حسن مثنی کون تھے؟ کیا وہ کربلا میں موجود تھے؟

سعودی ولی عہد کو اسرائیل کے دورے کی دعوت

آل خلیفہ اسرائيل کے ساتھ تعلقات مضبوط بنا کر تاریخ کے کوڑے دان میں دفن ہوجائیں گے

شام میں امریکی فوج کی موجودگی غیر قانونی ہے: روس

مسئلہ فلسطین: اتحاد یا پھر اپنی باری کا انتظار

کراچی : پی ایس 128 میں کالعدم جماعت کی الیکشن مہم، سیکورٹی ادارے خاموش

بھارتی ایجنسی ’’را‘‘ کا افغان لڑکیوں کو پاکستان مین دہشتگردی کہ لیے ٹریننگ دینے کا انکشاف

اسرائیل کے قیام پر علامہ اقبال کا بیان

حضرت امام مہدی(عج) کی حوائج کےحصول کے لیےنصیحت

او آئی سی کا ہنگامی اجلاس: مقبوضہ بیت المقدس کو فلسطینی دارالحکومت تسلیم کرنے کا مطالبہ

ناقابل قبول عدالتی فیصلہ

پاکستان اور شمالی کوریا جیسے ممالک کے ساتھ کام کرنا پر لطف نہیں: امریکی وزیر خارجہ

پاکستان کیلیے امریکی امداد دہشت گردوں کے خلاف مؤثر کارروائی سے مشروط

لگتا نہیں اسمبلیاں مدت پوری کریں گی، ایاز صادق

مذہبی جماعتوں کا ایم ایم اے کی بحالی کا اعلان

ایران کا بیت المقدس کے دفاع کے لئے اسلامی ممالک سے تعاون پر آمادگی کا اظہار

شام میں کردوں، امریکیوں اور داعشیوں کے درمیان تین سمجھوتوں کا راز

یمن میں 8 ملین افراد شدید قحط کا شکار

ٰیروشلم : پہلے مسلمان خود تو اتحاد کر لیں

القدس سے متعلق امریکی اعلان پراوآئی سی کا ہنگامی اجلاس

فلسطینی امن عمل میں امریکا کا کردار ختم ہوگیا: خواجہ آصف

پاکستان میں دہشت گردی کے خلاف اقدامات

سعودی سلطنت کا مستقبل

ترکی اور روس نے مقبوضہ القدس سے متعلق امریکی اعلان خطرناک قراردے دیا

ملک میں جمہوریت کا اونٹ کس کروٹ بیٹھے گا

پانچ استعفوں پر حکومت گرانے کا خواب

مقام شہادت ایک درجہ کمال ہے، ان کو نصیب ہوتا جو معرفت الہی کے راہی ہوتے ہیں: علامہ امین شہیدی

او آئی سی کا غیر معمولی اجلاس، وزیر اعظم ترکی پہنچ گئے

ایران اور پاکستان کے درمیان ثقافتی میدانوں میں تعلقات کو فروغ دینے پر تاکید

ایران اور برطانیہ کے تعلقات میں نئے دور کا آغاز

بعض لوگ میری پشت میں خنجر گھونپنا چاہتے تھے

بیت المقدس اور فلسطینی پناہ گزینوں کی واپسی کے مسئلہ کو فراموش کردیں

ہماری نگاہیں قدس کی جانب ہیں اور قدس کی نگاہیں سید مقاومت کی طرف

سعودی نواز پاکستانی اینکر کا بیت المقدس کو اسرائیلی دارالحکومت بنانے کے فیصلے کا دفاع

پاکستانی عدالتیں فوجی حکومتوں کی باقیات ہیں

ٹرمپ نے سعودیہ، مصر اور امارات کے مشورے کے بعد بیت المقدس کو اسرائیل کا دارالحکومت تسلیم کیا

مسلم عسکری اتحاد اپنی پوزیشن واضح کرے کہ یہ اتحاد کیوں اور کس لئے بنایاگیا،17دسمبر کو ملین مارچ ہوگا امیر جماعت اسلامی

