ظہورکا مطلب امام زمانہ(عج) کا آنا ہے یا انہیں لانا ہے؟

شعیب میر : ایک جیالا خلاق فطرت نہ رہا – عامر حسینی

امریکا کا پاکستان میں اپنے سفارتکاروں سے برے سلوک کا واویلا

فوج مخالف بیانیے سے دھمکیوں تک: نواز شریف کی مریم کے خلاف مقدمات پر سخت تنبیہہ

سعودی کفیلوں کی جنسی درندگی: بنگلہ دیشی خاتون ملازمہ کی دلدوز کہانی

جنرل زبیر کی اسرائیل کو دھمکی کے پس پردہ محرکات :امریکہ نے اسرائیل کو پاکستان کے ایٹمی اثاثوں پر حملے کا گرین سگنل دیدیا

رمضان المبارک کے آٹھویں دن کی دعا

ادارہ جاتی کشمکش اور نواز شریف کا بیانیہ: کیا فوج مشکل میں گھر گئی ہے؟

ماہ رمضان کی دعاوں کا انتظار کے ساتھ ارتباط

امریکی حکام انتہا پسندانہ سوچ کے حامل ہیں، ایرانی صدر

پاکستان میں 35 لاکھ افراد بے روزگار ہیں، رپورٹ

نوازشریف کا مقصد صرف اپنی جائیداد بچانا ہے: فواد چوہدری

ایران ایٹمی معاہدے سے پہلے والی صورت حال پر واپسی کے لیے تیار

محمد بن سلمان کو آل سعود خاندان میں نفرت اور دشمنی کا سامنا

اسرائیل کو صفحہ ہستی سے مٹانے کے لیے پاکستان کو صرف12 منٹ درکار ہیں: جنرل زبیر حیات

روزہ رکھنے والے مسلمان معاشرے کیلیے سیکیورٹی رسک ہیں، ڈنمارک کی وزیر کی ہرزہ سرائی

سعودی حکومت کے خلاف بغاوت کی اپیل: کیا آل سعود کی بادشاہت کے خاتمے کا وقت آن پہنچا؟

انٹیلی جینس بیورو (آئی بی) کے خفیہ راز

’سعودی عرب عراق کو میدان جنگ بنانے سے احتراز کرے‘

رمضان المبارک کے ساتویں دن کی دعا

نگراں وزیراعظم کیلیے وزیراعظم اور قائد حزب اختلاف میں ڈیڈلاک برقرار

کیا نواز شریف کی جارحیت تبدیلی لا سکتی ہے؟

کیا لشکر جھنگوی تحریک طالبان کی جگہ سنبھال چکی ہے؟

جوہری ہتھیاروں سے لیس ممالک دنیا کو دھمکا رہے ہیں

مجھے کیوں نکالا: نواز شریف کے احتساب عدالت میں اہم ترین انکشافات

بغداد میں العامری کی مقتدی الصدر سے ملاقات، حکومت کی تشکیل پر تبادلہ خیال

دہشت گردوں کے مکمل خاتمے تک شام میں ہی رہیں گے، ایران

رمضان المبارک کے چھٹے دن کی دعا

ایران نے رویہ تبدیل نہ کیا تو اسے کچل دیا جائے گا، امریکی وزیرخارجہ کی دھمکی

کیا بغدادی انتقام کی کوئی نئی اسکیم تیار کر رہا ہے؟

بحرین میں خاندانی آمریت کے خلاف مظاہرے

ماہ رمضان میں امام زمانہ(ع) کی رضایت جلب کرنےکا راستہ

ایم آئی، آئی ایس آئی کا جے آئی ٹی کا حصہ بننا نامناسب تھا، نوازشریف

فضل الرحمان کی فصلی سیاست: فاٹا انضمام کا بہانا اور حکومت سے علیحدگی

مذہبی جذباتیت کا عنصر اور انتخابات

مادے کا ہم زاد اینٹی میٹر کیا ہوا؟

ایرانی جوہری ڈیل سے امریکی علیحدگی، افغان معیشت متاثر ہو گی

امریکہ ایرانی قوم کو گھٹنے ٹیکنے پر مجبور نہیں کرسکتا

رمضان المبارک کے پانچویں دن کی دعا

ماہ مقدس رمضان میں غیر اعلانیہ لوڈشیڈنگ اور ناجائز منافع خوری نے عوام کو عذاب میں مبتلا کررکھا ہے: علامہ مختار امامی

