فائر اینڈ فیوری: تہلکہ انگیز انکشافات

فتویٰ اور پارلیمینٹ

کل بھوشن کے بعد اب محمد شبیر

سعودیہ فوج میں زبردستی بھرتی پر مجبور ہوگیا ہے؛ یمنی نیوز

پاکستان کی غیر واضح خارجہ پالیسی سے معاملات الجھے رہیں گے

پارلیمنٹ پر لعنت

نائیجیریا میں آیت اللہ زکزکی کی حمایت میں مظاہرہ

ایٹمی معاہدے میں کوئی خامی نہیں، امریکی جوہری سائنسداں کا اعتراف

سعودی عرب کے ولیعہد محمد بن سلمان مکار، دھوکہ باز، حیلہ گر اور فریبکار ہیں: قطری شیخ

امریکا نے دہشت گردی کے بجائے چین اور روس کو خطرہ قرار دے دیا

سلامتی کونسل میں پاکستان اور امریکی مندوبین کے درمیان لفظی جنگ

ایک اورماورائے عدالت قتل

کالعدم سپاہ صحابہ کا سیاسی ونگ پاکستان راہ حق پارٹی بھی اھل سیاسی جماعتوں میں شامل

امریکہ اور دہشتگردی کا دوبارہ احیاء

ایرانی جوان پوری طرح اپنے سیاسی نظام کے حامی ہیں؛ ایشیا ٹائمز

دنیائے اسلام، فلسطین اور یمن کے بارے میں اپنی شجاعت کا مظاہرہ کرے

شام کے لیے نئی سازش کا منصوبہ تیار

پاک فوج کیخلاف لڑنا حرام ہے اگر فوج نہ ہوتی تو ملک تقسیم ہوچکا ہوتا: صوفی محمد

امام زمانہ عج کی حکومت میں مذہبی اقلیتوں کی صورت حال

سعودی عرب نائن الیون کے واقعے کا تاوان ادا کرے، لواحقین کا مطالبہ

امریکہ کو دوسرے ممالک کے بارے میں بات کرنے سے باز رہنا چاہیے: چین

پاکستان میں حقانی نیٹ ورک موجود نہیں

سعودی عرب نے یمن میں انسانی، اسلامی اور اخلاقی قوانین کا سر قلم کردیا

پاکستان کو ہم سے دشمن کی طرح برتاؤ نہیں کرنا چاہیے: اسرائیلی وزیراعظم

آرمی چیف نے 10 دہشت گردوں کی سزائے موت کی توثیق کردی

بھارت: ’حج سبسڈی کا خاتمہ، سات سو کروڑ لڑکیوں کی تعلیم کے لیے

صہیونی وزیر اعظم کے دورہ ہندوستان کی وجوہات کچھ اور

پاکستانی سرزمین پر امریکی ڈرون حملہ، عوام حکومتی ایکشن کے منتظر

روس، پاکستان کی دفاعی حمایت کے لئے تیار ہے؛ روسی وزیر خارجہ

عام انتخابات اپنے وقت پر ہونگے: وزیراعظم

ناصرشیرازی اور صاحبزادہ حامد رضا کی چوہدری پرویزالہیٰ سے ملاقات، ملکی سیاسی صورتحال پر تبادلہ خیال

پارلیمنٹ نمائندہ ادارہ ہے اسے گالی نہیں دی جاسکتی: آصف زرداری

زائرین کے لیے خوشخبری: پاک ایران مسافر ٹرین سروس بحال کرنے کا فیصلہ

شریف خاندان نے اپنے ملازموں کے ذریعے منی لانڈرنگ کرائی، عمران خان

امریکہ کی افغانستان میں موجودگی ایران، روس اور چین کو کنٹرول کرنے کے لئے ہے

ایرانی پارلیمنٹ اسپیکر کی تہران اسلام آباد سیکورٹی تعاون بڑھانے پر تاکید

دورہ بھارت سے نیتن یاہو کے مقاصد اور ماحصل

ایوان صدر میں منعقد پیغام امن کانفرنس میں داعش سے منسلک افراد کی شرکت

امریکہ، مضبوط افغانستان نہیں چاہتا

عربوں نے اسرائیل کے خلاف جنگ میں اپنی شکست خود رقم کی

سیاسی لیڈر کا قتل

مقاصد الگ لیکن نفرت مشترکہ ہے

انتہا پسندی فتوؤں اور بیانات سے ختم نہیں ہوگی!

