زینب کا خط اپنے باپ امین کے نام – عامر حسینی

بنی اسرائیل کی حقیقت قرآن مجید کی روشنی میں

ارجنٹینا فٹبال ٹیم کی شکست کی کہانی چہروں کی زبانی

دھوپ اور بارش سے محفوظ رکھنے والی ’’ڈرون چھتری‘‘

میلانیا کی جیکٹ پر لکھا جملہ: مجھے واقعی کوئی فرق نہیں پڑتا کیا آپ کو پڑتا ہے؟

میرا اختلاف نواز شریف کے فائدے میں تھا، چوہدری نثار

10 غذائیں جو آپ کو ہر عمر میں جوان رکھیں

’ لگتا ہے سیاسی وڈیروں نے پمپ کھول لئے ہیں‘

ﺑﻘﯿﻊ ﺍﻭﺭ ﻗﺪﺱ ﭘﺮ ﺳﯿﺎﺳﺖ کیوں؟

کینسر کے خطرے سے بچانے والی بہترین غذا

داعش کی معاونت پر مذہبی رہنما کو سزائے موت

اسرائیلی وزیراعظم کی اہلیہ پر بھی فرد جرم عائد

پاکستان کی طالبان امیر ملا فضل اللہ کی ہلاکت کی تصدیق

مہران یونیورسٹی میں ڈیجیٹل ٹرانسفرمیشن سینٹر قائم کیا جائیگا،ڈاکٹر عقیلی

پرویز مشرف آل پاکستان مسلم لیگ کی صدارت سے مستعفی

ڈونلڈ ٹرمپ کی روسی صدر سے ملاقات کے لیے نئی حکمت عملی تیار

یمن میں سعودی جاسوسی ڈرون طیارہ تباہ

چھوٹی سی چیری بڑے فائدوں والی

بیگم کلثوم کی طبیعت قدرے بہتر پر خطرے سے مکمل طور پر باہر نہیں: میاں نواز شریف

انتخابی نشانات کی سیاست: ووٹر حیران، امیدوار پریشان

امریکہ افغان طالبان سے بات چیت کی خواہش کیوں ظاہر کر رہا ہے؟

آیت اللہ سید خامنہ ای نے قومی فٹبال ٹیم کو اچھی کاکردگی پر سراہا

بحرینی عدالت نے شیخ علی سلمان کو جاسوسی کے الزامات سے بری کردیا

فیفا ورلڈ کپ 2018: اسپین نے ایران کو 0-1 سے شکست دے دی

آئی بی اے کراچی میں منعقدہ پاکستان کی پہلی فائنل ائیر پروجیکٹس کی آن لائن نمائش کا احوال

امریکہ کی خارجہ پالیسی بحران سے دوچار

صحافی کے قتل کے خلاف بھارتی کشمیر میں ہڑتال، مظاہرے

زعیم قادری کیا شریف خاندان کے بوٹ پولش کر پائیں گے ؟

کیا عدالت فوج کے خلاف اقدام اٹھائے گی؟

کیا نواز شریف اور مریم نواز کا نام ای سی ایل میں شامل ہوگا ؟

’کراچی والوں کی جان ٹینکر مافیا سے چھڑائیں گے‘

پاکستان کے یہودی ووٹر کہاں گئے؟

پاکستان کی خاندانی سیاسی بادشاہتیں

یاہو‘ نے اپنی انسٹنٹ میسیج سروس ایپلی کیشن ’یاہو‘ میسینجر کو بند کرنے کا اعلان کردیا

انفیکشن کی بروقت شناخت سے دنیا بھرمیں ہزاروں لاکھوں جانیں بچائی جاسکتی ہیں

سفید سرکے کے کئی فوائد ہیں، اس طرح سیب کے سرکے کے بھی متعدد طبی فوائد ہیں

یمن تا فلسطین، دشمن ایک ہی ہے

کیا افغان سیکیورٹی اہلکار طالبان کو کنٹرول کر سکے گے ؟

ٹویٹر کیا ایسا کر پائے گا ؟

پاکستان میں سمندری پانی کیا قابل استعمال ہوگا ؟

عمران خان، آصف زرداری اور مریم نواز کے اثاثوں کی تفصیلات منظر عام پر آ گئیں

فٹبال ورلڈ کپ کے شوروغل میں دبی یمنی بچوں کی چیخیں

رپورٹ | یمن کی تازہ صورتحال ۔۔۔ یہاں سب بکنے لگا ہے !!!

