پاناما کیس فیصلہ: حکمراں جماعت میں قبل از وقت انتخابات پر بحث

حزب المجاہدین کے سربراہ سید صلاح الدین عالمی دہشت گرد قرار

نوازشریف سانحہ پاراچنارپرخاموش کیوں ہیں؟

بیعت سے انکار کی خبر نشر کرنے پر سعودی حکومت نے ٹی وی چینل بند کردیا

ڈونلڈ ٹرمپ کا سفری پابندیوں کا حکم نامہ جزوی طور پر بحال

پاراچنار میں دہشت گردوں کے بم دھماکے میں شہداء کی تعداد 72 تک پہنچ گئی

نیشنل ایکشن پلان میں وفاق کی غیر سنجیدگی تازہ دہشتگردی کا سبب ہے: وزیراعلیٰ سندھ

پانامہ کیس:‌کیا کیپٹن صفدر نواز شریف کے خلاف وعدہ معاف گواہ بن جائیں گے؟

ہمارے دماغ میں بسی داعش

میں 2 سال سے بول رہا تھا ملک میں داعش موجود ہے، رحمان ملک

ایران کا قطر کی بھرپور حمایت کا اعلان

عیدالفطر آج مذہبی جوش وجذبے کے ساتھ منائی جائے گی

حضرت آیت اللہ سیستانی کے دفتر سے جاری اعلان کے مطابق برطانیہ میں یکم شوال بروز سوموار کو ہوگی

تصاویر : بہاولپور میں قیامتِ صغریٰ کے مناظر

قطر نے آل سعود کے تمام تر مطالبات مسترد کردیے

تسنیم نیوز : بات صرف آرمی چیف سے یا نواز شریف سے؛ ورنہ دھرنا جاری + تصاویر

مسئلہ فلسطین ، آغاز سے اب تک ~ نذر حافی

تصاویر: الوداع الوداع ماہِ رمضان، لوگ عبادتِ پروردگار میں مگن

قطر یا سعودی عرب، امریکا یا روس؟ پاکستان کس کس کو راضی کرے گا

 اتحادی حیثیت ختم کرنےکیلئےامریکی بل: پاکستان کے پاس امریکی چنگل سے نکلنے کا سنہرا موقع

دنیا اس بات کو تسلیم کرے کہ پاکستان دہشت گردی کےخلاف فرنٹ لائن کا کردار ادا کر رہا ہے، چینی وزارت خارجہ

بہاولپور: آئل ٹینکر میں آتشزدگی، 135افراد ہلاک

امریکہ افغانستان میں داعش کو مسلح کر رہا ہے: روس

محمد بن سلمان کو ولی عہد بنائے جانے پر سعودی شہزادوں کی مخالفت

مسجد الحرام میں حملے کا منصوبہ ناکام، خودکش حملہ آور ہلاک

پاراچناردھماکے: شہادتیں 67 ہو گئیں

قطر نے عرب ممالک کے مطالبات کو ’غیر حقیقی‘ قرار دیا

پاکستان کا نان نیٹو اتحادی درجہ ختم کرنے کیلئے امریکی کانگریس میں بل پیش

سعودی عرب میں ایران پر جنگ مسلط کرنے کی ہمت نہیں: سید حسن نصر اللہ

سعودی خاندان میں مخملی بغاوت؛ سعودیہ کے جوان ولی عہد کیسے تختِ ولی عہدی تک پہنچ گئے

نواز شریف کی جھوٹی ثالثی: سعودی سفیر نے نواز شریف کے جھوٹ کا پول کھول دیا

ایک اور خون سے رنگی عید: پاکستانی قوم نوحہ خواں

عراق کی تقسیم اسرائیل کا اہم ترین ایجنڈا ہے ، ایران

سعودیہ: مسجد الحرام میں حملے کا منصوبہ ناکام بنانے کا دعویٰ

عالمی یوم القدس کے موقع پر قبلہ اول کی آزادی کے لیے ملی یکجہتی کونسل کی مشترکہ ریلی کا انعقاد

