پاناما کیس فیصلہ: حکمراں جماعت میں قبل از وقت انتخابات پر بحث

سعودی ولی عہد کو اسرائیل کے دورے کی دعوت

آل خلیفہ اسرائيل کے ساتھ تعلقات مضبوط بنا کر تاریخ کے کوڑے دان میں دفن ہوجائیں گے

شام میں امریکی فوج کی موجودگی غیر قانونی ہے: روس

مسئلہ فلسطین: اتحاد یا پھر اپنی باری کا انتظار

کراچی : پی ایس 128 میں کالعدم جماعت کی الیکشن مہم، سیکورٹی ادارے خاموش

بھارتی ایجنسی ’’را‘‘ کا افغان لڑکیوں کو پاکستان مین دہشتگردی کہ لیے ٹریننگ دینے کا انکشاف

اسرائیل کے قیام پر علامہ اقبال کا بیان

حضرت امام مہدی(عج) کی حوائج کےحصول کے لیےنصیحت

او آئی سی کا ہنگامی اجلاس: مقبوضہ بیت المقدس کو فلسطینی دارالحکومت تسلیم کرنے کا مطالبہ

ناقابل قبول عدالتی فیصلہ

پاکستان اور شمالی کوریا جیسے ممالک کے ساتھ کام کرنا پر لطف نہیں: امریکی وزیر خارجہ

پاکستان کیلیے امریکی امداد دہشت گردوں کے خلاف مؤثر کارروائی سے مشروط

لگتا نہیں اسمبلیاں مدت پوری کریں گی، ایاز صادق

مذہبی جماعتوں کا ایم ایم اے کی بحالی کا اعلان

ایران کا بیت المقدس کے دفاع کے لئے اسلامی ممالک سے تعاون پر آمادگی کا اظہار

شام میں کردوں، امریکیوں اور داعشیوں کے درمیان تین سمجھوتوں کا راز

یمن میں 8 ملین افراد شدید قحط کا شکار

ٰیروشلم : پہلے مسلمان خود تو اتحاد کر لیں

القدس سے متعلق امریکی اعلان پراوآئی سی کا ہنگامی اجلاس

فلسطینی امن عمل میں امریکا کا کردار ختم ہوگیا: خواجہ آصف

پاکستان میں دہشت گردی کے خلاف اقدامات

سعودی سلطنت کا مستقبل

ترکی اور روس نے مقبوضہ القدس سے متعلق امریکی اعلان خطرناک قراردے دیا

ملک میں جمہوریت کا اونٹ کس کروٹ بیٹھے گا

پانچ استعفوں پر حکومت گرانے کا خواب

مقام شہادت ایک درجہ کمال ہے، ان کو نصیب ہوتا جو معرفت الہی کے راہی ہوتے ہیں: علامہ امین شہیدی

او آئی سی کا غیر معمولی اجلاس، وزیر اعظم ترکی پہنچ گئے

ایران اور پاکستان کے درمیان ثقافتی میدانوں میں تعلقات کو فروغ دینے پر تاکید

ایران اور برطانیہ کے تعلقات میں نئے دور کا آغاز

بعض لوگ میری پشت میں خنجر گھونپنا چاہتے تھے

بیت المقدس اور فلسطینی پناہ گزینوں کی واپسی کے مسئلہ کو فراموش کردیں

ہماری نگاہیں قدس کی جانب ہیں اور قدس کی نگاہیں سید مقاومت کی طرف

سعودی نواز پاکستانی اینکر کا بیت المقدس کو اسرائیلی دارالحکومت بنانے کے فیصلے کا دفاع

پاکستانی عدالتیں فوجی حکومتوں کی باقیات ہیں

ٹرمپ نے سعودیہ، مصر اور امارات کے مشورے کے بعد بیت المقدس کو اسرائیل کا دارالحکومت تسلیم کیا