تہران میں او آئی سی کانفرنس، فلسطین ایجنڈہ سرفہرست

زینب کے قاتل کی گرفتاری کے حوالے سے شہباز شریف کی بے بسی

یورپ کی جانب سے جامع ایٹمی معاہدے کی حمایت کا اعادہ

بن گورین ڈاکٹرین میں ہندوستان کی اہمیت

دہشت گردی کے خلاف متفقہ فتویٰ

شام میں امریکی منصوبہ؛ کُرد، موجودہ حکومت کی جگہ لینگے

شفقنا خصوصی: کیا زینب کے قاتل کی گرفتاری کو سیاسی مقاصد کے لیے چھپایا جا رہا ہے؟

مسئلہ فلسطین، عالم اسلام کا اہم ترین مسئلہ ہے

پاپ کی طرف سے میانمار کے مسلمانوں کی عالمی سطح پر حمایت

امریکا مشترکہ مفادات کی بنیاد پر پاکستان سے نئے تعلقات بنانا چاہتا ہے، ایلیس ویلز

کالعدم تحریک طالبان پاکستان کا بینظیر بھٹو کو قتل کرنے کا دعویٰ

امریکہ، بیت المقدس کے بارے میں اپنے ناپاک منصوبوں ميں کامیاب نہیں ہوگا

پاکستان کے ساتھ تعلقات مزید مستحکم کرنےکےلیے پرعزم ہیں: امریکی جنرل جوزف ڈنفورڈ

اسلامی ممالک کو اختلافات دور کرنے اور باہمی اتحاد پر توجہ مبذول کرنی چاہیے

بھارت ایسے اقدامات سے باز رہے جن سے صورتحال خراب ہو، چین

عمران خان اور آصف زرداری کل ایک ہی اسٹیج سے خطاب کریں گے، طاہرالقادری

اسرائیلی وزیراعظم کا 6 روزہ دورہ بھارت؛ کیا پاکستان اور ایران کے روایتی دشمنوں کیخلاف علاقائی اتحاد ناگزیر نہیں؟

مودی، یاہو اور ٹرمپ کی مثلث

سید علی خامنہ ای، دنیا کے تمام مسلمانوں کے لیڈر ہیں؛ آذربائیجانی عوام

لسانی حمایت کافی نہیں، ایرانی معترضین تک اسلحہ پہنچایا جائے؛ صہیونی ادارہ

خود کش حملے حرام ہیں، پاکستانی علما کا فتوی

پاکستان افغان جنگ میں قربانی کا بکرا نہیں بنے گا ، وزیردفاع

امریکہ کے شمالی کوریا پر حملے کا وقت آن پہنچا ہے؛ فارن پالیسی

یمن پر مسلط کردہ قبیلۂ آل سعود کی جنگ پر ایک طائرانہ نظر

پاکستان اور امریکہ کے روابط میں اندھیر

مقبوضہ کشمیر، برہان وانی کے بعد منان وانی !!!

آج دنیا کی تمام اقوام کی تباہی و بربادی کا ذمہ دار امریکہ ہے، جنوبی پنجاب کو الگ صوبہ بنایا جائے،

پاک و ہند میں امن کی ضرورت ہے ، جنگ کی نہیں

2018-01-08 08:31:13

فائر اینڈ فیوری: تہلکہ انگیز انکشافات

F n f

 

صدر ٹرمپ کے وائٹ ہاؤس کے پوشیدہ امور کے بارے میں ’’ فایر اینڈ فیوری ‘‘ کے عنوان سے مائیکل وولف کی کتاب میں جو انکشافات کئے گئے ہیں ان سے ایسا تہلکہ مچا ہے کہ اس سے پہلے امریکا کے کسی صدر کی معیاد کے پہلے سال میں اتنے اسکنڈل اور اتنے راز آشکار نہیں ہوئے ہیں۔

صدر ٹرمپ نے اس کتاب کو جھوٹ کا پلندہ قرار دیا ہے اور اس کی اشاعت رکوانے کے جتن کئے لیکن کتاب کے ناشرین نے اس سرعت سے یہ کتاب شائع کر کے بازار میں پیش کی ہے کہ ٹرمپ کی ساری کوششیں دھری کی دھری رہ گئیں۔

 