دہشتگرد کالعدم جماعتوں کو الیکشن لڑنے کی اجازت دینے کی بجائے قانون کے شکنجے میں کسنے کی ضرورت ہے، علامہ راجہ ناصر عباس جعفری

انڈونیشیا کی جھیل میں کشتی الٹنے سے 200 افراد ہلاک

بلوچستان: سی ٹی ڈی آپریشن،خاتون سمیت 4 دہشت گرد ہلاک

ہائیڈرو گرافی کا عالمی دن ، پاک بحریہ کے سر براہ کا پیغام

امریکہ کے شکست قریب ہے؟

شیخ علی سلمان پر مقدمہ، غیر سرکاری تنظیموں کا احتجاج

عمران، شاہد خاقان، گلالئی،فہمیدہ مرزا، فاروق ستار، لدھیانوی، مشرف کے کاغذات مسترد

ایران نے امریکی صدر سے بات چیت کا امکان مسترد کر دیا

راہ حق پارٹی، جے یو آئی (ف) کے آشرباد سے کالعدم جماعتوں کا سیاسی پلٹ فارم

لندن کی سڑکوں پر بھاگتا پاکستانی سیاست دان

بن زاید کی اسرائیلی عہدے داروں سے ملاقات ؟

انتخابات 2018: الیکشن کمیشن نے ساڑھے تین لاکھ فوجی اہلکاروں کی خدمات مانگ لیں

علماء یمن نے بڑا کردیا

چوہدری نثار تھپڑ مار کیوں نہیں دیتے؟

ٹرمپ بھیڑیا ہے

ٹرمپ نے بوکھلاہٹ میں شمالی کورین جنرل سے مصافحہ کے بجائے سلیوٹ کر ڈالا

الیکشن کمیشن پاکستان راہ حق پارٹی کی رجسٹریشن منسوخ کرے

اسرائیلی فوج نے اپنا الحاج شیخ الاسلام متعارف کرادیا – عامر حسینی

این اے 53 سے عمران خان کے کاغذات نامزدگی مسترد

الحدیدہ۔۔۔اب میڈیا خاموش کیوں ہے!؟

کیا احد چیمہ شہباز شریف کے لیے خطرے کی گھنٹٰی ہے؟

فضل اللہ کی ہلاکت کے بعد امریکا پاکستان سے کیا مطالبہ کرے گا؟

یمن میں پاکستانی لاشیں کیا کر رہی ہیں؟

جدید تر ہوتی جوہری ہتھیار سازی: آرمجدون زیادہ دور نہیں

نواز شریف اور ان کی بیٹی کا کردار سامنے لانا چاہتا ہوں، چوہدری نثار

مسلم لیگ نواز اور نادرا چئیرمین کے مبینہ ساز باز کی کہانی

آنیوالے انتخابات میں کسی مخصوص امیدوار کی حمایت نہیں کرتے، علامہ عابد حسینی

امریکی مرضی سے ملی حکومت پر لعنت بھیجتا ہوں، سراج الحق

2018-01-12 20:37:14

زینب کا خط اپنے باپ امین کے نام – عامر حسینی

26196325_10156011937509561_3323691734305270819_n-768x541

پیارے بابا!

میں نے اپنے خدا سے کچھ لمحات مستعار لیکر آپ کو یہ خط لکھ رہی ہوں۔آپ سے مخاطب ہونے کا خود مجھ میں حوصلہ نہیں ہے۔مگر کیا کروں آپ اور امی کی تکلیف دیکھی نہیں جاتی تو میں یہ سب لکھنے بیٹھ گئی ہوں۔

بابا! جب تکلیف کے جہنم کی اتھاہ گہرائیوں میں ڈوبتے ہوئے،میری سانس اکھڑگئی اور میرے پامال جسم سے میری روح جدا ہوگئی تھی تو میں اچانک اسفل مکان سے مکان علیا تک آگئی اور یہاں ہر طرف مجھے پریوں اور حوروں نے اپنی آغوش میں لے لیا اور میں نجانے کب تک سوتی رہی اور پھر اٹھی تو مجھے ایک نورانی چہرے والی عورت نے اپنے آغوش میں لے لیا۔سیاہ لباس میں ملبوس میں اس عورت کی شفقت مجھے بالکل امی کی طرح محسوس ہوئی اور یہ مجھے تھپکی دیتی رہی۔کہنے لگی،’ بیٹی! جتنا کرب اور عذاب تم نے سہنا تھا،سہہ لیا، اب راضی و برضا ہوکر یہاں رہو،یہ وہ جگہ جہاں کوئی کرب اور کوئی تکلیف اب تمہیں چھو بھی نہیں سکے گی۔اور اب کوئی اور کٹھن منزل نہیں رہی۔دکھ اور تکلیف کی دنیا پیچھے رہ گئی ہے۔’ یہ کہتے ہوئے بھی اس عورت کی آنکھوں میں،میں نے گہرے دکھ کے سائے دیکھے اور چہرہ مجسم اداسی تھا۔

