یمن : سعودی ہیلی کاپٹر کا صومالی مہاجرین کی کشتی پہ حملہ ،40 ہلاک، متعدد زخمی ہوگئے – مستجاب حیدر

قطر اور سعودی عرب کے درمیان گذشتہ 6 برس سے جاری جنگ کہاں لڑی جا رہی ہے؟

زرداری نواز مڈھ بھیڑ اور بیچاری جمہوریت

بارسلونا میں دہشت گردی، داعش نے حملے کی ذمہ داری قبول کر لی

نوجوان داعش سے منسلک تنظیموں سے بہت زیادہ محتاط رہیں، سربراہ پاک فوج

حزب المجاہدین کو دہشت گرد تنظیم قراردینے پرپاکستان کی مایوسی

مسئلہ کشمیر اور مودی کی سیاست

چوہدری نثار کے پارٹی کے قائم مقام صدر کے انتخاب کے طریقہ کار پر شدید تحفظات

نواز شریف اور ان کے خاندان کو آئندہ سیاست میں نہیں دیکھ رہا: آصف زرداری

ترکی اور ایران کی عراقی کردستان میں ریفرنڈم کی مخالفت

آل شریف کا اقتدار اور پاکستان کی سلامتی کولاحق خطرا ت

 خفیہ ڈیل: کیا ن لیگ آصف زرداری کو صدر بنا رہی ہے؟

ظہران، سعودی عرب میں موجود مذہبی تضادات کا منہ بولتا ثبوت

جماعت الدعوہ کا سیاسی چہرہ

ٹرمپ نے امریکا میں نسل پرستی کی آگ پر تیل چھڑک دیا

چین اور بھارتی افواج میں جھڑپ، سرحد پر شدید کشیدگی

ماڈل ٹاؤن کیس میں شریف برادران کو ہر صورت پھانسی ہو گی: طاہرالقادری

کیا سعودیہ یمن جنگ سے فرار کا رستہ ڈھونڈ رہا ہے؟

نوازشریف کاسفر لاہور

پاکستان میں جاری دہشتگردی کا تعلق نظریے سے نہیں بلکہ پیسوں سے ہے۔ وزیراعلی بلوچستان

سعودی شہزادوں کا غیاب: محمد بن سلمان کامخالفین کو پیغام

یوم آزادی پہ تاریخ کے سیاہ اوراق کیوں پلٹے جارہے ہیں ؟

سعودی عرب کا جنگ یمن میں ناکامی کا اعتراف

سعودی عرب اور عراق کا 27 سال بعد سرحد کھولنے کا فیصلہ

ایران کی ایٹمی معاہدہ ختم کرنے کی دھمکی

وہ غذائیں جن کے کھانے سے کمزور بالوں اور گنج پن سے نجات ملتی ہے

گالی سے نہ گولی سے، مسئلہ کشمیر گلے لگانے سے حل ہو گا: نریندر مودی کا اعتراف

سری لنکن کرکٹ بورڈ نے دورہ پاکستان کی منظوری دیدی

امریکہ میں بحران

70 برس کا پاکستان: قومی شناخت کے بحران سے نکلا جائے

چین اور بھارت: روایتی جنگ سے تجارتی جنگ تک

 منفی سیاسی ہتھکنڈے:  کیا نواز شریف سزا سے بچنے کے لیے  اداروں‌کو دھمکانے کی کوشش کر رہے ہیں؟

بھارت اور پاکستان، جنگ کا میدان نصابی کتب

سعودیہ کے بحیرہ احمر پراجیکٹ میں اسرائیلی کمپنی کی مشارکت

برطانیہ میں پیٹرول، ڈیزل گاڑیوں پر 2040 تک پابندی

این اے 120: چہرہ جو بھی ہو جیت نون لیگ کی ہو گی، ضروری نہیں شریف ہو‘

عراق، سعودی عرب اور ایران کے درمیان کشیدگی ختم کرنے میں کردار ادا کرے: سعودی ولی عہد محمد بن سلمان

بے کس پاکستانی زائرین کی چونکا دینے والی تصاویر بے حس پاکستانی حکومت کی ناکامی کا منہ بولتا ثبوت