نماز تمام انسانی کمالات کو حاصل کرنے کا وسیلہ ہے

برسلز بیت المقدس کو اسرائیل کا دارالحکومت تسلیم نہیں کرتا: موگرینی

ٹرمپ کا اقدام بعض عرب ملکوں کی سازش کا نتیجہ

ٹرمپ کا فیصلہ اسرائیل کی نابودی کا پیش خیمہ ثابت ہوگا

عراق میں داعش کے خلاف کامیابی پر نجف میں کانفرنس

یمن پر سعودی جارحیت بند کی جائے، اقوام متحدہ

سعودی عرب کا سینما ہالوں پر عائد پابندی اٹھانے کا اعلان

امریکی سینیٹروں کی جانب سے ٹرمپ کے استعفے کا مطالبہ

مدینہ میں مسجدِ نبوی کے قریب خود کش حملہ: سعودی تاریخ کے بھیانک پہلو

عالم اسلام میں صرف شیعہ ہی مسئلہ فلسطین کو زندہ رکھےہوئے ہیں، شہزاد چوہدری

یہ ٹرمپ نہیں بول رہا بلکہ ڈھول بول رہے ہیں !!!

لمحہ فکریہ! بیت المقدس تنازعہ پر ساری دنیا سراپائے احتجاج،سعودی عرب میں احتجاج پر پابندی!

امریکہ استکباری ایجنڈے پر عمل پیرا ہوکر عالمی امن کو تباہ کرنا چاہتا ہے، سبطین سبزواری

مخالف زیرو اور حکومت قاتل: فیصلہ کیسے ہو

ٹرمپ کے خلاف امریکہ میں بھی مظاہرے

امریکی مسلمان لڑکی، حجاب کی وجہ سے ملازمت سے محروم

بیت المقدس اسرائیل کی غاصب اور بچوں کی قاتل حکومت کو ہر گز نہیں دیں گے: ترکی

بیت المقدس کے بارے میں امریکی سازش برداشت نہیں کریں گے: ایران

پوپ تھیوڈورس نے امریکی نائب صدر سے ملاقات منسوخ کردی

امریکہ مقبوضہ بیت المقدس کو اسرائیل کا دارالحکومت تسلیم کرنے کا فیصلہ واپس لے: عرب لیگ

مضبوط حکومت، ناکام ریاست

(ن) لیگ کی سیاست پہلے دن سے ہی منافقت پر مبنی ہے: اعتزازاحسن

(ن) لیگ کو دھچکا، 5 ارکان اسمبلی نے استعفیٰ دے دیا

ٹرمپ بمقابلہ عالم اسلام

یمن میں علی صالح کی موت کے بعد سعودی عرب کی حکمت عملی کیا ہوگی؟

ٹرمپ نے اپنے ہاتھوں سے اسرائیل کے منصوبے خاک میں ملا دیئے

یروشلم کے معاملے پر سعودی عرب کا 'حقیقی مؤقف' کیا ہے؟

ٹرمپ نے بیت المقدس کے خلاف فیصلہ دے کر دنیائے اسلام کی غیرت ایمانی کو للکارا ہے، علامہ مقصود ڈومکی

تصاویر: سعودی عرب کے علاوہ پورے عالم اسلام میں امریکہ کے خلاف مظاہرے

ٹرمپ نے سعودیہ، مصر اور امارات کے مشورے کے بعد بیت المقدس کو اسرائيل کا دارالحکومت تسلیم کیا

سعودی عرب کی امریکی صدر کے فیصلے کو ماننے کے لئے محمود عباس کو 100 ملین ڈالر کی رشوت کا پردہ فاش