مسلم عسکری اتحاد اپنی پوزیشن واضح کرے کہ یہ اتحاد کیوں اور کس لئے بنایاگیا،17دسمبر کو ملین مارچ ہوگا امیر جماعت اسلامی

نماز تمام انسانی کمالات کو حاصل کرنے کا وسیلہ ہے

برسلز بیت المقدس کو اسرائیل کا دارالحکومت تسلیم نہیں کرتا: موگرینی

ٹرمپ کا اقدام بعض عرب ملکوں کی سازش کا نتیجہ

ٹرمپ کا فیصلہ اسرائیل کی نابودی کا پیش خیمہ ثابت ہوگا

عراق میں داعش کے خلاف کامیابی پر نجف میں کانفرنس

یمن پر سعودی جارحیت بند کی جائے، اقوام متحدہ

سعودی عرب کا سینما ہالوں پر عائد پابندی اٹھانے کا اعلان

امریکی سینیٹروں کی جانب سے ٹرمپ کے استعفے کا مطالبہ

مدینہ میں مسجدِ نبوی کے قریب خود کش حملہ: سعودی تاریخ کے بھیانک پہلو

عالم اسلام میں صرف شیعہ ہی مسئلہ فلسطین کو زندہ رکھےہوئے ہیں، شہزاد چوہدری

یہ ٹرمپ نہیں بول رہا بلکہ ڈھول بول رہے ہیں !!!

لمحہ فکریہ! بیت المقدس تنازعہ پر ساری دنیا سراپائے احتجاج،سعودی عرب میں احتجاج پر پابندی!

امریکہ استکباری ایجنڈے پر عمل پیرا ہوکر عالمی امن کو تباہ کرنا چاہتا ہے، سبطین سبزواری

مخالف زیرو اور حکومت قاتل: فیصلہ کیسے ہو

ٹرمپ کے خلاف امریکہ میں بھی مظاہرے

امریکی مسلمان لڑکی، حجاب کی وجہ سے ملازمت سے محروم

بیت المقدس اسرائیل کی غاصب اور بچوں کی قاتل حکومت کو ہر گز نہیں دیں گے: ترکی

بیت المقدس کے بارے میں امریکی سازش برداشت نہیں کریں گے: ایران

پوپ تھیوڈورس نے امریکی نائب صدر سے ملاقات منسوخ کردی

امریکہ مقبوضہ بیت المقدس کو اسرائیل کا دارالحکومت تسلیم کرنے کا فیصلہ واپس لے: عرب لیگ

مضبوط حکومت، ناکام ریاست

(ن) لیگ کی سیاست پہلے دن سے ہی منافقت پر مبنی ہے: اعتزازاحسن

(ن) لیگ کو دھچکا، 5 ارکان اسمبلی نے استعفیٰ دے دیا

ٹرمپ بمقابلہ عالم اسلام

یمن میں علی صالح کی موت کے بعد سعودی عرب کی حکمت عملی کیا ہوگی؟

ٹرمپ نے اپنے ہاتھوں سے اسرائیل کے منصوبے خاک میں ملا دیئے

یروشلم کے معاملے پر سعودی عرب کا 'حقیقی مؤقف' کیا ہے؟

ٹرمپ نے بیت المقدس کے خلاف فیصلہ دے کر دنیائے اسلام کی غیرت ایمانی کو للکارا ہے، علامہ مقصود ڈومکی

تصاویر: سعودی عرب کے علاوہ پورے عالم اسلام میں امریکہ کے خلاف مظاہرے

ٹرمپ نے سعودیہ، مصر اور امارات کے مشورے کے بعد بیت المقدس کو اسرائيل کا دارالحکومت تسلیم کیا

سعودی عرب کی امریکی صدر کے فیصلے کو ماننے کے لئے محمود عباس کو 100 ملین ڈالر کی رشوت کا پردہ فاش

