پارا چنار کا مسئلہ فرقہ واریت نہیں، زمینوں پر قبضہ ہے، علامہ عابد الحسینی

اسرائیل، شام میں ایران کی موجودگی کو اپنے لئے خطرہ سمجھتا ہے؛ گوٹرش

اسمارٹ فون سے اب ڈیسک ٹاپ میں تصاویر منتقل کرنا آسان ہو گیا

نیب نے خادم پنجاب روڈ پروگرام اور میٹروبس میں کرپشن کی تحقیقات شروع کردیں

ایران کا مسافر بردار طیارہ گر کر تباہ، 66 مسافر سوار تھے

بھارتی اور داعشی کے خطرات میں پاک فوج کی سعودیہ عرب میں تعیناتی خلاف عقل ہے

عوام سے ووٹ لے کر آنا قانون سے بالاتر نہیں بنادیتا، عمران خان

حضرت فاطمہ زہرا (س) کی شہادت

آصف زرداری کا راؤ انوار سے متعلق اپنے بیان پر اظہارِ افسوس

توہین مذہب کا جھوٹا الزام لگانے پر سخت سزا کی تجویز

عمران کو سزا پاکستان کے عدالتی نظام پر سوالیہ نشان ہے

ڈونلڈ ٹرمپ نے جنرل باجوہ کو مشرف تصور کر کے غلطی کی: برطانوی تھنک ٹینک

فخر سے کہہ سکتے ہیں پاکستانی سرزمین پر دہشتگردوں کا کوئی منظم کیمپ موجود نہیں، پاک آرمی چیف

نائیجیریا میں یکے بعد دیگرے 3 خودکش حملوں میں 22 افراد ہلاک

سعودیہ میں فوجی دستوں کی تعیناتی

ایران اور ہندوستان نے باہمی تعاون کے 15 معاہدوں اور دستاویزات پر دستخط کردیئے

پاکستانی فوجیوں کو سعودی عرب کے زمینی دفاع کو مضبوط کرنے کیلئے بھیجا گیا ہے، خرم دستگیر

17 امریکی سیکیورٹی سروسز کا پاکستانی ایٹمی پروگرام سے اظہارِ خوف

شام سے برطانیہ کے 100 دہشت گردوں کی واپسی کا خدشہ

آرام سے کھانا کھائیے، موٹاپے سے محفوظ رہیے

علامہ سید ساجد علی نقوی کا شہدائے سیہون شریف کی پہلی برسی سے خطاب

زینب کے گھر والوں کا مجرم کو سرِعام پھانسی دینے کا مطالبہ

زینب کے قاتل عمران علی کو 4 بار سزائے موت کا حکم

کرپشن الزامات کے حوالے سے اسرائیلی وزیر اعظم سے مستعفی ہونے کا مطالبہ زور پکڑ گیا

