کیا ہزارہ شیعہ اپنی نسل کشی کے خلاف اقوام متحدہ سے رجوع کریں؟

عزاداری امام حسین ہماری شہ رگ حیات ہے اس پر کوئی پابندی قبول نہیں: علامہ احمد اقبال رضوی

امریکہ سے دوستی! پاکستان کو دئے گئے 5 ہیلی کاپٹرز واپس مانگ لئے

کربلا ایک دانشگاہ؛ سانحہ نہیں

14 سو سال بعد آج پھر یزیدیت تکفیریت کی شکل میں سر اٹھا رہی ہے: علامہ راجہ ناصرعباس جعفری

برگزیٹ کے خلاف برطانوی عوام کا مظاہرہ

سانحہ ماڈل ٹاؤن کی رپورٹ عام نہ کرنے کی اپیل، عدالت نے پنجاب حکومت کی اپیل مسترد کردی

ملک دشمنوں کے عزائم کو ناکام بناتے ہوئے وحدت اور یکجہتی کا مظاہرہ کیا جائے: علامہ حسن ظفر نقوی

اقوام متحدہ کی سیکڑوں روہنگیا خواتین سے اجتماعی زیادتیوں کی تصدیق

تحریک انصاف نے ایم کیوایم سے بات کرکے تھوک کر چاٹا ہے: خورشید شاہ

تصاویر: جرمنی کے شہر ہیمبرگ میں سید الشہداء حضرت امام حسین(ع) کی عزاداری

امریکہ کی سفری پابندیوں کی نئی فہرست میں شمالی کوریا شامل سوڈان خارج

بے نظیر کا قاتل کون: پرویز مشرف یا آصف علی ذرداری؟

کردستان کا عراق سے الگ ہوجانا پورے عراق کے خاتمے کا سبب بن سکتا ہے

عوض القرنى اور سلمان العوده کے بعد محمد العریفی بھی گرفتار

حسن مثنی کون تھے؟ کیا وہ کربلا میں موجود تھے؟

سعودی عرب کو درپیش دو بڑے چیلنجز

تاریخ کوفہ: کچھ گم گشتہ پہلو — عامر حسینی کی کتاب کوفہ پہ تبصرہ: میاں ارشد فاروق

بنگلہ دیش میں روہنگیا پناہ گزینوں کی تعداد 4لاکھ 30 ہزارہوگئی

انجیلا مرکل چوتھی بار جرمنی کی چانسلر منتخب

محرم الحرام میں آگ و خون کا بڑا منصوبہ ناکام

ملیحہ لودھی کی اقوام متحدہ میں سنگین غلطی

نوازشریف کا لندن سے فوری وطن واپسی کا فیصلہ

یمنی عوام پر گزشتہ ماہ سعودی جنگی اتحاد کے حملہ میں امریکی بم استعمال ہوا، ایمنسٹی انٹرنیشنل

اگر مرجعیت کے فتوی پر عمل نہ ہوتا تو داعش کا کربلا، بصرہ، کویت اور سعودی عرب پر قبضہ ہوجاتا

