شیعہ سنی بھائی بھائی، تکفیری وہابی کی شامت آئی ۔ گل زہرا

یہ ٹرمپ نہیں بول رہا بلکہ ڈھول بول رہے ہیں !!!

لمحہ فکریہ! بیت المقدس تنازعہ پر ساری دنیا سراپائے احتجاج،سعودی عرب میں احتجاج پر پابندی!

امریکہ استکباری ایجنڈے پر عمل پیرا ہوکر عالمی امن کو تباہ کرنا چاہتا ہے، سبطین سبزواری

مخالف زیرو اور حکومت قاتل: فیصلہ کیسے ہو

ٹرمپ کے خلاف امریکہ میں بھی مظاہرے

امریکی مسلمان لڑکی، حجاب کی وجہ سے ملازمت سے محروم

بیت المقدس اسرائیل کی غاصب اور بچوں کی قاتل حکومت کو ہر گز نہیں دیں گے: ترکی

بیت المقدس کے بارے میں امریکی سازش برداشت نہیں کریں گے: ایران

پوپ تھیوڈورس نے امریکی نائب صدر سے ملاقات منسوخ کردی

امریکہ مقبوضہ بیت المقدس کو اسرائیل کا دارالحکومت تسلیم کرنے کا فیصلہ واپس لے: عرب لیگ

مضبوط حکومت، ناکام ریاست

(ن) لیگ کی سیاست پہلے دن سے ہی منافقت پر مبنی ہے: اعتزازاحسن

(ن) لیگ کو دھچکا، 5 ارکان اسمبلی نے استعفیٰ دے دیا

ٹرمپ بمقابلہ عالم اسلام

یمن میں علی صالح کی موت کے بعد سعودی عرب کی حکمت عملی کیا ہوگی؟

ٹرمپ نے اپنے ہاتھوں سے اسرائیل کے منصوبے خاک میں ملا دیئے

یروشلم کے معاملے پر سعودی عرب کا 'حقیقی مؤقف' کیا ہے؟

ٹرمپ نے بیت المقدس کے خلاف فیصلہ دے کر دنیائے اسلام کی غیرت ایمانی کو للکارا ہے، علامہ مقصود ڈومکی

تصاویر: سعودی عرب کے علاوہ پورے عالم اسلام میں امریکہ کے خلاف مظاہرے

ٹرمپ نے سعودیہ، مصر اور امارات کے مشورے کے بعد بیت المقدس کو اسرائيل کا دارالحکومت تسلیم کیا

سعودی عرب کی امریکی صدر کے فیصلے کو ماننے کے لئے محمود عباس کو 100 ملین ڈالر کی رشوت کا پردہ فاش

عراق کے وزیراعظم نے ملک سے داعش کے خاتمہ کا اعلان کردیا

بیت المقدس کے یہودی ہونے کی حسرت صہیونیوں کےدل میں ہی رہ جائے گی

فلسطین کا مسئلہ نعرے بازی سے حل نہیں ہو گا

فلسطین کے لئے ٹرمپ، نیتن یاہو اور محمد بن سلمان کا خطرناک منصوبہ

اسرائیل کے خطرے کے پیش نظر اسلامی مزاحمت کو غیر مسلح کرنا ممکن نہیں

دھرنوں کا باب بند کرنا فوج سمیت تمام اداروں کی ذمہ داری ہے: چوہدری نثار

«عبداللہ صالح» کیوں «انصاراللہ» کے خلاف ہونے لگے تھے؟

سعودیہ کی اسرائیل کے ساتھ قربت سے ٹرمپ کے بیت المقدس کے خلاف اقدام تک

کیا پاکستان اپنی خارجہ پالیسی روس اور چین کی جانب موڑپائے گا؟

مسجد الاقصی ٰسمیت دیگر اسلامی آثار پراسرائیلی مظالم کی لرزہ خیز داستان

بیت المقدس تنازعہ : ترکی کی منافقت آشکار، اسرائیل سے 6.18 ملین یورو کا اقتصاد ی معاہدہ کرلیا