عراق کے وزیراعظم نے ملک سے داعش کے خاتمہ کا اعلان کردیا

بیت المقدس کے یہودی ہونے کی حسرت صہیونیوں کےدل میں ہی رہ جائے گی

فلسطین کا مسئلہ نعرے بازی سے حل نہیں ہو گا

2017-04-19 11:55:53

پاناما کیس فیصلہ: حکمراں جماعت میں قبل از وقت انتخابات پر بحث

 

Pakistani Prime Minister Nawaz Sharif attends the closing session of 18th South Asian Association for Regional Cooperation (SAARC) summit in Kathmandu November 27, 2014. A brief meeting between India's Prime Minister Narendra Modi and his Pakistani counterpart appears to have salvaged a summit of South Asian leaders, with all eight countries clinching a last-minute deal to create a regional electricity grid.  REUTERS/Niranjan Shrestha/Pool (NEPAL - Tags: POLITICS) - RTR4FUCN

سپریم کورٹ کی جانب سے پاناما کیس کا فیصلہ جمعرات (20 اپریل) کو سنانے کے اعلان کے ساتھ ہی حکمران جماعت مسلم لیگ نواز نے مخالف فیصلہ آنے کی صورت میں قبل از انتخابات کرانے پر غور شروع کردیا جبکہ پاکستان تحریک انصاف (پی ٹی آئی) کو وزیراعظم کی نااہلی کی توقعات ہیں۔

ڈان سے گفتگو کرتے ہوئے پاکستان مسلم لیگ نواز کے اندرونی ذرائع نے کہا کہ ‘اعلیٰ عدالت کے فیصلے سے وزیراعظم نوازشریف پر اثر پڑنے کی صورت میں رواں سال قبل از انتخابات کے حوالے سے قیادت بحث کررہی ہے’۔

ان کا کہنا تھا کہ مخالف فیصلے کی صورت میں پارٹی کے اندر دو نقطہ نطر پائے جاتے ہیں جس میں پہلا یہ ہے کہ قبل ازانتخابات کی طرف جایا جائے تاکہ پی ٹی آئی صورت حال کو خراب نہ کرسکے، اس نقطہ نظر کے حامیوں کا خیال ہے کہ پارٹی موجودہ پوزیشن کو اگلے انتخابات میں باآسانی برقرار رکھ سکتی ہے۔

پاکستان مسلم لیگ نواز کا دوسرا گروپ قبل از انتخابات کا مخالف ہے، کہتے ہیں کہ ‘فیصلہ جو بھی آئے ہمیں اپنی مدت پوری کرنی چاہیے اور پارٹی کو وزیراعظم نواز شریف کی تبدیلی کی طرف جانا چاہیے کیونکہ قبل ازانتخابات کا فیصلہ بہتر نہیں ہوگا’۔

انھوں نے کہا کہ پارٹی کی اعلیٰ قیادت پارٹی کے سرکردہ رہنماؤں کے خیالات پر غور کررہی ہے۔

وزیراعلیٰ پنجاب میاں شہباز شریف کے قریبی ساتھی صوبائی وزیر قانون رانا ثنااللہ کا کہنا تھا کہ وزیراعظم کا نام پاناما کیس میں شامل نہیں ہے اور ان کے خلاف کسی غلط کام کے کوئی ثبوت نہیں ہیں اس لیے پارٹی پرامید ہے کہ فیصلے سے وزیراعظم پر کوئی اثر نہیں پڑے گا۔

رانا ثنااللہ نے ڈان کو بتایا کہ ‘تاہم اگر فیصلے سے وزیراعظم پر کوئی اثر پڑتا ہے تو میں شیڈول کے مطابق 2018 میں انتخابات کے حق میں ہوں’۔

ان کا کہنا تھا کہ وزیراعظم ہاؤس سے باہر بیٹھ کر نواز شریف ‘ہزار گنا مزید طاقت ور’ ہوں گے، ‘نواز شریف لوگوں کے دلوں میں حکمرانی کررہے ہیں جبکہ 2018 کے انتخابات میں عمران خان کی جیت کا کوئی امکان نہیں ہے’۔