اسلام آباد میں نامعلوم افراد نے کالعدم داعش کا جھنڈا لگادیا

خطے میں موجود بحرانوں میں کس نے مہاجرین کو پناہ دی؟

این اے 120میں شدت پسند عناصرکی کارکردگی

روہنگیا مسلمانوں پر ظلم و ستم ،7 ممالک نے سلامتی کونسل کا اجلاس طلب کر لیا

روہنگیا پناہ گزینوں کی تعداد سات لاکھ سے تجاوز کرگئی

لندن میں تیزاب حملے میں 6 افراد زخمی

ذہنی طور پر ان فٹ ڈونلڈ ٹرمپ خود کش مشن پر ہیں: شمالی کوریا

استغفار شیطان سے مقابلہ کا بہترین راستہ ہے

مجلس امام حسین کی خصوصیت دشمن سے مقابلہ اور شیعت کی ترویج ہے

شیعہ ہزارہ قوم کی نسل کشی کیخلاف احتجاجی مظاہرہ

لندن میں آن لائن ٹیکسی سروس ’’اوبر‘‘ پر پابندی لگانے کا فیصلہ

پاکستان کے حالات عجیب رخ اختیار کر سکتے ہیں: نواز شریف

امریکا اور شمالی کوریا بچوں کی طرح لڑرہے ہیں: روس

نجران میں یمنی فوج نے سعودی فوج کا حملہ پسپا کر دیا

مشرف اتنے بہادر ہیں تو پاکستانی عدالتوں کا سامنا کریں: زرداری

پرویز مشرف کے الزامات

ترکی سفیر نے امارات میں اسرائیلی افسروں کی رہائشگاہ فاش کردی

عمر رسیدہ عرب شیوخ کی کمسن بھارتی لڑکیوں سے شادیاں

مشکل وقت سر پر ہے

کیا اردوغان، تباہی کے بالکل قریب ہیں؟

دنیا کو تڑپانے والا یہ بچہ اب کس حال میں ہے؟

پاکستان نے اقوام متحدہ میں کشمیر پر بھارتی موقف مسترد کر دیا

مشرف میں عدالتوں کا سامنا کرنے کی ہمت نہیں: فرحت اللہ بابر

ایران اور دنیا کے چالیس سے زائد ملکوں میں عالمی یوم علی اصغر

نوازشریف کے دوبارہ پارٹی صدر بننے کی راہ ہموار ہو گئی

پاکستان کی سیاست میں مثبت تبدیلی کیوں نہیں آ رہی ؟

فری بلوچستان : پاکستان کی خود مختاری پر کاری ضرب

تعلیم یافتہ دہشت گرد

الجبیر: بغداد اور کردستان ایک بڑی جنگ کی جانب بڑھ رہے ہیں

امریکا کے حمایت یافتہ جنگجوؤں نے اشتعال انگیزی کی تو نشانہ بنائیں گے: روس

پاکستان نے دہشتگردی کیخلاف دنیا کا سب سے بڑا آپریشن کیا: وزیراعظم شاہد خاقان عباسی

گھر کی صفائی اور سابق وزیر داخلہ کی ناراضگی

عراقی وزیر اعظم نے الحویجہ کی آزادی کا حکم صادر کردیا

ٹرمپ کا خطاب اس کی ناکامی، شکست، غصہ اور درماندگی کا مظہر ہے

کائنات کے گوشہ و کنار میں امام مظلوم کے ماتم کا آغاز

پاکستان میں محرم الحرام کا چاند نظر آگیا

نواز شریف کی نسلوں میں سے کوئی اقتدار میں آنے والا نہیں رہے گا: طاہر القادری

اسلام آباد میں مختلف مکاتب فکر کے 14علماء اور خطبا کے داخلے پر پابندی عائد

لاہور ہائی کورٹ کا سانحہ ماڈل ٹاؤن کی رپورٹ منظر عام پر لانے کا حکم

بےنظیر اور مرتضیٰ بھٹو کو آصف زرداری نے قتل کرایا: پرویز مشرف

عسکری تنظیمیں ۔۔۔بدامنی کا محرک

سوچی کی حقائق پر پردہ پوشی: افسوسناک یا مجرمانہ فعل؟

قدس کو منظم کرنے کا بہانہ یا یہودی بنانے کا منصوبہ؟

غنڈوں کی زبان بولتا صدر

سعودی فوج مرکز پر یمنی سرکاری فوج کا میزائل حملہ، متعدد سعودی اہلکار ہلاک

امام کعبہ نے امریکی صدر ٹرمپ کو ’’امن کی فاختہ‘‘ قرار دے دیا!