ٹرمپ سیاست نہ سمجھے کی وجہ سے دنیا میں زہر پھیلا رہے ہیں

سلامتی کونسل کی ڈونلڈ ٹرمپ کے اعلان کی شدید مذمت

اسرائیل بمقابلہ سعودی فوجی اتحاد

بیت المقدس کو اسرائیل کا دارلخلافہ قرار دینے کیخلاف جمعہ کو ’’یوم مردہ باد امریکہ واسرائیل ‘‘منایا جائے گا ، علامہ راجہ ناصرعباس

طاہرالقادری جو بھی کریں گے ہم ان کے ساتھ ہیں: عمران خان

مسلمانوں پر سوگ طاری ہے، لیڈر بیان دے رہے ہیں

تہران میں امریکہ کے خلاف احتجاجی مظاہرہ

اسرائیل کی آئندہ جنگ کے بارے میں سمیر قنطار کی پیشگوئی

بریلوی مکتبہِ فکر کی سیاسی فعالیت

کیا بن سلمان نے قطر کے خلاف اپنی ہار تسلیم کرلی؟

اسرائیلی دارلخلافہ کی بیت المقدس منتقلی، نام نہاد سعودی اتحاد خاموش، راحیل شریف لاپتہ

مدرسہ تعلیم کا از سر نو جائزہ لینے کی ضرورت ہے: پاکستان آرمی چیف

ایران، پاکستان اور ترکی اسلامی یونین کے قیام کی کوشش تیز کریں

عربی اور اسلامی ممالک کو امریکی سفراء کو طلب کرکے باقاعدہ اعتراض کرنا چاہیے

قرآن و اہل بیت (ع) مسلمانوں کے درمیان وحدت کے دو مرکز ہیں

داخلی حالات بہتر کئے بغیر امریکہ کو آنکھیں دکھانا بے سود ہے

مسلمانوں پر سوگ طاری ہے، لیڈر بیان دے رہے ہیں: کیا صرف بیانات سے مسائل حل ہوں گے؟

مقتدی صدر کا اسلامی ممالک سے امریکہ اور اسرائیل کے سفارتخانہ بند کرنے کا مطالبہ

بیت المقدس کے بارے میں امریکی صدر کے اعلان پر سلامتی کونسل کا ہنگامی اجلاس طلب

فلسطینی تنظیم حماس نے نئے انتفاضہ کا اعلان کردیا

پاکستان ائیر چیف کا امریکی ڈرون مار گرانے کا حکم

پاکستانی 2018ء الیکشن؛ شدت پسندوں نے بھی شرکت کا اعلان کردیا

علی عبداللہ صالح کی ہلاکت سے سعودی پالیسیز خاک میں مل گئیں

سانحہ ماڈل ٹاؤن :کون ذمہ دار ہے؟

پاکستان میں امریکہ کا نہیں بلکہ اللہ اور رسول اللہ کا حکم چلے گا، صاحبزادہ حامد رضا