کیا سویلین-ملٹری تعلقات میں عدم توازن دکھانے سے جمہوری نظام خطرے میں پڑگیا؟ – عامر حسینی

روزے کا ایک اہم ترین فائدہ حکمت ہے

نگراں وزیراعظم پر حکومت اور اپوزیشن میں اتفاق ہوگیا، ذرائع

موٹروے نہیں قوم بنانا اصل کامیابی ہے: عمران خان

ایک چشم کشا تحریر: عورتوں کو جہاد کے ليے کيسے تيار کيا جاتا ہے؟

روزہ خوروں کی نشانیاں: طنزو مزاح

ترک صدر ایردوآن اور سود، ٹِک ٹِک کرتا ٹائم بم

آل سعود کی انسانی حقوق کی خلاف ورزیاں: غیر ملکی طاقتوں کے ساتھ روابط کے الزام میں سات خواتین کارکن گرفتار

فلسطینیوں کی لاشوں پر امریکی سفارتخانہ قائم

افسوس امت مسلمہ کی ناگفتہ بہ حالت پر 57 اسلامی ممالک خاموش ہیں، علامہ ریاض نجفی

رمضان المبارک کے چوتھے دن کی دعا

خاص الخاص روزے کا ذائقہ چکھنےکا راستہ

امریکی اسکول فائرنگ میں جاں بحق پاکستانی سبیکا شیخ کے خواب پورے نہ ہوسکے

اگر ہم بیت المقدس کا دفاع نہ کرسکے تو مکہ کا دفاع نہیں کرپائیں گے: صدر اردوغان

یورپ نے امریکی پابندیاں غیر موثر بنانے کے لئے قانون سازی شروع کر دی

سول ملٹری تعلقات: پاکستانی سیاست کا ساختیاتی مسئلہ

پاکستان کا اگلا نگران وزیر اعظم کون ہو گا؟

کیا سعودی ولی عہد محمد بن سلمان بغاوت میں ہلاک ہو گئے ہیں؟

تحریک انصاف نے حکومت کے پہلے 100 دن کا پلان تیار کرلیا

کیوبا میں مسافر طیارہ گر کرتباہ، 110 افراد ہلاک

غزہ میں اسرائیلی مظالم کی آزادانہ اورشفاف تحقیقات کرائی جائے، پاکستان

رمضان المبارک کے تیسرے دن کی دعا

رمضان الہی ضیافت کا مہینہ

امریکی سفارتخانہ کی بیت المقدس منتقلی مسترد کرتے ہیں، علامہ ساجد نقوی

بشارالاسد کی روسی صدر ولادیمیر پیوتن سے ملاقات

مریخ پر بھیجے گئے سب سے چھوٹے سیٹلائٹ سے زمین کی پہلی تصویر موصول

ایران نے مقبوضہ فلسطین میں صہیونی مظالم کی عالمی تحقیقات کا مطالبہ کردیا

62 شہید اور 2770 زخمی اور دنیا خاموش تماشائی

فلسطینی مظاہرین کو دہشت گرد کہنا ’توہین آمیز‘ ہے، روسی وزیر خارجہ

بھولے بادشاہ کا غصہ اور نفرت

نواز شریف کی سیاسی خود کشی: کیا یہ ایک سوچی سمجھی سکیم ہے؟

2018-05-12 23:24:38

ظہورکا مطلب امام زمانہ(عج) کا آنا ہے یا انہیں لانا ہے؟

IMG18532801

اسلامک سائنسز اینڈ کلچرل انسٹی ٹیوٹ کے علمی بورڈ کےرکن حجۃ الاسلام والمسلمین رحیم کارگرنےاپنی کتاب( مہدویت اور دوران ظہور) میں لکھا ہے:

قرآنی آیات میں ایک اہم مسئلہ کہ جس کی کئی مرتبہ وضاحت کی جاچکی ہے، اس کائنات ، تاریخ اورمعاشرے پرحاکم قوانین کا مسئلہ ہے۔ بہت سی آیات کےمطابق انسانی تاریخ اورانسانوں کی تقدیرایک خاص نظام کےماتحت ہےاس طرح کہ ہرقسم کی تبدیلی کچھ مشخص اورمعین قوانین کےتابع ہےکہ جو دنیا کی تدبیرکےلیےاللہ کی جانب سے مشخص ہیں ۔ قرآنی تعبیرات میں انہیں( الہی سنتوں) کےعنوان سے یاد کیا گیا ہے۔