2017-09-12 13:38:04

کیا ہزارہ شیعہ اپنی نسل کشی کے خلاف اقوام متحدہ سے رجوع کریں؟

16609808_304

بلوچستان کے دارالحکومت کوئٹہ سے 30 کلومیٹر کے فاصلے پہ واقع کچلاک شہر میں ایک کار میں سوار ہزارہ خاندان پہ تکفیری دیوبندی دہشت گرد تنظیم لشکر جھنگوی/سپاہ صحابہ پاکستان کے موٹر سائیکل پہ سوار دہشت گردوں نے اس وقت فائرنگ کی جب وہ ایک پٹرول پمپ پہ تھوڑی دیر کے لئے رکے تھے۔فائرنگ کے نتیجے ہزارہ شیعہ خاندان کے تین مرد افراد موقع پہ ہی شہید ہوگئے جبکہ ایک بارہ سالہ لڑکا ہسپتال میں زخموں کی تاب نہ لاکر شہید ہوگیا۔اس فائرنگ کے نتیجہ میں کار میں سوار دو شیعہ ہزار خواتین بھی شدید زخمی ہوئی ہیں۔فائرنگ کرکے دہشت گرد آسانی سے فرار ہوگئے۔انگریزی روزنامہ ڈان کی خبر کے مطابق دہشت گردی کا نشانہ بننے والا ہزارہ شیعہ خاندان افغانستان سے چمن کے راستے کوئٹہ واپس لوٹ رہا تھا جب سلیم ہوٹل کے پاس کچلاک شہر میں ایک پٹرول پمپ پہ ان کو نشانہ بنایا گیا۔

ہزارہ شیعہ کمیونٹی کو نشانہ بنایا جانے والا یہ پہلا اور آخری واقعہ نہیں ہے۔بلوچستان کے اندر اس وقت تکفیری۔جہادی دیوبندی-سلفی وہابی دہشت گرد نیٹ ورک کے تحت کئی ایک گروپ کام کررہے ہیں جن میں لشکر جھنگوی العالمی ، داعش، جیش العدل،جند اللہ قابل ذکر ہیں۔اور ان تنظیموں کو کالعدم سپاہ صحابہ پاکستان/اہلسنت والجماعت دیوبندی کی نظریاتی و لاجسٹک سپورٹ حاصل ہے۔جبکہ بلوچستان میں جاری وائلنس پہ کام کرنے والے تحقیقاتی اداروں اور تجزیہ کاروں کا یہ بھی کہنا ہے کہ کئی ایک تکفیری دیوبندی گروپوں کو مبینہ طور پہ بلوچستان میں ملٹری اسٹبلشمنٹ اور سویلین سیکورٹی فورسز کے اندر بیٹھی تکفیری لابی کی حمایت بھی حاصل ہے۔جبکہ بلوچ نیشنلسٹ گروپوں کی جانب سے یہ الزام بھی سامنے آیا ہے کہ ان تکفیری جہادی دہشت گرد تنظیموں کو اسٹبلشمنٹ بطور پراکسی بلوچ مزاحمت کاروں کے خلاف استعمال کررہی ہے جو اس آڑ میں ہزارہ شیعہ کمیونٹی کو بھی نشانہ بناتے رہتے ہیں۔

بلوچستان میں تکفیری دیوبندی-سلفی وہابی دہشت گرد نیٹ ورک ہزارہ شیعہ کی بدترین نسل کشی کا مرتکب ہورہا ہے اور یہی نیٹ ورک بلوچستان میں صوفی سنّی ،زکری فرقہ، احمدی، ہندؤ اور بلوچ نیشنلسٹ ایکٹوسٹ ، دانشور، پروفیسرز ، سیاسی ورکرز کو بھی ٹارگٹ کلنگ کا نشانہ بنائے ہوئے ہے۔ہزارہ شیعہ کی اکثریت آبادی کے علاقے کوئٹہ میں عملی طور پہ محصور محلوں اور گھیٹوز میں بدل چکے ہیں۔ہزاروں ہزارہ شیعہ کمیونٹی کے افراد پڑوسی ملک افغانستان، ایران اور یورپی ممالک میں پناہ گزینوں کی زندگی گزار رہے ہیں۔جبکہ ہزاروں لوگ ابتک ٹارگٹ کلنگ، خود کش بم دھماکوں اور ریموٹ کنٹرول بم دھماکوں میں شہید اور معذور ہوچکے ہیں۔