نااہلی کا متفقہ فیصلہ یوم آزادی پر ٹھنڈی ہوا کا جھونکا ہے: طاہرالقادری

پاکستان میں یوم آزادی روایتی جوش و جذبے سے منایا گیا

امریکہ کی شمالی کوریا کے بعد وینیزویلا کو بھی دھمکی

آئین میں ترمیم کیلیے مسلم لیگ ن کا ساتھ نہیں دے سکتے: بلاول بھٹو زرداری

حیدر العبادی نے بحرینی وزير خارجہ کی درخواست کی رد کر دی

یمنی بحران کا بحرین میں دوبارہ دہرائے جانے کا انتباہ

خیبرپختونخوا حکومت کے خلاف تحریک عدم اتحاد : پاکستان میں انتقامی سیاست کی واپسی

جی ٹی روڈ ریلی: کیا نواز شریف عالمی طاقتوں کو مداخلت کی دعوت دے رہے ہیں؟

پاکستان کا یومِ آزادی 14 یا15 اگست

اب کوئی این آر او (NRO) نہیں بنے گا: شیخ رشید

ایک اور اقامہ سامنے آگیا

جی ٹی روڈ ڈرامہ سپریم کورٹ اور نیب پر دباؤ ڈالنے کیلئے رچایا گیا: عمران خان

آزادی کے 70 سال، قوم خوشی سے سرشار، ہر طرف قومی پرچموں کی بہار

راولپنڈی: شیخ رشید اور پی ٹی آئی کا جلسہ، بارش کارکنوں کا جوش کم نہ کر سکی

عراق اور شام میں امریکہ دہشت گردوں کا اصلی حامی، صہیونیوں کو پہلے سے سخت شکست ہوگی

شمالی کوریا کی دھمکی کی زد میں امریکی جزیرہ گوام ؟

نوازشریف کواب پارلیمنٹ یاد آرہی ہے، حکومت تھی تواسمبلی نہیں آتے تھے: بلاول بھٹو

تصاویر: شہاب کی بارش

میاں صاحب آپ کو اس لیے نکالا گیا کہ۔۔۔۔

ہر فاطمہ کا کیا یہی نصیب ہوتا ہے ؟ – عامر حسینی

بھارتی سرکاری ہسپتال میں آکسیجن منقطع ،60بچے ہلاک

عراق میں نئی خانہ جنگی کیلئےایک اورہولناک منحوس منصوبہ

اسرائیلی ہسپتالوں میں سعودیوں کا علاج

بے بسوں کے درد کو سمجھنے والی ’مدر ٹریسا‘

جی ٹی روڈ کی سیاست: نواز شریف کے لیے بقا کی جنگ – محمد عامر حسینی

سعودی عرب العوامیہ میں حقوق بشر کی رعایت کرے

میں نے اور پورے پاکستان نے نااہلی کا فیصلہ قبول نہیں کیا: سابق نااہل وزیراعظم

ضیا کو پتہ ہوتا کہ انکا روحانی بیٹا 62 اور63 میں پھنسے گا تو وہ اسے ختم کردیتا: خورشید شاہ

عمران خان کے پی کے میں شیعہ ٹارگٹ کلنک کے اتنے ہی جوابدہ ہیں جتنےدیگر صوبوں میں مسلم لیگ ن کے حکمران: ناصر شیرازی

نواز شریف اداروں کےدرمیان تصادم کی سازش سے باز آجائیں: علامہ ناصر عباس جعفری

کوئٹہ میں پشین اسٹاپ کے قریب دھماکا، 17 افراد شہید

قافلہ برائے تحفظ ناموس نواز شریف

ریلی کا پہلا شہید : شرمناک سوچ

2017-03-20 14:11:35

یمن : سعودی ہیلی کاپٹر کا صومالی مہاجرین کی کشتی پہ حملہ ،40 ہلاک، متعدد زخمی ہوگئے – مستجاب حیدر

17362694_10212656699200764_3568400439547301864_n-768x432-1افریقی ملک صومالیہ کی حکومت نے میڈیا کو بتایا کہ سعودی قیادت میں فوجی اتحاد نے یمن کی بندرگاہ حدیدہ کے قریب صومالی مہاجرین کی ایک کشتی پہ گن شپ ہیلی کاپٹر سے فائرنگ کی اور اس کے نتیجے میں 42 صومالی مہاجرین ہلاک ہوگئے۔صومالی حکومت نے امریکہ اور اس کے اتحادیوں سے اس واقعے کی مکمل تحقیقات کرانے کا مطالبہ کیا ہے۔

کشتی میں درجنوں صومالی پناہ گزین سوار تھے جن میں عورتیں اور بچّے بھی تھے۔مہاجرین کی کشتی حدیدہ بندرگاہ سے 30 میل دور تھی جب اس پہ سعودی اتحادی افواج کے گن شپ ہیلی کاپٹر نے حملہ کردیا۔

سعودی اتحادی فوج یمن میں حوثی قبائل کی مزاحمتی تحریک کو کچلنے کے لئے یمن پہ فضائی حملے جاری رکھے ہوئے ہے اور یمن کے ساحلوں کی ناکہ بندی کررہے تھے۔

صومالیہ کے وزیر خارجہ عبدالسلام عمر نے صومالیہ کے سرکاری ریڈیو سے بات چیت کرتے ہوئے کہا کہ وہاں جو ہوا بہت خوفناک تھا اور معصوم صومالی لوگوں پہ خوفناک مصیبت کا پہاڑ ٹوٹ پڑا ہے۔

