چیف جب ہاتھ ڈالتا ہے تو کسی سے نہیں ڈرتا، جسٹس ثاقب نثار
Most Popular (6 hours)

Most Popular (24 hours)

Most Popular (a week)

وی او اے
11 days ago

چیف جب ہاتھ ڈالتا ہے تو کسی سے نہیں ڈرتا، جسٹس ثاقب نثار

سپریم کورٹ نے منی لانڈرنگ سے متعلق کیس کی تحقیقات کیلئے مشترکہ تحقیقاتی ٹیم بنانے کا عندیہ دے دیا ہے۔ وفاقی تحقیقاتی ادارے ایف آئی اے نے 35 ارب روپے کی منی لانڈرنگ کی رپورٹ عدالت نے پیش کردی ہے۔ چیف جسٹس نے ریمارکس دئیے کہ ملک کے چوروں کو گرفت میں لائیں گے، کسی بڑے آدمی کے خلاف تحقیقات شروع ہوتی ہیں تو پولیس گردی شروع کر دی جاتی ہے۔ چیف جسٹس کی سربراہی میں تین رکنی بنچ نے جعلی بنک اکاونٹس سے منی لانڈرنگ کرنے کی تحقیقات میں تاخیر سے متعلق از خود نوٹس کی سماعت کی۔  ڈی جی ایف آئی اے بشیر میمن نے عدالت کو بتایا کہ انتیس مشکوک بنک اکاؤنٹس ہیں جو سمٹ بنک، سندھ بنک اور یونائٹڈ بنک میں کھولے گئے۔ اومنی گروپ سے رقم زرداری گروپ کو بھی منتقل ہوئی۔ چیف جسٹس نے استفسار کیا کہ اومنی گروپ کے اکاونٹس کو جعلی کیسے کہہ سکتے ہیں جس پر ڈی جی ایف آئی اے نے جواب دیا کہ اکاونٹ میں رقم جمع کرانے والے اصل لوگ ہیں۔ تاہم رقم جن اکاؤنٹس میں جمع ہوئی وہ اکاؤنٹس جعلی ہیں۔ جسٹس اعجازالاحسن نے استفسار کیا کہ جعلی اکاؤنٹس سے رقم واپس اپنے اکاؤنٹ میں لانے کا مقصد کیا ہے؟ چیف جسٹس نے استفسار کیا کہ جعلی اکاونٹس سے رقم کہاں گئی۔ لسٹ دیں کہ 29 اکاونٹس کس کس کے نام پر ہیں ۔ کچھ لوگ کہتے ہیں یہ اکاونٹس انہوں نے کھولے ہی نہیں۔ لگتا ہے کہ جعلی اکاونٹس کھول کر کالا دھن جمع کرایا گیا۔ دیکھنا یہ ہے کہ کالے دھن کو سفید کرنے کا بینیفشری کون ہے۔ چیف جسٹس نے کہا کہ اومنی گروپ کے مالک انور مجید کہاں ہیں؟ جس پر ان کے وکیل نے جواب دیا کہ انور مجید بیمار ہیں اور لندن میں اسپتال میں داخل ہیں۔ چیف جسٹس  نے ریمارکس دئیے کہ جب بھی اس طرح مقدمہ آتا ہے لوگ اسپتال چلے جاتے ہیں انور مجید سے کہیں آئندہ ہفتے ہر حالت میں پیش ہوں، اگر ایمبولینس میں بھی آنا پڑے تو عدالت آئیں۔ سابق صدر آصف علی زرداری کے وکیل فاروق ایچ نائک نے موقف اختیار کیا کہ عدالت کے منع کرنے کے باوجود ایف آئی اے نے آصف زرداری اور فریال تالپور کو مفرور قرار دے دیا ہے جو پری پول دھاندلی کے مترادف ہے۔ جسٹس اعجاز الاحسن  نے استفسار کیا کہ آپ کیا چاہتے ہیں کہ تحقیقات کو روک دیا جائے۔ فاروق ایچ نائک نے کہا کہ میرے موکل نہیں چاہتے کہ انکوائری روکی جائے۔ مگر روزانہ بلا کر جرم قبول کرنے کیلئے دباؤ ڈالا جاتا ہے جس پر چیف جسٹس نے ریمارکس دئیے کہ آصف زرداری اور فریال تالپور  ایف آئی اے کی انکوائری میں پ

Read on the original site