ہزارہ شیع کمیونٹی کی یہ نسل کشی روکنے میں بلوچستان حکومت ، وفاقی حکومت اور ملٹری اسٹبلشمنٹ کی کوششیں کے بارے میں نیم دلانہ تاثر بہت پختہ ہوچکا ہے۔جبکہ مسلم لیگ کی اتحادی حکومت بارے بار بار یہ تنقید سامنے آتی ہے کہ وہ تکفیری دیوبندی دہشت گرد نیٹ ورک کو جڑ سے اکھاڑ پھینکنے اور اس کو نظریاتی و لاجسٹک سپورٹ فراہم کرنے والی تنظیموں اور گروپوں کے خلاف کاروائی میں سنجیدہ نہیں ہے۔جبکہ پاکستان کی ملٹری اسٹبلشمنٹ پہ بھی اس نیٹ ورک کے اندر کئی سیکشن کو بطور پراکسی استعمال کرنے کے لئے ان کی سرپرستی کرنے کا الزام سامنے آرہا ہے۔کالعدم دہشت گرد تنظیموں کو مین سٹریم کرنے اور دہشت گردوں کو ہیرو بنانے جیسے اقدامات کو بھی اس نسل کشی کی ایک وہ قرار دیا جارہا ہے۔

اس وقت ہزارہ شیعہ کمیونٹی کے اندر اس جاری نسل کشی پہ سخت غصّہ اور برہمی پائی جارہی ہے اور ان میں سے یہ آوازیں سامنے آنے لگی ہیں کہ ان کا کیس حکومت اکر سننے کو تیار نہیں ہے تو پھر ان کو اپنا کیس اقوام متحدہ کے پاس لیکر جانے کی ضرورت ہے۔تشویش ناک امر یہ ہے کہ دی وائس فار بلوچ مسنگ پرسنز کے سربراہ نصراللہ بلوچ نے برطانوی نشریاتی ادارے بی بی سی سے بات چیت کرتے ہوئے حکومت کو دو ماہ کا الٹی میٹم دیتے ہوئے کہا کہ اگر بلوچ جبری گمشدگان کی بازیابی کے ٹھوس اقدامات نہ کئے گئے تو وہ اپنا کیس اقوام متحدہ کے ورکنگ گروپ برائے جبری گمشدگان کے پاس لیجائیں گے۔

یہ رجحان پاکستانی ریاست اور حکومت پہ عدم اعتماد کی نشانی ہوگا جبکہ پہلے ہی امریکہ، علاقائی اتحاد برکس نے پاکستانی حکومت کو ملک میں متحرک دہشت گرد تنظیموں کے خلاف ٹھوس کاروائی کرنے کا مطالبہ کرنے کا مطالبہ کیا ہے۔اور پاکستان کے حکام کو اس حوالے سے عالمی برادری اور دہشت گردی کا شکار متاثر نسلی ومذہبی کمیونٹیز کے تحفظات کو دور کرنے کی ضرورت ہے اور کالعدم تکفیری جہادی انتہا پسند تنظیموں کے لئے پیدا کی کئی سپیس فی الفور ختم کرنے کی ضرورت ہے۔

 

Leave a Reply

Your email address will not be published. Required fields are marked *

زمرہ جات:  
دیگر ایجنسیوں سے (آراس‌اس ریدر)

اسحاق ڈاراستعفیٰ دیں

- ڈیلی پاکستان

سحر نیوز رپورٹ

- سحر ٹی وی

جام جم - 25 ستمبر

- سحر ٹی وی