صومالی وزیر خارجہ کا کہنا تھا کہ یمن کی (کٹھ پتلی ) حکومت کو اس کی وضاحت دینا پڑے گی، 80 افراد زخمی ہوگئے ہیں اور جو زمہ دار ہیں ان کو انصاف کے کہٹرے تک لانا ہوگا۔

صومالیہ کے وزیراعظم حسن علی خیری نے اپنے بیان میں اس واقعے کی شدید مذمت کرتے ہوئے اسے انتہائی ظالمانہ اقدام قرار دیا۔

یمن میں حوثی قبائل اور ان کے اتحادی سابق صدر صالح عبداللہ نے اس واقعے کی زمہ داری سعودی اتحادی جارح افواج پہ عائد کی ہے۔

یہ افسوناک واقعہ خلیج عدن پہ موجود خطرات کی طرف توجہ دلاتا ہے جوکہ اس وقت “پناہ گزینوں ” کی آمد و رفت کا بڑا راستہ ہے اور یہ افریقہ سے گلف ریاستوں تک پھیلا ہوا ہے اور وار زون یمن سے گزرتا ہے۔

یمن میں اقوام متحدہ کے کمیشن برائے مہاجرین آفس کے سربراہ لارنٹ ڈی بیوک نے کہا کہ ان کا آفس سمجھتا ہے کہ کشتی پہ سوار سب لوگ رجسٹرڈ مہاجر تھے۔

ایک یمنی جوکہ اس حملے سے بچ نکلا کا کہنا ہے کہ پناہ گزین سوڈان پہنچنا چاہتے تھے ،لیکن صومالی وزیرخارجہ کا کہنا ہے مہاجرین کی آخری منزل بہرحال صومالیہ تھی۔
حملے میں بچ گئے الحسن غالب محمد نے کہا کہ کشتی نے راس آراء یمن کے صوبے حدیدہ کے ساحل سے کچھ دور سے روانہ ہوئی اور باب المندب خلیج کے قریب تھی جب حملہ کیا گیا۔

محمد نے بتایا کہ کشتی میں خوف پھیل گیا تھا،مہاجرین نے فلیش لائٹس لہرائیں اور یہ بتانے کی کوشش کی کہ وہ معصوم شہری ہیں۔اس وقت ہیلی کاپٹر نے گولیاں برسانا بند کیں مگر اس وقت تک 40 افراد کی جانیں چلی گئیں تھیں۔

ایک ویڈیو میں صاف دیکھا جاسکتا ہے کہ درجنوں زخمی صومالی مہاجر ایسے تھے جو اپنے اعضاء سے محروم ہوچکے تھے یا ان کے ہاتھ اور ٹانگیں ٹوٹ گئی تھیں۔

سعودی اتحادی وجہ یمن کی حدیدہ بندرگاہ کے اردگرد زبردست بمباری کررہی ہے جہاں اس کے بقول حوثی قبائل چھوٹی کشتیوں کے زریعے اپنے لئے گولہ باردو اور اسلحہ لیکر آتے ہیں۔

سعودی اتحادی فوج نے مارچ 2015ء میں حوثی قبائل اور صالح عبداللہ کی حامی افواج کے زیر کنٹرول علاقوں اور بندرگاہوں پہ حملے شروع کئے جبکہ یمنی ساحلوں کی ناکہ بندی کردی تھی۔سعودی عرب معزول صدر عبد ربہ منصور ہادی کی حکومت کو سپورٹ کررہی ہے جسے مغربی طاقتوں کی حمایت بھی حاصل ہے اور عددی اکثریت کی بنا پہ اسے اقوام متحدہ سے بھی تسلیم کرالیا گیا ہے۔حوثی قبائل اور صالح عبداللہ کی افواج کے زیر کنٹرول اب بھی شمالی یمن کا 99 فیصد حصّہ ہے اور یمن کا دارالحکومت صنعاء بھی ان کے کنٹرول میں ہے۔سعودی اتحادی افواج کے فضائی حملوں سے ابتک دس ہزار لوگ مارے گئے ہیں جن میں اکثر سویلین ہیں۔
جب سے یہ جنگ شروع ہوئی ہے اس وقت سے یمن پہ فضائی اور ساحلی پابندیاں نافذ ہیں۔اور صرف سعودی اتحادی فوج ہی فضائی و بحری حملے کررہی ہے اور انسانی حقوق کی تنظیموں نے ایسے درجنوں حملے رپورٹ کئے ہیں جن کا نشانہ واضح طور پہ شہری اور شہری املاک تھیں۔

 

زمرہ جات:   Horizontal 2 ،
دیگر ایجنسیوں سے (آراس‌اس ریدر)