دوسری جانب پاکستان مسلم لیگ نواز کے اراکین اسمبلی نے لاہور شہر میں وزیراعظم نواز شریف کے حق میں بینرز آویزاں کردیے ہیں۔

خواجہ سعد رفیق، یاسین سہیل اور میاں نصیر احمد نے ‘قائد تیرا ایک اشارہ، حاضر لہو ہمارا’ جیسے الفاظ کا چناؤ کیا ہے۔

پاکستان مسلم لیگ کے مختلف رہنما چاہتے ہیں کہ عدالت ان کے قائد کو پناما کیس میں کلین چٹ دے اور اگر ان کے قائد کے خلاف فیصلہ دیا تو لوگ اس کو قبول نہیں کریں گے۔

پاکستان مسلم لیگ نواز کے ایک عہدیدار نے ڈان کوبتایا کہ ان کی پارٹی پناماکیس میں پی ٹی آئی کو فائدہ اٹھانے کا موقع نہیں دے گی، ‘گوکہ اس وقت ہم خاموش ہیں، ہمارے پاس پاناما کیس کے فیصلے کے بعد نمٹنے کے لیے منصوبے ہیں’۔

دوسری جانب پاناماکیس کی مرکزی پارٹی پی ٹی آئی کا کہنا تھا کہ وہ پرجوش ہیں اور پرامید ہیں کہ جمعرات کو وزیراعظم نواز شریف کو گھر بھیج دیا جائے گا۔

ڈان سے گفتگو کرتے ہوئے پی ٹی آئی کے سیکرٹری جنرل جہانگیر ترین نے کہا کہ ‘عدالت میں پیش کئے گئے ثبوتوں کی بنیاد پر ہمیں وزیراعظم نواز شریف کی نااہلی کی توقع ہے’۔

ان کا کہنا تھا کہ سوائے قطری شہزادے کے خط کے وزیراعظم کے اہل خانہ عدالت میں ان کے بچوں کی آف شور کمپنیوں کے انکشاف کے حوالے سے کوئی معقول ثبوت پیش نہیں کرسکے گوکہ اس کی بھی کوئی قانونی حیثیت نہیں ہے۔

جہانگیر ترین کا کہنا تھا کہ ‘اعلیٰ عدالت کے احکامات کی روشنی میں حدیبیہ منی لاؤنڈرنگ کیس دوبارہ کھلے گا’ جبکہ پی ٹی آئی فیصلے کے بعد عوامی اجتماعات اور ریلیوں کا سلسلہ بھی شروع کرسکتی ہے۔

انھوں نے کہا کہ ‘پارٹی قیادت پاناما کے فیصلے کے بعد اپنی حکمت علمی طے کرنے کے لیے بدھ کو ایک اہم ملاقات کررہی ہے’ ان کا مزید کہنا تھا کہ فیصلے سے ملکی سیاست پر اثرپڑے گا۔

جماعت اسلامی کے امیر سراج الحق کا کہنا تھا کہ پاناما کیس کے فیصلے سے ملک میں ‘بڑی تبدیلی’ آئے گی۔

ان کا کہنا تھا کہ ‘اس بات کی امید ہے کہ فیصلے سے کرپٹ نظام سے نجات میں مدد ملے گی اور 20 اپریل کو اعلیٰ عدالت کے تاریخی فیصلے کے طور پر یاد رکھا جائے گا’۔

زمرہ جات:   Horizontal 1 ،
دیگر ایجنسیوں سے (آراس‌اس ریدر)

آثار قدیمہ کی بربادی

- ایکسپریس نیوز

عنوان کے بغیر

- اسلام ٹائمز

ایرانی مشاہیر

- سحر ٹی وی

یادوں کے جھروکے

- سحر ٹی وی