یمن کے خلاف حملوں میں سعودی عرب کی جانب سے کلسٹر بموں کا استعمال

سیکولر بھارت کا خون آلو چہرہ: بھارت میں مسلمانوں سے زیادہ گائے محفوظ

جنرل راحیل شریف کی کمان کس کے خلاف: 39 مسلم ممالک کا مشترکہ دشمن کون؟

موصل جنگ کا خاتمہ یا واشنگٹن کی ایک نئی سازش؟

 شفقنا خصوصی:  اسلامی جمعیت طلبہ کی غنڈہ گردی اور حکومتی خاموشی

سرکاری ٹی وی پر قیدیوں کو مجرم بنا کر پیش کرنا بحرینی آئین کی خلاف ورزی

فلسطینیوں پر اسرائیلی بربر یت کا اعتراف: اقوام متحدہ محض خاموش تماشائی

داعش کی حلب میں شکست پر اسد کے خلاف مغربی میڈیا کا پروپیگنڈا: کیاعراق میں داعش کی شکست پر بھی شیعہ ملیشیاء کے خلاف یہی ڈرامہ دہرایا جائے گا؟

راحیل شریف کی سربراہی: پاکستان کو انتشار کی طرف لے جانے کی سعودی کوشش

ان دلدلوں کو صاف کرو جو خالد مسعود جیسے دہشت گرد پالتی ہیں – عامر حسینی

مدارس سے نکلتا الحاد، الامان

پاک امریکہ تعلقات میں دشواریاں موجود ہیں

پاک فوج کا نیا کردار

لندن ہلاکتوں پر واویلا، شام اور عراق ہلاکتوں پر خاموشی: مسلمانوں کا خون ارزاں کیوں؟

ایران سے روابط، امریکہ کے لیے آج بھی دشمنی کا معیار ہے

پاکستانی حزب اختلاف کی راحیل شریف کے سعودی فوجی اتحاد میں شمولیت کی مخالفت

روہنگیا مسلمانوں کے خلاف آپریشن کابرما کے فوجی سربراہ کا دفاع

گستاخانہ مواد کیس؛ فیس بک سے 85 فیصد مواد ختم کر دیا گیا ہے، سیکرٹری داخلہ

دیواریں مسائل حل نہیں کرتیں

  سعودیہ کی دہشت گردوں کو فنڈنگ: برطانیہ کی آنکھیں کب کھلیں گی؟

امارات اور اسرائیل مشترکہ فوجی مشقیں: شرم تم کو مگر نہیں آتی

 وزیر داخلہ کی پہیلیاں : کون لوگ مذہب کے نام پر افراتفری پھیلانا چاہتے ہیں؟

 سعودی باندی: کیا عرب لیگ کا واحد مقصد ایران کی مخالفت ہے؟

جنوبی سوڈان کا مسلح سیاسی بحران، جنسی جرائم بلند ترین سطح پر

شام اور عراق میں شکست کے بعد داعش کا مستقبل کیا ہوگا؟

اسلام آباد مذہبی مدارس کا گھر: انتہا پسندی کے خلاف جنگ کیا محض لفاظی ہے ؟

کیا اسلامی ممالک سوشل میڈیا پر گستاخانہ مواد کی اشاعت کو روک سکتے ہیں؟

مردم شماری کے دوران تخریب کاری کی بڑی کوشش ناکام

  پاکستانی آئین کی دھجیاں: کیا حکومت لال مسجد سے خائف ہے؟

بلی تھیلے سے باہر: شام میں تکفیری دہشتگردوں اورصیہونی حکومت کے درمیان تعلقات کھل کر سامنے آگئے

پاکستان نے ہاں کر دی: اسلامی اتحادی افواج کی کمان راحیل شریف سنبھالیں گے

پورا سچ بتائیں یا قوم پر رحم کریں

ایران کے ایٹمی معاہدے پر دوبارہ مذاکرات ناممکن ہیں: یورپی یونین

پاک فوج کا نیا اور غیر واضح کردار

افغان طالبان کی پاکستان آمد، داعش کے خلاف حکمت عملی؟

نواز شریف کی جلاوطنی کی پس پردہ حقیقت فاش

شیعہ افراد کو غیر مسلم شمار کرنے پر افسران معطل

روس پر طالبان کو اسلحہ فراہمی کا الزام: امریکہ کی اپنی ناکامیوں کو چھپانے کی کوشش