بابا! اس مکان علیا میں،میری سوچ کو جیسے پر لگ گئے ہوں۔اور مجھے لگتا ہے کہ میں ایک دم سے بڑی ہوگئی ہوں۔اب مجھے چیزیں خودبخود سمجھ آنے لگی ہیں۔میں اس مجسم اداسی عورت کی آغوش میں حدت مادر محسوس کررہی تھی اور میں نے بے اختیار اس شفیق مہربان مثل مادر عورت سے پوچھ ہی لیا،’آپ کون ہیں؟’ تو اس عورت نے انتہائی درد بھری آواز میں مجھ سے کہا،’ میری غریب شہر بیٹی! میں تمہاری ہم نام ہوں۔مجھے زینب کہتے ہیں،شریکۃ الحسین میرا لقب ہے اور لوگ مجھے ‘ام المصائب’ بھی کہتے ہیں۔’ یہ سب سنکر میں نے ایک دم سے آنکھیں بند کرلیں اور میں نے آپ اور امی کو یاد کیا تو ایک دم سے جیسے کسی نے میرے سامنے فاصلے سمیٹ دیا ہو اور میں وہاں قصور میں اپنے گھر میں پہنچ گئی،میں نے دیکھا کہ ایک چارپائی پہ میرا جسم کفن میں لپٹا پڑا ہے اور امی،خالائیں، بہنیں اور بھائی اور آپ پاس کی رشتہ دار عورتیں بین کررہی ہیں۔میں نے زرا دور نظر دوڑائی تو میں نے دیکھا کہ وقت کے ظالموں کا ٹولہ قاتل جنسی درندوں سے لوگوں کی توجہ بٹانے اور ان کو آزادی سے وحشیانہ کھیل کھیلنے دینے والے حکمرانوں کے تخت کو بچانے والے آپ اور امی کو ہی میرے ساتھ ہوئے ظلم کا الزام دے رہے ہیں۔یہ سب دیکھ کر میرا دل دکھ سے بھر گیا اور میں آپ اور امی کو حوصلہ دینے کے لئے ہاتھ آگے بڑھانے کو تھی کہ کسی نے میرا ہاتھ پکڑلیا۔میں نے آنکھیں کھول دیں۔

یہ وہی مثل مادر شفیق تھیں ،میرا ہاتھ تھامے ہوئے کہنے لگیں،’بٹیا ! یہ آج کی روایت نہیں ہے۔یہ چودہ سو سال سے جاری روایت ہے کہ مقتول کو خود اس کے قتل کا سزاوار ٹھہرایا جائے۔اور اس کے مظلوم وارثوں کا غم بٹانے کی بجائے ان کو ہی الزام دیا جائے۔میں نے یہ مناظر کربلاء سے دربار کوفہ و دمشق میں کئی بار دیکھے تھے اور آج بھی دیکھتی ہوں کہ ہم سب شہداء و متاثرین کرب و بلاء کو انصاف کب ملے گا۔اس وقت تم جس خطے سے آئی ہو وہاں ایک ایسا حکمران ٹولہ برسراقتدار ہے جس کے مربی حجاز پہ مسلط آل سعود ہیں جنھوں نے مکّہ و مدینہ پہ قبضہ کرنے کے بعد ہماری قبروں سے بھی انتقام لیا تھا اور جن کی یہ تعریف کرتے ہیں انھوں نے میرے بھائی اور اپنے رسول صلی اللہ علیہ وآلہ وسلم کے نواسے سمیت خانوادہ رسول کے سروں کو نیزے پہ بلند کرکے ہمیں ننگے سر و پیر دربار یزید لعین میں پیش کیا تھا اور اپنے ظلم کو حق اور ہماری مظلومیت کی نفی کی تھی۔ہم نے صبر اور ثابت قدمی دکھائی تھی۔اور تمہارے والدین بھی یہی کررہے ہیں اور ظالموں کے مقدر میں خائب و خاسر ہونا لکھ دیا گیا ہے۔’

ابا! میں آپ کو بھی کہتی ہوں کہ صبر اور ثابت قدمی کی تلقین کرتی ہوں۔ظلم کی رات بس ختم ہونے کو ہے۔ظالم حکمران ٹولہ اپنے انجام کو پہنچے گا۔اور آپ کے زخموں پہ نمک چھڑکنے والوں کے دن بھی تھوڑے ہیں۔یہاں مجھ جیسی اور بچیاں اور بچے موجود ہیں۔یہ سب یہاں بہت آرام سے ہیں اور عنقریب ظالم اپنے ظلم کا بدلہ پائیں گے۔اگر یزیدیت کی آندھیاں ہیں تو ان کے سامنے کار زینبی ادا کرنے والوں کی بھی کمی نہیں ہے۔امی کو کہنا کہ وہ گھبرائیں مت،اور ان اللہ مع الصابرین اور انا للہ وانا الیہ راجعون کا ورد کریں اور اول و آخر درود و سلام کی پابندی کریں۔بے شک اللہ کے ذکر میں دلوں کا سکون ہے۔

فقط والسلام
تمہاری مظلوم بیٹی زینب درگوش زینب بنت علی سلام اللہ علیھا

 

زمرہ جات:  
ٹیگز:  
دیگر ایجنسیوں سے (آراس‌اس ریدر)

گھر اور گھرانہ

- سحر نیوز

یادوں کے جھروکے

- سحر نیوز

ہفتہ نامہ - 22 جون

- سحر ٹی وی