کتاب میں ایک ایسے صدر کی تصویر کشی کی گئی ہے جسے صدارتی انتخاب میں اپنی جیت کے بارے میں یقین نہیں تھا اور ان کے اردگرد ان کے عملہ کے اراکین ہار کے بارے میں اپنا ذہن بنا چکے تھے۔ ٹرمپ اپنی جیت کی خبر سن کر آسیب زدہ نظر آتے تھے ۔

 

مائیکل وولف کا دعوی ٰہے کہ یہ کتاب ، صدر ، ان کے عملہ کے بیشتر سینیر اراکین اور دوسرے اہم افراد سے گفتگو پر مبنی ہے۔ 64سالہ مائیکل وولف کا کہنا ہے کہ انہوں نے جن لوگوں سے بھی گفتگو کی ان سب نے ٹرمپ کے بارے میں یہی کہا کہ وہ’’ بچہ کی طرح ‘‘ ہیں ۔ مائیکل وولف کا پلان کتاب ۹ جنوری کو شائعکرنے کا تھا لیکن انہوں نے چار روز پہلے یہ کتاب شائع کر کے ، وائیٹ ہاوس کے اہل کاروں کو اچھنبے میں ڈال دیا ہے اور وہ اس کتاب کی اشاعت روکنے کے لئے کوئی اقدام نہیں کر سکے ۔

 

 

 

 

 

کتاب میں انکشاف کیا گیا ہے کہ ٹرمپ کی بیٹی ایوانکا کے مطابق ٹرمپ کے نارنجی رنگ کے بال سنوارنے کا انداز در اصل سر کے بیچ میں جو گنجا ٹکرا ہے اس کو چھپانے کے لئے وضع کیا گیا ہے اور بالوں کو اپنی جگہ رکھنے کے لئے وہ بال سخت کرنے کا اسپرے استعمال کرتے ہیں ۔ کتاب میں یہ بھی انکشاف کیا گیا ہے کہ ٹرمپ شام ساڑھے چھ بجے برگر کا سینڈ وچ لے کر اپنے بیڈ روم میں چلے جاتے ہیں اور سونے سے پہلے دیر تک ٹیلی وژن دیکھتے ہیں۔

 

ٹرمپ کے سعودی عرب کے دورہ میں جو ان کا بیرون ملک کا پہلا دورہ تھا ، مائیکل وولف کی کتاب میں حیرت انگیز انکشافات کئے گئے ہیں۔ ریاض میں مسلم ممالک کے سربراہوں کے اجلاس کے دوران سعودیوں نے ٹرمپ ، ان کی بیوی ، بیٹی اور داماد جارڈ کوشنر کو سونے کی گولف گاڑیوں میں گھمایا تھا۔ اور ٹرمپ کے اعزاز میں شاہانہ دعوت دی تھی جس پر ساڑھے سات کروڑ ڈالر خرچ آئے تھے ۔ دعوت میں شاہی تخت کی مانند ایک کرسی رکھی گئی تھی جس پر صدر ٹرمپ کو بٹھایا گیا تھا۔

 

مائیکل وولف کے مطابق صدر ٹرمپ نے امریکا ٹیلی فون کر کے اپنے دوستوں کو بتایا تھا کہ سعودی عرب کا یہ دورہ بے حد آسان ، قدرتی اور کامیاب رہا اور افسوس کہ نا قابل وضاحت طریقہ سے اوباما ناکام رہے تھے اور انہوں نے سارے معاملات الجھا دئے تھے۔

 

مائیکل وولف کی کتاب سے یہ واضح ہو تا ہے کہ سعودی ولی عہد شہزادہ محمد بن سلمان کس طرح امریکا کے اعلی مہرہ بنے۔ وولف بیان کرتے ہیں کہ شہزادہ محمد بن سلمان اور ٹرمپ اور ان کے خاندان کے ساتھ تعاون جس تیزی سے بڑھا اس کی قدر مشترک در اصل یہ تھی کہ دونوں کو اس کا ادراک نہیں تھا کہ وہ کیا کر رہے ہیں۔ وولف نے لکھا ہے کہ سعودی ولی عہد نے جب ٹرمپ کی ٹیم کو یقین دلایا کہ ان کے پاس ٹرمپ کو دینے کے لئے بڑی اچھی خبر ہے تو انہیں وائٹ ہاوس آنے کی دعوت دی گئی۔ اور جب وائٹ ہاوس کی ملاقات میں ولی عہد نہایت گرم جوشی سے بغل گیر ہوئے تو اس سے ظاہر ہوتا تھا کہ یہ انداز ولی عہد کے اپنے اقتدار کے کھیل کا حصہ تھا اور وائٹ ہاوس کو اس کا احساس تھا اور وائٹ ہاوس نے بھی شہہ دی۔ اس کے جواب میں ولی عہد نے سودوں سے بھرا ٹوکرہ دیا اور ٹرمپ کے سعودی عرب کے دورہ کے موقع پر اعلانات کا وعدہ کیا۔