قطر میں فوجی اڈے ختم کئے جانے کی درخواست ترکی کے امور میں مداخلت ہے : ترکی

نہایت اطمینان کے ساتھ کہہ سکتے ہیں کہ بغدادی مارا گیا ہے: روس

پارا چنار: 2 بم دھماکے، 30 افراد شہید، 100 زخمی

عرب ریاستوں نے تنازع ختم کرنے کیلئے قطر سے 13 مطالبات کردیے

کیا سرفراز نے شاہ رخ خان کو بھی شکست دیدی؟

تصاویر: تہران میں یوم قدس کے موقع پر عظیم ریلی

مسئلہ فلسطین دنیائے اسلام کا سب سے پہلا اور اہم مسئلہ ہے

کوئٹہ: بم دھماکے میں 15 افراد جاں بحق

 اسلامی ممالک کی تقسیم کا منصوبہ: کیا نئے سعودی ولی عہد کی تعیناتی کے احکامات واشنگٹن سے آئے؟

 چوروں کا گٹھ جوڑ: کیا پی پی پی اور نواز لیگ کے مابین پانامہ لیکس پر خفیہ ڈیل طے پا گئی ہے؟

جرمنی جلد ہی اسلامی ریاست بن جائے گا، جرمن چانسلر انجیلا مرکل کا بیان ، دنیا بھر میں کھلبلی

دہشت گرد تنظیم داعش کو بارودی مواد فراہم کرنے والا بھارت دوسرا بڑا ملک ہے، یورپی رپورٹ

محمد بن سلمان کی ولی عہدی اسرائیل کے لئے نیک شگون ہے

جامع مسجد النوری کی شہادت داعش کا اعتراف شکست ہے

چاند یا مریخ کا رخ نہ کیا تو 30 سال میں انسانی آبادی ختم: سٹیفن ہاکنگ

اسرائیل، مسلم امۃ کا حقیقی دشمن ہے: تحریک انصار اللہ

سعودی عرب میں اقتدار کی رسہ کشی

کلبھوشن یادیو نے آرمی چیف سے رحم کی اپیل کردی

اگر بیت المقدس کی آزادی سعودی اتحاد کے ایجنڈے میں شامل نہیں تو آرمی چیف راحیل شریف کو فوری واپس بلائیں : علامہ راجہ ناصرعباس

سعودی عرب علاقائی و عالمی دہشتگردی کا اہم اسپانسر ہے: پروفیسر آئیرش یونیورسٹی

پاکستان ڈرون حملے برداشت نہیں کرے گا

پاک ایران گیس منصوبہ 2 سال میں مکمل ہوجائے گا: آصف درانی

جنگل میں منگل: تاریخ رقم ، پیسہ ہضم

جنگی جنون میں مبتلا شہزادہ ولی عہد مقرر:  مشرق وسطی کو جنگ میں دھکیلنے کا سعودی منصوبہ

وہابیت بمقابلہ اخوان المسلمین / قطر کے بحران میں اہلسنت کا پرانا زخم تازہ

داعش کے مفتی اعظم کی ہلاکت کی تصدیق

حامد کرزئی نے سعودیہ کا دل توڑ دیا

وہابی دہشت گردوں نے موصل کی نوری مسجد کو شہید کردیا

زکوۃ کے احکام

قطر کا پابندیوں کی صورت میں سعودی عرب سے مذاکرات نہ کرنے کا اعلان

سعودی عرب میں ولی عہد کے خلاف بغاوت + تصویر اور ویڈیو کلیپ

راحیل شریف ذاتی حیثیت میں نام نہاد اسلامی فوجی اتحاد کی سربراہی کیلیے گئے، سرتاج عزیز