کارکن تیار رہیں کسی بھی وقت احتجاج کی کال دے سکتے ہیں: طاہر القادری

پاکستان کی امریکی سفارتخانے کی بیت المقدس منتقلی کے منصوبے کی مذمت

ایران علاقہ کا طاقتور ملک ہے: فرانس

امریکی صدر نے مقبوضہ بیت المقدس کو اسرائیل کا دارالحکومت تسلیم کرلیا

امریکی صدر کے احمقانہ فیصلہ سے نیا انتفاضہ مزید شعلہ ور ہو جائے گا

انصاراللہ کی حمایت میں یمی عوام کا مظاہرہ

ایران اور دنیا بھر میں جشن امین و صادق

وزیراعظم بن گیا تو قوم کو 800 ارب روپے اکٹھے کرکے دکھاؤں گا: عمران خان

سعد حریری نے مستعفی ہونے کا فیصلہ واپس لے لیا

پیغبمر اسلام (ص) کی زندگانی اسلامی اتحاد اور یکجہتی کا مظہر

برطانوی وزیراعظم پر خود کش حملے کی کوشش کا منصوبہ بے نقاب

کیا پاکستان طالبان کی پناہ گاہیں ختم کر دے گا؟

کرم ایجنسی، سیکیوریٹی ادارے اور پولیٹیکل انتظامیہ

2017-08-09 16:01:58

شیعہ سنی بھائی بھائی، تکفیری وہابی کی شامت آئی ۔ گل زہرا

هفته-وحدت-اسلامی-گرامی-باد-660x330

شیعہ اور سنی اسلام کے دو مضبوط بازو ہیں جبکہ وہابیت اسلام کی پیشانی پر بدنما داغ ہے۔
بہت ضروری ہو گیا ہے کہ لوگوں کو بتایا جائے کہ شیعہ ، سنی اور وہابیت میں کیا فرق ہے ۔ بہت سے افراد اپنی نادانی کی بناء پر سمجھتے ہیں کہ وہابیت ، اہلسنت کی شاخ ہے اور وہابیت کے خلاف بات کرنا اہلسنت کیخلاف بات کرنا ہے ۔ یہ خیال سراسر جہالت و کم علمی پر مبنی ہے ۔ ہر ذی شعور اور باعلم انسان جانتا ہے کہ شیعہ اور سنی اسلام کی اصل ہیں جبکہ وہابیت کے اصول آج سے کچھ عشروں پہلے سعودی عرب میں امریکا و اسرائیل کی فرمائش پر وضح کئے گئے تھے ۔

بات یہ ہے صاحبو کہ جب جدید ٹکنالوجی نے اسلام کے متعلق ریسرچ کے ذرائع کثرت سے ہموار کر دئے تو غیر مسلم جوق در جوق اسلام میں داخل ہونے لگے۔ ایسے میں عالمی استکبار کے پاس سوائے اس کے کوئی دوسرا چارہ کار نہیں بچا تھا کہ وہ غیر مسلمانوں کو اسلام سے متنفر کر سکیں۔ ان کے پاس صرف ایک ہی چارہ کار تھا کہ وہ خود مسلمانوں کے درمیان ایسا فرقہ پیدا کریں جو بظاہر مسلمان ہوں لیکن باطنی طور پر ان کے مقاصد کو پورا کرتے ہوں۔ وہابیت امریکہ اور عالمی استکبار کا پیدا کردہ وہی فرقہ ہے جس کا مقصد صرف محمدی اسلام کو نابود کرنا اور امریکی اسلام کو دنیا میں نافذ کرنا ہے۔

یہ فرقہ آل سعود کا ایجاد کردہ ہے ؛ جی ہاں وہی آل سعود جس نے سر زمین وحی حجاز پر اپنا قبضہ جما کر اسکا نام بدل کر سعودی عرب رکھا اور دوسری طرف دشمنان اسلام کے ساتھ دوستانہ روابط قائم کر کے اسلامی سرمایے کو ان تک منتقل کر دیا۔ وہی آل سعود جسکی عشرت کوشی ، شراب نوشی ، عورت بازی اور کعبہ خوری کے تذکرے زبان زد عام ہیں ۔ وہی آل سعود جو آج خادمین حرم بنی اسرائیل میں اپنے سفارتکار بھیج رہی ہے ، یمن پر حملے کر رہی ہے اور اپنے اسرائیلی آقائوں کو راضی کرنے کے لئے آجتک فلسطین کے حق میں نہیں بولی اور وہی آل سعود جسکی پیشانی پر جنت البقیع کے انہدام کا داغ ہے جہاں رسول اکرم ص کی صاحبزادی سیدہ فاطمہ زہرا سلام علیہا سمیت متعدد صحابہ و آلِرسول ص کی قبور ہیں۔

