پیس جرنلزم – ملک کے فائدے کے لئے کی جانے والی صحافت
Most Popular (6 hours)

Most Popular (24 hours)

انکل چریا ہیں 

- ایکسپریس نیوز

عمر بن عبدالعزیز   (۲)

- ایکسپریس نیوز

ڈپریشن، خطرناک صورتحال

- ایکسپریس نیوز

Most Popular (a week)

ہم سب
8 days ago

پیس جرنلزم – ملک کے فائدے کے لئے کی جانے والی صحافت

پیس جرنلزم (Peace Journalism) یا صحافت برائے امن شعبہ ابلاغیات کا ایک اہم موضوع ہے جسے ناروے سے تعلق رکھنے والے ایک دانشورڈاکٹر جان گلتونگ (Johan Galtung) نے باقاعدہ اکیڈمک ڈسپلن کے طور پر فروغ دیا اور اس اعتبار سے انھیں اس شعبے کا بانی مانا جاتا ہے۔ ڈاکٹر گلتونگ کے مطابق امن کا تعلق محض تناؤ کے عدم وجود سے نہیں ہوتا بلکہ اس کے لئے انصاف کا وجود بھی ضروری ہے اسی لئے انھوں نے ’امن سب کے لئے‘ (peace for all) کے نعرے کی بنیاد پر پیس جرنلزم کی بنیاد رکھی۔ جان گلتونگ نے اپنے مقالات میں اسے دو اشاریوں منفی (Negative Peace) اور مثبت (Positive Peace) میں تقسیم کیا ہے۔ امن کے منفی اشاریے سے مراد کسی سوسائٹی میں تنازعات یا تشدد کا عدم وجود ہے جبکہ مثبت اشاریے سے مراد ایسا معاشرہ ہے جہاں انصاف، برابری اور ہم آہنگی جیسی اقدار کو پزیرائی حاصل ہو۔ آمرانہ معاشرے جہاں بظاہر حکومتی جبر کے سبب امن و امان نظر آتاہے لیکن اندر ہی اندر لاوا ابل رہا ہوتا ہے امن کے منفی اشاریوں کی تشریح کرتے ہیں کیونکہ موقع ملنے پر جب وہاں لاوا پھٹتا ہے تو بہت نقصان اٹھانا پڑتا ہے کیونکہ زیادہ دیر تک جبر کے ہتھکنڈوں سے لوگوں کو دبانا ممکن نہیں ہوتا، مسائل کا حل امن کے لئے ناگزیر ہے The post پیس جرنلزم ملک کے فائدے کے لئے کی جانے والی صحافت appeared first on ہم سب.

Read on the original site

سوٹا لگاتے ہو؟

- ایکسپریس نیوز