سعودی عرب کے نئے ولیعہد کا ایران کے خلاف اعلان جنگ

محمد بن نائف برطرف: سعودی عرب کے ڈکٹیٹر بادشاہ نے ولی عہد کو برطرف کرکے اپنے بیٹے کو ولی عہد بنادیا

سخت پالیسی کا عندیہ: ٹرمپ انتظامیہ پاکستان پر برہم کیوں؟

قدس کا عالمی دن، صہیونیوں کی آنکھ میں چھبتا ہوا کانٹا

2017-04-19 11:55:53

پاناما کیس فیصلہ: حکمراں جماعت میں قبل از وقت انتخابات پر بحث

 

Pakistani Prime Minister Nawaz Sharif attends the closing session of 18th South Asian Association for Regional Cooperation (SAARC) summit in Kathmandu November 27, 2014. A brief meeting between India's Prime Minister Narendra Modi and his Pakistani counterpart appears to have salvaged a summit of South Asian leaders, with all eight countries clinching a last-minute deal to create a regional electricity grid.  REUTERS/Niranjan Shrestha/Pool (NEPAL - Tags: POLITICS) - RTR4FUCN

سپریم کورٹ کی جانب سے پاناما کیس کا فیصلہ جمعرات (20 اپریل) کو سنانے کے اعلان کے ساتھ ہی حکمران جماعت مسلم لیگ نواز نے مخالف فیصلہ آنے کی صورت میں قبل از انتخابات کرانے پر غور شروع کردیا جبکہ پاکستان تحریک انصاف (پی ٹی آئی) کو وزیراعظم کی نااہلی کی توقعات ہیں۔

ڈان سے گفتگو کرتے ہوئے پاکستان مسلم لیگ نواز کے اندرونی ذرائع نے کہا کہ ‘اعلیٰ عدالت کے فیصلے سے وزیراعظم نوازشریف پر اثر پڑنے کی صورت میں رواں سال قبل از انتخابات کے حوالے سے قیادت بحث کررہی ہے’۔

ان کا کہنا تھا کہ مخالف فیصلے کی صورت میں پارٹی کے اندر دو نقطہ نطر پائے جاتے ہیں جس میں پہلا یہ ہے کہ قبل ازانتخابات کی طرف جایا جائے تاکہ پی ٹی آئی صورت حال کو خراب نہ کرسکے، اس نقطہ نظر کے حامیوں کا خیال ہے کہ پارٹی موجودہ پوزیشن کو اگلے انتخابات میں باآسانی برقرار رکھ سکتی ہے۔

پاکستان مسلم لیگ نواز کا دوسرا گروپ قبل از انتخابات کا مخالف ہے، کہتے ہیں کہ ‘فیصلہ جو بھی آئے ہمیں اپنی مدت پوری کرنی چاہیے اور پارٹی کو وزیراعظم نواز شریف کی تبدیلی کی طرف جانا چاہیے کیونکہ قبل ازانتخابات کا فیصلہ بہتر نہیں ہوگا’۔

انھوں نے کہا کہ پارٹی کی اعلیٰ قیادت پارٹی کے سرکردہ رہنماؤں کے خیالات پر غور کررہی ہے۔

وزیراعلیٰ پنجاب میاں شہباز شریف کے قریبی ساتھی صوبائی وزیر قانون رانا ثنااللہ کا کہنا تھا کہ وزیراعظم کا نام پاناما کیس میں شامل نہیں ہے اور ان کے خلاف کسی غلط کام کے کوئی ثبوت نہیں ہیں اس لیے پارٹی پرامید ہے کہ فیصلے سے وزیراعظم پر کوئی اثر نہیں پڑے گا۔

رانا ثنااللہ نے ڈان کو بتایا کہ ‘تاہم اگر فیصلے سے وزیراعظم پر کوئی اثر پڑتا ہے تو میں شیڈول کے مطابق 2018 میں انتخابات کے حق میں ہوں’۔

