سیہون: ہلاکتوں میں اضافہ، ’دہشت گردوں کے خلاف کارروائی‘
Most Popular (6 hours)

Two die in Venezuela protests

- دنیا نیوز

Most Popular (24 hours)

Most Popular (a week)

وی او اے
2 months ago

سیہون: ہلاکتوں میں اضافہ، ’دہشت گردوں کے خلاف کارروائی‘

پاکستان کے جنوبی صوبہ سندھ کے علاقے سیہون میں لعل شہباز قلندر کے مزار پر خودکش بم حملے کے بعد ملک بھر میں مشتبہ عسکریت پسندوں کے خلاف ’کریک ڈاؤن‘ یعنی ایک بڑی کارروائی شروع کی گئی ہے۔ سہیون میں حملے میں ہلاکتوں کی تعداد 80 سے زائد ہو گئی ہے، جن میں خواتین اور بچے بھی شامل ہیں۔ جب کہ وزیراعظم نواز شریف نے مسلح افواج اور قانون نافذ کرنے والے اداروں کو ہدایت کہ ہے کہ دہشت گردوں کے خاتمے کے لیے پوری قوت سے کارروائی کی جائے۔ سرکاری میڈیا کے مطابق ملک کے مختلف علاقوں میں سرچ آپریشن اور جھڑپوں میں 32 ’’دہشت گرد‘‘ مارے گئے، لیکن ملک کے مختلف علاقوں سے ملنے والی اطلاعات کے مطابق سکیورٹی فورسز کی کارروائیوں میں مارے جانے والے مبینہ شدت پسندوں کی تعداد اس سے زیادہ ہے۔ جب کہ اس کے علاوہ ملک کے مختلف حصوں سے درجنوں مشتبہ افراد کو حراست میں بھی لیا گیا ہے، جن میں سے لگ بھگ 40 افراد کو وفاقی دارالحکومت اسلام آباد اور اس کے جڑواں شہر راولپنڈی سے گرفتار کیا گیا۔ عہدیداروں کے مطابق کراچی کے علاقے منگو پیر کے علاوہ سپر ہائی وے پر سندھ رینجرز نے کارروائی کی جب صوبہ خیبر پختونخواہ میں بنوں اور پشاور میں ریگئی کے علاقوں میں سرچ آپریشن کیا گیا۔ اس کے علاوہ مہمند ایجنسی، کرم ایجنسی، بلوچستان میں کوئٹہ اور صوبہ پنجاب میں سرگودھا کے علاقوں میں مشتبہ عسکریت پسندوں کے خلاف کارروائیاں کی گئیں۔ ملک بھر بشمول وفاقی دارالحکومت اسلام آباد میں سکیورٹی بڑھا دی گئی ہے جب کہ داخلی اور خارجی راستوں کی کڑی نگرانی کی جاتی رہی۔ جمعہ کو ملک بھر مساجد اور امام بارگاہوں کے باہر بھی اضافی سکیورٹی انتظامات دیکھنے میں آئے اور وزیر داخلہ چوہدری نثار نے متعلقہ اداروں کو ہدایت کی کہ زیارات اور مزاروں کی حفاظت کے لیے اضافی انتظامات کیے جائیں۔ سیہون میں بم دھماکے کی ذمہ داری شدت پسند تنظیم ’داعش‘ نے قبول کی تھی۔ پاکستان میں رواں سال کے دوران ہونے والا یہ سب سے مہلک خودکش بم حملہ تھا جس میں درجنوں افراد موت کے منہ میں چلے گئے جب کہ بیسیوں زخمی ہوئے۔ تجزیہ کاروں کا کہنا ہے ملک میں تواتر کے ساتھ ہونے والے دہشت گرد حملے اس بات کی غمازی کرتے ہیں کہ عسکریت پسند اب بھی مربوط حملوں کی صلاحیت رکھتے ہیں۔ سابق سیکرٹری خارجہ تسنیم نورانی نے وائس آف امریکہ سے گفتگو میں کہا کہ حکومت اور سکیورٹی فورسز کسی طور پر دہشت گردوں کے خلاف کارروائی میں نرمی ن

Read on the original site

Two die in Venezuela protests

- دنیا نیوز