شفقنا خصوصی: کیا پیپلز پارٹی غدار ہے؟

جماعت الدعوہ کی لاہور ریلی: دہشت گردی کے خلاف جنگ کا مذاق

ابراہیم شریف کے خلاف کاروائی بحرینی سرگرم کارکنوں کو خاموش کرانے حکومتی مہم کا حصہ ،ایمنسٹی

'حسین حقانی کو ویزا جاری کرنے کا اختیار یوسف گیلانی نے دیا'

پورا سچ بتائیں یا قوم پر رحم کریں

ایک حقیقی المیہ:  کیا پاکستان میں انتہا پسندوں کو سیاست میں حصہ لینے سے روکا جا سکتا ہے؟

شفقنا خصوصی: برطانیہ اپنے ہی پالے سانپوں شکار

سعودیہ کے 5 ٹھکانوں پر یمن کی کامیاب کارروائی؛ 40 فوجی ہلاک اور زخمی

شیعوں‌کو حقیر قرار دینے کی سازش: کے پی کے حکومت کے پس پردہ عزائم کیا ہیں؟

ایٹمی معاہدے کے باوجود بھی اسرائیل کیلئے ایران اہم ترین خطرہ ،موساد سربراہ

فسادیوں کا قصہ

۲۳ مارچ ۔۔۔ ہماری کسرِ نفسی اور ہماراپاکستان ~ نذر حافی

یوم تجدید عہد کے تقاضے

  شفقنا خصوصی: چین اقوام متحدہ کو جوتے کی نوک پر کیوں رکھتا ہے؟

 ہندو انتہا پسندی کی انتہا : بھارت پاکستان پر حملے کا آغاز کرسکتا ہے

اسرائیل روئے زمین کا خبیث ترین قابض

مقدس ہستیوں کی توہین: کیا سوشل میڈیا کو بند کردینا ہی مسئلے کا حل ہے؟

ملک بھر میں یوم پاکستان آج ملی جوش و جذبے سے منایا جائے گا

لندن میں دہشتگردی کے واقعے میں حملہ آور سمیت 4 افراد ہلاک، 20 زخمی

برطانوی پارلیمنٹ کے باہر فائرنگ سے 12 افراد زخمی

یمنی کاروائیوں کا اگلا مرحلہ جنگ کا نقشہ تبدیل کردے گا: یمنی مقبول افواج

لحاف اور مونگ پھلی سے باہر کی دنیا

اصطلاحات کا کھیل اور معذرت کی لوریاں ~ نذر حافی

بیجنگ کے جنوبی ایشیائی ممالک کے تعلقات پر بھارت مداخلت سے بازرہے: چین کی تنبیہ

لبنان کے خلاف سعودیہ کی بھیانک سازش

فوجی عدالتوں سے سیاسی قوتیں خائف کیوں؟

شفقنا خاص : اسلامی جمعیت طلبا نے پاکستان کے تعلیمی اداروں کی کیسے یرغمال بنایا ہوا ہے؟

پس پردہ کہانی: برطانیہ الطاف حسین کے خلاف ایکشن لینے سے گریزاں کیوں؟

The art of hand clapping makes comeback in Egypt

11 ستمبر کے واقعات میں ہلاک ہونےوالوں کے اہل خانہ کی سعودی عرب کے خلاف قانونی کارروائی

یمن کے مظلوم عوام کے قتل عام کےلئے فرانس کی جانب سے سعودی عرب کو ہتھیاروں کی فروخت

امریکا نے 7 اور برطانیہ نے 6 مسلم ممالک کے مسافروں پر نئی پابندی لگا دی

امریکا کے ساتھ جنگ کی صلاحیت رکھتے ہیں: جنوبی کوریا

2017-03-18 14:18:31

یمن کے خلاف حملوں میں سعودی عرب کی جانب سے کلسٹر بموں کا استعمال

4bk8c16340b412czp4_800C450انسانی حقوق کی نگراں تنظیم ہیومن رائٹس واچ کے اسلحہ شعبے کے سربراہ اسٹیفن گوس نے اپنی رپورٹ میں شمالی یمن میں سعودی عرب اور اس کے اتحادی ملکوں کی جانب سے کلسٹر بموں کے استعمال کی طرف اشارہ کرتے ہوئے کہا ہے کہ سعودی اتحاد کے ہاتھوں ممنوعہ ہتھیاروں کے استعمال سے پتہ چلتا ہے کہ یہ اتحاد یمنی عوام کی جان کو کوئی اہمیت نہیں دیتا۔