ان کا کہنا تھا کہ وزیراعظم ہاؤس سے باہر بیٹھ کر نواز شریف ‘ہزار گنا مزید طاقت ور’ ہوں گے، ‘نواز شریف لوگوں کے دلوں میں حکمرانی کررہے ہیں جبکہ 2018 کے انتخابات میں عمران خان کی جیت کا کوئی امکان نہیں ہے’۔

دوسری جانب پاکستان مسلم لیگ نواز کے اراکین اسمبلی نے لاہور شہر میں وزیراعظم نواز شریف کے حق میں بینرز آویزاں کردیے ہیں۔

خواجہ سعد رفیق، یاسین سہیل اور میاں نصیر احمد نے ‘قائد تیرا ایک اشارہ، حاضر لہو ہمارا’ جیسے الفاظ کا چناؤ کیا ہے۔

پاکستان مسلم لیگ کے مختلف رہنما چاہتے ہیں کہ عدالت ان کے قائد کو پناما کیس میں کلین چٹ دے اور اگر ان کے قائد کے خلاف فیصلہ دیا تو لوگ اس کو قبول نہیں کریں گے۔

پاکستان مسلم لیگ نواز کے ایک عہدیدار نے ڈان کوبتایا کہ ان کی پارٹی پناماکیس میں پی ٹی آئی کو فائدہ اٹھانے کا موقع نہیں دے گی، ‘گوکہ اس وقت ہم خاموش ہیں، ہمارے پاس پاناما کیس کے فیصلے کے بعد نمٹنے کے لیے منصوبے ہیں’۔

دوسری جانب پاناماکیس کی مرکزی پارٹی پی ٹی آئی کا کہنا تھا کہ وہ پرجوش ہیں اور پرامید ہیں کہ جمعرات کو وزیراعظم نواز شریف کو گھر بھیج دیا جائے گا۔

ڈان سے گفتگو کرتے ہوئے پی ٹی آئی کے سیکرٹری جنرل جہانگیر ترین نے کہا کہ ‘عدالت میں پیش کئے گئے ثبوتوں کی بنیاد پر ہمیں وزیراعظم نواز شریف کی نااہلی کی توقع ہے’۔

ان کا کہنا تھا کہ سوائے قطری شہزادے کے خط کے وزیراعظم کے اہل خانہ عدالت میں ان کے بچوں کی آف شور کمپنیوں کے انکشاف کے حوالے سے کوئی معقول ثبوت پیش نہیں کرسکے گوکہ اس کی بھی کوئی قانونی حیثیت نہیں ہے۔

جہانگیر ترین کا کہنا تھا کہ ‘اعلیٰ عدالت کے احکامات کی روشنی میں حدیبیہ منی لاؤنڈرنگ کیس دوبارہ کھلے گا’ جبکہ پی ٹی آئی فیصلے کے بعد عوامی اجتماعات اور ریلیوں کا سلسلہ بھی شروع کرسکتی ہے۔

انھوں نے کہا کہ ‘پارٹی قیادت پاناما کے فیصلے کے بعد اپنی حکمت علمی طے کرنے کے لیے بدھ کو ایک اہم ملاقات کررہی ہے’ ان کا مزید کہنا تھا کہ فیصلے سے ملکی سیاست پر اثرپڑے گا۔

جماعت اسلامی کے امیر سراج الحق کا کہنا تھا کہ پاناما کیس کے فیصلے سے ملک میں ‘بڑی تبدیلی’ آئے گی۔

ان کا کہنا تھا کہ ‘اس بات کی امید ہے کہ فیصلے سے کرپٹ نظام سے نجات میں مدد ملے گی اور 20 اپریل کو اعلیٰ عدالت کے تاریخی فیصلے کے طور پر یاد رکھا جائے گا’۔

زمرہ جات:   Horizontal 1 ،
دیگر ایجنسیوں سے (آراس‌اس ریدر)

یادوں کے جھروکے

- سحر نیوز