عراق کے وزیراعظم نے ملک سے داعش کے خاتمہ کا اعلان کردیا

بیت المقدس کے یہودی ہونے کی حسرت صہیونیوں کےدل میں ہی رہ جائے گی

فلسطین کا مسئلہ نعرے بازی سے حل نہیں ہو گا

2017-09-24 23:30:53

حسن مثنی کون تھے؟ کیا وہ کربلا میں موجود تھے؟

مرمسلم
حسن بن حسن، امام حسن مجتبی ﴿ع﴾ کے دوسرے فرزند تھے۔ ان کی ماں کا نام خولہ تھا، جو منطور فزاریہ کی بیٹی تھیں۔[1] حسن بن حسن ، المعروف حسن مثنی، ایک گراں قدر باتقوی اور با فضیلیت شخصیت تھے۔ وہ امیرالمومنین ﴿ع﴾ کے صدقات کے مسؤل اور متولی تھے۔ حسن مثنی، عبدالملک بن مروان کی حکومت کے زمانہ میں بھی زندہ تھے اور صدقات کے سلسلہ میں حجاج سے اختلاف کیا۔[2] حسن مثنی، قیام کربلا میں اپنے چچا امام حسین ﴿ع﴾ کے ہمراہ تھے۔ حسن بن حسن ﴿ع﴾ اسراء میں شامل تھے اور زخمی ھوئے تھے۔ اسماء بن خارجہ نے انھیں اسراء سے جدا کرکے ان کی رکھوالی کی۔ حسن مثنی کی ازدواج کے بارے میں لکھا گیا ہے کہ امام حسین ﴿ع﴾ نے اپنی ایک بیٹی کے بارے میں ان سے خواستگاری کی۔ امام ﴿ع﴾ نے ان سے فرمایا:“ میری بیٹیوں میں سے جسے پسند کرتے ھو، اس کو چن لو۔“ لیکن حسن مثنی نے شرم و حیا کی وجہ سے کوئی جواب نہیں دیا۔ امام حسین﴿ع﴾ نے ان کے لئے فاطمہ [3]کو منتخب کیا اور فرمایا:“ میری یہ بیٹی دوسری تمام بیٹیوں کی بہ نسبت میری ماں حضرت زہراء ﴿ع﴾ سے شباہت رکھتی ہے ۔” حسن مثنی ۳۵ سال کی عمر میں رحلت کرگئے۔[4]ان کی رحلت کے بعد، ان کی شریک حیات فاطمہ نے ان کی قبر پر ایک خیمہ نصب کرکے ایک سال تک اس میں بیٹھ کرعبادت کی۔[5]
سید بن طاؤس حسن مثنی اور امام حسن ﴿ع﴾کے بعض دوسرے فرزندان کی فضیلت اور شرافت کے سلسلہ میں لکھتے ہیں:“ یہ وہ افراد ہیں کہ تمام مسلمان ان کے بلند مقام کا اعتراف کرتے ہیں۔”[6]
امام حسن﴿ع﴾ اور امام حسین ﴿ع﴾ کی نسل کے بارے میں امام رضا ﴿ع﴾ سے نقل کی گئی ایک روایت کے ایک حصہ سے معلوم ھوتا ہے کہ حسن مثنی کے کئی فرزند تھے اور امام حسن ﴿ع﴾ کی نسل ان سے اور زید نامی ان کے ایک دوسرے بھائی سے جاری رہی ہے۔ اس روایت میں آیا ہےکہ:“ حسن بن علی ﴿ع﴾ کی نسل ان کے دو بیٹوں زید و حسن سے جاری رہی ہے۔ زید کا حسن نامی ایک بیٹا تھا اور حسن مثنی کے کئی بیٹے تھے جن کے نام عبداللہ، ابراھیم، داؤد، جعفر اور حسن تھے اور حسن مثلث کے نام سے مشہور تھے، امام حسن مجتبی ﴿ع﴾ کی نسل ان ہی سے جاری رہی ہے۔[7]
 

[1][1] ۔ شیخ مفید، محمد بن محمد، الارشاد فی معرفة حجج اللہ علی العباد، ج ۲،ص ۲۰، کنگرہ شیخ مفید، قم، طبع اول، ١۴١۳ق ۔۔
[2]۔ ایضا، ص ۲۳۔ ۲۴۔
[3] ۔ وہ امام حسین ﴿ع﴾ کی ایک بیٹی تھیں ، ان کی والدہ ام اسحاق بنت طلحہ بن عبداللہ تیمیہ تھیں۔ الارشاد فی معرفة حجج اللہ علی العباد، ج ۲، ص ١۳۵۔
[4] ۔ ایضا، ص ۲۵۔
[5] ۔ ایضا، ص ۲٦۔
[6] ۔ سید ابن طاووس ، الطرائف فی معرفة مذاھب الطوائف، ص ۵۲۰، الخیام، قم طبع اول، ١۴١۳ق۔
[7] ۔ ابن بابویہ ، محمد بن علی، الخصال، مھقق، مصحح، غفاری، علی اکبر، ج ۲، ص ۴٦٦، دفتر انتشارات اسلامی، قم، طبع اول، ١۳٦۲ش۔
 
زمرہ جات:   Horizontal 4 ،
ٹیگز:   حسن مثنی ،
دیگر ایجنسیوں سے (آراس‌اس ریدر)

ایرانی مشاہیر

- سحر ٹی وی

یادوں کے جھروکے

- سحر ٹی وی

جام جم - 14 دسمبر

- سحر ٹی وی