کلسٹر بموں پر پابندی کے بین الاقوامی کمپین کے سربراہ اسٹیفن گوس نے تاکید کے ساتھ کہا ہے کہ سعودی عرب اور اس کے اتحادی ممالک نیز برازیل کو، کہ جس نے کلسٹر بم بنائے ہیں، چاہئے کہ ان بموں کے استعمال پر پابندی کے بین الاقوامی کنوینشن پر فوری طور پر دستخط کر دے۔

انھوں نے کہا کہ کلسٹر بموں میں شامل دھماکہ خیز مواد کے حامل اجزا، ایک بڑے علاقے میں پھیل جاتے ہیں اور اکثر اوقات وہ پھٹ نہیں پاتے جو پھر بعد میں بارودی سرنگ میں تبدیل ہو جاتے ہیں جو سرانجام جنگ کے بعد بھی عام شہریوں کے لئے جان لیوا ثابت ہوتے ہیں۔

 ہ چند ماہ قبل ایمنسٹی انٹرنیشنل نے ایک بیان میں خبردار کیا تھا کہ یمن میں کلسٹر بموں کے وجود نے اس ملک کے بعض علاقوں کو بارودی سرنگ میں تبدیل کر دیا ہے۔

انسانی حقوق کی نگراں تنظیم ہیومن رائٹس واچ کے اسلحہ شعبے کے سربراہ اسٹیفن گوس نے اپنی رپورٹ میں کہا ہے کہ سعودی عرب نے یمنی عوام کے خلاف مسلط کردہ جنگ میں اٹھارہ بار کلسٹر بموں کا استعمال کیا ہے حالانکہ سنہ دو ہزار آٹھ کے طے کردہ کنوینشن کے مطابق اس قسم کے بموں کے استعمال پر پابندی عائد کی جا چکی ہے اس لئے کہ اس طرح کے ہتھیاروں کا نشانہ عام شہری ہی بنتے ہیں جبکہ اس کنوینشن پر اب تک ایک سو آٹھ ممالک کہ جن میں برطانیہ بھی شامل ہے، دستخط کر چکے ہیں۔

دوسری جانب سعودی اتحاد کی جارحیت کے جواب میں یمنی فوج نے سعودی ایجنٹوں کے ٹھکانوں پر حملہ کر کے انھیں بھاری جانی نقصان پہنچایا ہے۔

سعودی عرب کی جارحیت کے جواب میں یمنی فوج نے صوبے مآرب میں کوفل فوجی ٹھکانے کو نشانہ بنا کر کم از کم تئیس سعودی ایجنٹوں کو ہلاک اور چالیس سے زائد دیگر کو زخمی کر دیا۔

یمنی فوج اور عوامی رضاکاروں نے جمعے کے روز صوبے تعز کے شہر المخا کے مشرق میں سعودی جارحین کے ٹھکانوں پر حملہ کر کے کئی ٹھکانوں کو تباہ اور ان ٹھکانوں میں موجود سعودی ایجنٹوں کو ہلاک کر دیا۔ یمنی فوج اور عوامی رضاکاروں نے جیزان میں آرامکو کمپنی کو بھی اپنے حملے کا نشانہ بنایا۔

ادھر اطلاعات ہیں کہ سعودی عرب کے جنگی ہیلی کاپٹروں نے المخا اور الزہاری کے علاقوں کو اپنی وحشیانہ جارحیت کا نشانہ بنایا۔

واضح رہے کہ مارچ دو ہزار پندرہ سے اب تک یمن پر سعودی اتحاد کی جارحیت میں گیارہ ہزار سے زا‏ئد عام شہری شہید ہو چکے ہیں۔

یہ ایسی حالت میں ہے کہ دسیوں ہزار زخمی ہو ئے نیز لاکھوں دیگر بے گھر ہوئے ہیں اور سعودی عرب کی جارحیت میں اس ملک کی اسّی فیصد بنیادی تنصیبات تباہ ہو چکی ہیں۔

Leave a Reply

Your email address will not be published. Required fields are marked *

زمرہ جات:  
دیگر ایجنسیوں سے (آراس‌اس ریدر)

دعائے ماہ رجب

- سحر ٹی وی

Fifa World Cup 2017.

- وقت نیوز