پاکستان کی 98 فیصد خواتین کو طبی و تعلیمی سہولیات میسر نہیں

شیعہ حریت لیڈر یوسف ندیم کی ہلاکت قتل ناحق ہے، بار ایسوسی ایشن

پاکستانی سینیٹ کا فوجی دستہ سعودی عرب بھیجنے پر تشویش کا اظہار

اسرائیل میں وزیراعظم نتین یاہو کے خلاف ہزاروں افراد کا مظاہرہ

سعودی علماء کونسل : عرب خواتین کے لئے چادر اوڑھنا ضروری نہیں ہے

صدر روحانی کا حیدر آباد کی تاریخی مسجد میں خطاب

افغانستان میں داعش کا بڑھتا ہوا اثر و رسوخ ایشیا کے امن کے لئے خطرے کی گھنٹی ہے

آیت اللہ زکزی کی رہائی کا مطالبہ

فاروق ستار کا اپنے سینیٹ امیدواروں کے ناموں سے دستبرداری کا اعلان

بن سلمان کا سعودی عرب؛ حرام سے حلال تک

پاکستان کی دہشت گردی کے معاملات میں کوتاہیوں پر تشویش ہے، امریکہ

اسلام آباد دھرنوں اور احتجاج پر خزانے سے 95 کروڑ روپے خرچ ہوئے، انکشاف

نقیب قتل کیس؛ راؤ انوار کو گرفتار نہ کرنے کا حکم واپس، بینک اکانٹس منجمد

مغربی موصل کو بارودی مواد سے صاف کرنے کے لئے دس سال درکار ہیں؛ اقوام متحدہ

جو شخص یقین کی منزل پر فائز ہوتا ہے وہ گناہ نہیں کرتا ہے

عالمی دباؤ کا مقابلہ داخلی ہم آہنگی سے کیا جائے

تعاون اور اعتماد سازی

عدالت جواب دے یا سزا ۔ فیصلہ چیف جسٹس کو کرنا ہے

میں نہیں مان سکتا کوئی ڈکیت پارٹی صدر بن کر حکومت کرے، چیف جسٹس

انسانی حقوق کے عالمی چیمپئن کے دعویدار مسئلہ کشمیر و فلسطین پر خاموش کیوں ہیں

ایران کی ترکی کو ایک نرم دھمکی

معاشرہ، امربالمعروف ونہی عن المنکرسے زندہ ہوتا ہے

یمن پر سعودی جنگی طیاروں کے حملے جاری

ریڑھ کی ہڈی کا پانی کیا ہےاور یہ کیوں نکالا جاتا ہے؟

زینب قتل کیس کا فیصلہ محفوظ، ہفتے کو سنایا جائے گا

جنوبی ایشیا میں امن کی تباہی کا ذمہ دار بھارت ہے: وزیر دفاع

لودھراں الیکشن ہارنے کی وجہ ہمارے لوگوں کی (ن) لیگ میں شمولیت ہے: عمران خان

شام میں اسرائیل اور ایران کے مابین ایک علاقائی جنگ کے واقع ہونے کی علامتیں

بیلجیئم کی حکومت کا سعودی عرب کی تعمیر کردہ جامع مسجد کو اپنی تحویل میں لینے کا مطالبہ

حضرت زہرا(س) کی شہادت سےمربوط واقعات کا تجزیہ وتحلیل

امام زمانہ(عج) کی عالمی حکومت میں انبیاء کا کردار

بن سلمان کا سعودی عرب؛ حرام سے حلال تک

ٹرمپ: نئی جوہری دوڑ اور جنوبی ایشیا

نقیب قتل کیس؛ چیف جسٹس پاکستان کا راؤ انوار کو گرفتار نہ کرنے کا حکم

پاکستان نے اپنے علاقوں سے دہشتگردوں کی پناہ گاہیں ختم کردی ہیں، آرمی چیف

پوری نیند اور مناسب پانی سے جھریوں کا بہترین علاج

امریکہ کو داعش کا ڈرامہ اور تماشا اب ختم کرنا چاہیے

ایران میں شیعہ اور سنی سخت ترین شرائط میں ایک دوسرے کے ساتھ رہے ہیں

ایران سے جنگ نہیں چاہتے: اسرائیل کی روس سے مدد کی اپیل

مودی اسرائیل کا چپراسی

مشرق وسطیٰ ، متحدہ عرب امارات میں پہلے ہندو مندرکی تعمیر کا افتتاح

فوجی کیمپ پر حملہ: بھارت کی پاکستان کو خطرناک نتائج کی دھمکی

حزب اللہ بدستور طاقتور رہے گی: امریکی تجزیہ کار

دہشت گردوں کے ساتھ پاکستان کے تعلقات ہر سطح پر ختم کئے جائیں

کامیاب لوگ اور قومیں اپنی ناکامیوں سے سیکھتی ہیں، عمران خان

ایم کیو ایم میں پرویز مشرف کے مائنس ٹو فارمولے پر عمل ہورہا ہے، فاروق ستار

لودھراں ضمنی انتخاب میں مسلم لیگ (ن) نے تحریک انصاف کو شکست دیدی

2017-07-14 09:19:02

پارا چنار کا مسئلہ فرقہ واریت نہیں، زمینوں پر قبضہ ہے، علامہ عابد الحسینی

 

Parachinar

ملی یکجہتی کونسل صوبہ خیبر پختونخوا کی صوبائی کابینہ کے اراکین نے 11جولائی 2017 بروز منگل پارا چنار کا خصوصی دورہ کیا۔
 

اس وفد میں ملی یکجہتی کونسل کے صوبائی صدر اور جماعت اسلامی کے صوبائی امیر مشتاق احمد خان کے علاوہ صوبائی جنرل سیکرٹری پیر سید نور الحسنین گیلانی، مفتی اظہر محمود(جمعیت علمائے پاکستان)، مولانا مقصود احمد سلفی(متحدہ جمعیت اہل حدیث پاکستان)، مولانا ہدایت اللہ، یاسر فرید اعوان، مجلس وحدت مسلمین کے صوبائی سیکرٹری جنرل علامہ محمد اقبال بہشتی، مجلس وحدت مسلمین کے صوبائی ڈپٹی سیکرٹری جنرل علامہ سید عبدالحسین الحسینی، البصیرہ پاکستان سے علامہ سید مرتضیٰ عابدی اور(راقم سید محمد قاسم)، شیعہ علماء کونسل کے صوبائی صدر مولانا حمید حسین امامی، صوبائی جنرل سیکرٹری، مظفر علی اخونزادہ، اقتدار علی اخونزادہ اور دیگر شامل تھے۔ جب کہ وفد میں جماعت اسلامی کرم ایجنسی کے امیر حکمت خان بھی اپنے ساتھیوں کے ساتھ شامل ہو گئے۔