 

مائیکل وولف نے لکھا ہے کہ ریاض کے دورہ کے چند ہفتوں کے بعد ٹرمپ کااپنے دوستوں سے کہنا تھا کہ انہوں نے اور ان کے داماد کوشنر نے بڑی ترکیب سے شہزادہ محمد بن سلمان کو جو اس وقت نایب ولی عہد تھے ، اقتدار میں ابھرنے اور سعودی تخت کا ولی عہد بننے میں مدد دی ہے۔ مائیکل وولف نے لکھا ہے کہ ٹرمپ نے اپنے داماد کشنر کو مشر ق وسطی میں امن کے مشن پر اس لئے مامور کیا ہے کیونکہ وہ قدامت پسند یہودی ہیں اور ان میں مذاکرات کے بارے میں یہودیوں کی خاص اہلیت ہے۔ ان کا کہنا ہے کہ کوشنر ، نئے ہنری کسنجر ثابت ہوں گے ۔

 

اقوام متحدہ میں امریکا کی مندوب ، سکھ نژاد نکی ہیلے کے بارے میں بھی ’’فایر اینڈ فیوری ‘‘میں حیرت انگیز انکشافات شامل ہیں ۔ مایکل وولف نے لکھا ہے کہ نکی ہیلے کو ان کے عملہ کے اعلی اہل کار لوسی فر (شیطان) کی طرح جاہ پسند قرار دیتے ہیں۔ انہیں در اصل ٹرمپ کی بیٹی ایونکا ، ٹرمپ کے دائرے میں لائی ہیں ۔ یہ دونوں قریبی سہیلیاں ہیں۔

 

مائیکل وولف کے مطابق نکی ہیلے کے نزدیک ، ٹرمپ صرف ایک معیاد کے صدر ثابت ہوں گے اور اگر ایسا ہوا تو وہ ان کی جانشین بن سکتی ہیں۔ لیکن ٹرمپ کے خاندان کے افراد کی رائے میں نکی ہیلے وزیر خارجہ ریکس ٹلرسن کے متوقع استعفی کے بعد اس عہدہ کے لئے مناسب رہیں گی اور دینا پاول نکی ہیلے کی جگہ اقوام متحدہ میں مندوب کا عہدہ سنبھال سکتی ہیں ۔

 

ٹرمپ کے سابق مشیر خاص اسٹیو بینن کو جو گذشتہ اگست میں برطرف کر دیے گے تھے ، خطرہ تھا کہ نکی ہیلے جو بے حد عیار ہیں ٹرمپ کو شیشہ میں اتار نے میں کامیاب رہیں گی اس لئے انہوں نے ریکس ٹلرسن کے مستعفی ہونے کی صورت میں سی آئی اے کے سربراہ مایک پومپیو کو وزیر خارجہ کے عہدہ کے لئے آگے بڑھایا تھا۔

 

کتاب میں اسٹیو بینن کا یہ انکشاف صدر ٹرمپ کے لئے تشویش کا باعث ہوگا جس میں انہوں نے کہا ہے کہ انتخابی مہم کے دوران ، ٹرمپ کے بیٹے ٹرمپ جونییر نے ایک روسی وکیل سے ملاقات کی تھی جو بینن کے نزدیک غداری کے مترادف ہے۔ ممکن ہے کہ صدارتی انتخاب میں روسی مداخلت کے بارے میں تفتیش میں ٹرمپ جونییر کو شہادت دینے کے لئے طلب کیا جائے ۔ ٹرمپ کی بوکھلا ہٹ ان کے اس بیان سے واضح ہے کہ اسٹیو بینن کا دماغ پھر گیا ہے۔

 

 آصف جیلانی

Leave a Reply

Your email address will not be published. Required fields are marked *

زمرہ جات:  
دیگر ایجنسیوں سے (آراس‌اس ریدر)

ہم اتنے بے حس کیوں ہیں؟

- ایکسپریس نیوز

21 ویں صدی کے دو تقاضے

- ایکسپریس نیوز