ گیا۔ان میں بیشتر کو تو سکول کا منہ کھبی دیکھنا نصیب ہی نہیں ہوا اور بعض کے علاقے میں سکول نہ ہونا یا غربت کی وجہ سے سکول کی فیس کا نہ ہونا ان پڑھ رہنے کی وجہ بن رہی ہے۔

 

پنجاب حکومت کی ترجیح کبھی بھی تعلیم نہیں رہی ۔وزیر ہائر ایجوکیشن کو چاہیے کہ وہ مذہب کے نام پر عوام کو لولی پاپ دینے  کی بجائے انہیں باشعور بنائیں اور پنجاب میں تعلیم کی فراہمی اور اس کے معیاربہتر کرنے  پر توجہ دیں ۔

 

نیا زمانہ

زمرہ جات:  
دیگر ایجنسیوں سے (آراس‌اس ریدر)