ملی یکجہتی کونسل کا یہ وفد سب سے پہلے پارا چنار کی مرکزی امام بارگاہ میں پہنچا اور وہاں پر انجمن حسینی اور مرکزی پیش نماز علامہ شیخ فدا حسین مظاہری کے ساتھ پارا چنار میں دہشت گردی کے واقعات پر تعزیت کی۔ مشتاق احمدخان، مفتی اظہر محمود ہزاروی اور علامہ مقصود احمد سلفی نے اظہار یکجہتی پر مبنی اپنے خیالات پیش کیے۔ جب کہ علامہ شیخ فدا حسین مظاہری نے وفد کا شکریہ ادا کیا۔ اس کے بعد وفد نے مجلس علماء اہل بیتؑ کے دفتر کا دورہ کیا اور علماء کے ساتھ بھی اظہار تعزیت کیا۔

اس وفد کے لیے تحریک حسینی پارا چنار کے دفتر میں ایک خصوصی نشست کا انعقاد کیا گیا۔ جہاں پرتحریک حسینی پارا چنار کے صدر مولانا یوسف حسین نے وفد کو خوش آمدید کہا اور پارا چنار کے بنیادی مسائل پر گفتگو کی۔ باہمی گفتگو میں پارا چنار کے مسائل کے حل کے لیے تجاویز پر تبادلۂ خیال ہوا۔

اس کے بعد پارا چنار کے بزرگ عالم دین اورمدرسہ آیت اللہ خامنہ ای کے مسؤل اور تحریک حسینی پارا چنار کے سپریم لیڈر، سابق سینیٹر علامہ عابد حسین الحسینی نے تمام وفد کو خوش آمدید کہا اور پارا چنار آمد پر ان کا تہ دل سے شکریہ ادا کیا۔ بالخصوص وفد میں شامل کرم ایجنسی کے اہل سنت عمائدین کا شکریہ ادا کیا۔

علامہ عابد حسین الحسینی نے کہا کہ پارا چنار کا بنیادی مسئلہ فرقہ واریت نہیں بلکہ اصل مسئلہ مقامی زمینوں پر قبضوں کا ہے۔ انھوں نے کہا کہ اگر پارا چنار کے شیعوں نے اہل سنت کی ایک انچ زمین پر بھی قبضہ کیا ہوتو وہ اہل سنت کے ساتھ مل کر مسئلہ حل کروا دیں گے لیکن پارا چنار کے شیعوں کی صدہ اور بالش خیل میں ہزاروں جریب زمینوں پر کچھ شر پسند عناصر نے قبضہ کیا ہوا ہے۔ اس لیے اہل سنت عمائدین اس مسئلہ کے حل کروانے کے لیے شیعوں کا ساتھ دیں تو اس خونریزی کا خاتمہ ہو جائے گا۔

اسی طرح شیعہ سرکاری ملازمین جب اہل سنت علاقوں میں سرکاری فرائض کی ادائیگی کے سلسلے میں جاتے ہیں تو کچھ شر پسند عناصر انھیں تنگ کرتے ہیں۔ لہٰذا اس مسئلے میں بھی اہل سنت اکابر کو اپنا کردار ادا کرنا چاہیے۔ جب کہ 3شیعہ علاقوں میں تمام اہل سنت ملازمین امن و سکون سے اپنے فرائض ادا کررہے ہیں۔اسی طرح کچھ شر پسند عناصر (حکومتی اور غیر حکومتی دونوں) نے شیعہ علاقوں کے پہاڑوں اورجنگلات کو ایک سازش کے تحت افغانستان میں شامل کردیا ہے جو پاکستان کی سالمیت کے خلاف ایک سازش ہے۔

علامہ سید عابد حسین الحسینی نے حکومت سے مطالبہ کیا کہ جلد از جلد فاٹا کو صوبہ خیبر پختونخوا میں ضم کیا جائے تاکہ یہاں پر بھی آئین پاکستان کا مکمل نفاذ ہو سکے۔ انھوں نے مزید کہا کہ جماعت اسلامی کا فاٹا کے انضمام کے بارے میں جو اصولی موقف ہے ہم اس کی مکمل حمایت کرتے ہیں اور ان کے ساتھ ہر قسم کے تعاون کے لیے تیار ہیں۔

ملی یکجہتی کونسل کے صوبائی صدر مشتاق احمد خان نے علامہ عابد حسینی کے تمام مطالبات کی حمایت کی اور کہا کہ وہ بطور امیر جماعت اسلامی بھی ان مسائل کے حل کے لیے آواز اٹھائیں گے اور اپنا بھرپور کردار ادا کریں گے جب کہ کرم ایجنسی کے ان مسائل کے حل کے لیے وہ سینٹ ، قومی اسمبلی اور صوبائی اسمبلی میں بھی آواز اٹھائیں گے۔

زمرہ جات:  
دیگر ایجنسیوں سے (آراس‌اس ریدر)

جام جم - 18 فروری

- سحر نیوز