ساتویں ’’ہم ایوارڈز‘‘ میں “سنو چندا “ نے میدان مار لیا
Most Popular (6 hours)

Most Popular (24 hours)

Most Popular (a week)

وی او اے
15 days ago

ساتویں ’’ہم ایوارڈز‘‘ میں “سنو چندا “ نے میدان مار لیا

ہیوسٹن میں گذشتہ ایک ہفتے سے جاری گہما گہمی کا ہفتے کی رات ہونے والے ایوارڈز کے ساتھ ہی اختتام ہوا۔ ریڈ کارپٹ مقامی وقت کے مطابق ساڑھے پانچ اور ایوارڈز کی تقریب ساڑھے سات بجے طے تھی جس کے لیے شائقین چار بجے ہی این۔آر۔جی ارینا میں جمع ہونا شروع ہو گئے۔ لیکن ریڈ کارپٹ ساڑھے چھ اور تقریب نو بجے رات کو شروع ہوئی جس کا اختتام رات ایک بجے ہوا۔ آگے بڑھنے سے قبل کچھ حال ریڈ کارپٹ کا۔ ایک الگ ہال میں داخل ہوتے ہی ’’ ہم ٹی وی‘‘ نے اپنے لیے الگ ریڈ کارپٹ بچھا رکھا تھا اور وہاں سے دور ایک کونے میں باقی پریس کے لیے کارپٹ بچھا ہوا تھا ۔ چونکہ اس حال میں پرستاروں کا بھی ہجوم تھا لہذا  ’’ہزاروں لغزشیں حائل ہیں لب تک جام لانے میں‘‘ کے مصداق سجے بنے ستاروں کے باقی پریس تک پہنچنے میں ہزاروں سیلفیاں حائل تھیں۔ بہرحال پریس اور سیلفیوں کی دھینگا مشتی میں ساڑھے آٹھ بجے ریڈ کارپٹ کا اختتام ہوا۔ ہال کھچا کھچ بھرا ہوا نہیں تھا۔ کافی سیٹیں خالی تھیں۔ تقریب کا باقاعدہ آغاز پاکستان کے قومی ترانے سے ہوا جس کے بعد ہارون نے اپنے معروف ترانے “دل پاکستانی ہے‘‘ پر پرفارمنس دی۔ میزبانی کا آغاز میکال حسن اور علی رحمان خان نے کیا۔ ان کے ساتھ ساتھ بشری انصاری، صنم جنگ، عائشہ عمر اور احمد بٹ بھی میزبانی کے فرائض انجام دیتے رہے۔ حاضرین کی جانب سے سب سے زیادہ داد بشری اور احمد بٹ کے چٹکلوں پر ملی۔  ایوارڈ کے لیے اس بار جو ڈرامے نامزد ہوئے ان میں ’’ڈر سی جاتی ہے صلہ‘‘، ’’باندی‘‘، ’’تعبیر‘‘، ’’بیلا پور کی ڈائن‘‘، ’’عشق تماشا‘‘ اور ’’سنو چندا ‘‘شامل تھے ۔  ان تمام ڈراموں کے رائیٹرز، ڈائریکٹرز اور اداکاروں کو نامزد کیا گیا تھا۔ بہترین ڈرامے کا ایوارڈ جیتا ”سنو چندا ‘‘نے۔ بہترین میل اداکار فرحان سعید اور بہترین فی میل اداکارہ اقرا عزیز قرار پائیں۔ دونوں کو یہ ایوارڈ ڈرامہ سیریل ’’سنو چندا ‘‘ کے لیے دیا گیا۔ بہترین ڈرامہ ڈائریکٹر کا ایوارڈ  کاشف نثار کو ’’ڈر سی جاتی ہے صلہ‘‘ کے لیے دیا گیا۔ یہ ڈرامہ بچوں کے ساتھ زیادتی کے موضوع پر بنایا گیا تھا۔ کاشف کا کہنا تھا کہ یہ ڈرامہ انہوں نے دو بچیوں کا باپ ہونے کی وجہ سے پیش کیا۔ بہترین ڈرامہ رائیٹر کا ایوارڈ صائمہ اکرم چوہدری کو ’’سنو چندا‘‘ کے لیے اور بی گل کو ’’ڈر سی جاتی ہے صلہ‘‘ کے لیے ملا۔ موسٹ امپیکٹ فل اداکار اور منفی کردار کے دونوں ایوارڈ  ’’ڈر سی جاتی ہے صلہ کے لیے‘‘ نعمان اعجاز کے حصے میں آئے جس پر ان

Read on the original site

Gold rises Rs200 per tola

- اے آر وائی

اللہ کے نام پر معاف کیا

- ایکسپریس نیوز