بر سبیل تذکرہ یہ بھی بتا دوں کہ اسلام میں فرقوں کی دو شاخیں ہیں : شیعہ اور سنی ۔ شیعوں میں جعفری ، اسماعیلی اور زیدیہ جبکہ سنیوں میں بریلوی ، حنفی ، شافعی ، مالکی فرقے ہیں ۔ یہ تمام فرقے کچھ دینی و تاریخی اختلافات رکھنے کے باوجود ایکدوسرے کا احترام کرتے ہیں ۔ مل جل کر رہتے ہیں ، یہی وہ فرقے ہیں جو “شیعہ سنی بھائی بھائی ہیں” ۔ ان میں وہابی دیوبندی شامل نہیں (اگرچہ دیوبند کی تاریخ الگ ہے لیکن اختصار کےلئے یہاں صرف وہابیت کا ذکر کر رہی ہوں) ۔ وہابی وہ ہیں جو مذہبی شدت پسند ہیں ، تکفیر کے قائل ہیں ، مزاروں پر جانا شرک سمجھتے ہیں ۔ پیارے نبی محمد ص بن عبداللہ کے اسلام اوروہابیت محمد ابن عبد الوہاب (وہابیت کا بانی) کے اسلام میں تین بنیادی باتوں کا فرق ہے۔

1۔حقیقی اسلام اور وہابیت میں پہلا فرق، بے رحمی، بے دردی اور تشدد ہے۔ جو کہ حقیقی اسلام کی تعلیمات کے سراسر خلاف ہے۔ وہابیت کی تاریخ سے پتہ چلتا ہے کہ وہ اپنی خاندانی بادشاہت کے لیے جرم کی آخری حد تک بھی جا سکتے ہیں۔

2۔حقیقی اسلام اور وہابیت میں دوسرا بنیادی فرق یہ ہے کہ ہمارا ایمان ہے کہ کوئی بھی شخص جو شہادتین کا اقرار کرے نبوت اور قیامت پر ایمان کا اظہار کرے وہ مسلمان ہے اور اس کی جان و مال، عزت و آبرو محفوظ ہے ،چاہےوہ مرد ہو یا عورت ،جبکہ وہابیت کا نظریہ ہے کہ جو بھی وہابیت کے نظریے سے اختلاف کرے وہ کافر اور واجب القتل ہے (یعنی تکفیریت)

3۔تیسرا بنیادی فرق یہ ہے کہ اسلام اپنے ان مسلمان بہنوں اور بھائیوں کے ساتھ دوستانہ تعلقات قائم کرنے کا حکم دیتا ہے جو اسلام کےخلاف کھلم کھلا دشمنی کا اظہار نہ کریں۔ قرآن کا بھی یہی حکم ہے لیکن اس کے برعکس سعودی حکمران اپنی ہی مسلمان بہنوں کا بازار میں سودا کرتے ہیں۔ جیسا کہ یمن، شام اور عراق میں مسلمان خواتین کے ساتھ ہو رہا ہے۔

آج دنیا میں جتنے شدت پسند گروہ ہیں جو اپنا تعلق اسلام سے بتاتے ہیں ان میں نہ کوئی شیعہ ہے نہ سنی بلکہ سبکے سب وہابی دیوبندی ہیں ۔ یہی داعش ، طالبان ، بوکوحرام ، سپہ صحابہ پاکستان ، لشکر جھنگوی ، اہلسنت و الجماعت نامی گروہوں کا مذہب ہے ۔

سنی بھائیو سے گزارش ہے کہ خود کو اس گمراہ فرقے سے الگ کریں اور اپنا دامن بچاتے ہوئے اس فرقے کے ساتھ بیزاری اختیار کریں تاکہ سب کے لیے یہ آشکار ہو جائے کہ وہابیت نامی ٹولے کا اسلام حقیقی سے کوئی سروکار نہیں ہے۔ اور ہاں آخر میں بتا دوں کہ دنیا کے بیشتر ممالک کے اہلسنت علماء بشمول مصر کی جامعہ الازہر کے سربراہ شیخ احمد اطلیب نے واضح کر دیا ہے کہ وہابیوں کا اہلسنت سے کوئی تعلق نہیں

 

زمرہ جات:   Horizontal 3 ،
دیگر ایجنسیوں سے (آراس‌اس ریدر)

عشق رسولﷺ کا تقاضا

- ڈیلی پاکستان