شاید ان سنتوں میں سے ایک سنت کو( اپنی کوشش اورمحنت کےمطابق ثواب ملنےکی سنت کا نام دیا جاسکتا ہے۔ اس سنت کےمطابق الہی نعمتوں سےاستفادہ کرنا انسان کی کوشش اورمحنت سےمربوط ہے اوریہ انسان ہی ہےکہ جو اپنےاختیار اورعمل کے ذریعے اپنےآپ اورمعاشرے کو آگے لےکرجاسکتا ہے اورتاریخ کو تکامل کی منزل پر فائزکرسکتا ہےیا سستی اورمحنت نہ کرنےکی وجہ سے الہی نعمتوں کو ضائع کردیتا ہے اورپھرزوال کی طرف جانے لگتا ہے۔

قرآن کریم اس سنت کےبارے میں فرماتا ہے: «وَ أَنْ لَيْسَ لِلاْءِنْسانِ إِلاّ ما سَعى وَ أَنَّ سَعْيَهُ سَوْفَ يُرى»[1] بنابریں الہی نعمتوں کی عطا انسان کی کوشش اورمحنت کی کیفیت سے وابستہ ہے۔ البتہ اس چیزکومدنظررکھنا چاہیےکہ اس سنت کے ساتھ ساتھ اللہ کی غیبی امداد اورتائید کہ جو ضروری مواقع پرپاکیزہ اورمصلح انسانوں کی مدد کے لیے آتی ہے، ختم  نہیں ہوتی ہےبلکہ جب بھی انسان ، الہی ذمہ داریوں کےمقابلے میں ایک حد تک اپنی ذمہ داریوں پرعمل کریں تو یہ سنت نافذ ہوجائے گی۔

اللہ تعالیٰ فرماتا ہے: «يا أَيُّهَا الَّذِينَ آمَنُوا إِنْ تَنْصُرُوا اللّهَ يَنْصُرْكُمْ وَ يُثَبِّتْ أَقْدامَكُمْ»[2].[ 3] اس آیہ مجیدہ کی بنا پراس سنت کےفعلیت تک پہنچنےاورمومنین کی نصرت ان کی جانب سے کچھ فرائض کی انجام دہی کےساتھ مشروط ہے۔

اس مقدمہ کے پیش نظر واضح ہوجاتا ہےکہ حضرت امام مہدی علیہ السلام کےلیےآنا کی تعبیربھی استعمال ہوسکتی ہےاورلانا کی تعبیر بھی؛ یعنی لوگوں یا کم ازکم موحدین اور مومنین اپنی ذمہ داریوں پرعمل کریں اورآنحضرت کےظہورکےلیےآمادہ ہوں اورقیام کی راہ ہمواکریں۔

دوسری جانب اللہ تعالیٰ معاشرے کےحالات کے پیش نظراور دنیا کی ضرورت کے مطابق جب بھی ارادہ کرےگا قیام متحقق ہوجائےگا۔ اس اعتبارسےامام مہدی علیہ السلام کے لیے (آنا) کی تعبیراستعمال ہوسکتی ہے اورممکن ہےکہ ارادہ الہی کی بنا پراوربشرکی شدید ضرورت کے پیش نظر بعض حالات اورشرائط کا منتظرنہ رہے۔ لیکن جو چیز یہاں پر اہمیت رکھتی ہے وہ انسانوں کا ارادہ اوراختیار ہے۔ کیونکہ بعض امورانسانوں کے اختیار میں دیے گئے ہیں اوران سےمطالبہ کیا گیا ہےکہ وہ اس راہ پرگامزن رہیں اورہرگز سستی اورکاہلی کا مظاہرہ نہ کریں۔ درحقیقت تاریخ کے متعالی فلسفہ( دنیا کے مستقبل کے بارے میں دینی نقطہ نظر) کے مطابق بشرکا مستقبل جبری اورالزامی نہیں ہے بلکہ انسانوں کے ارادے سےمربوط ہے اورجب تک تمام لوگوں کا مطالبہ نہ ہو اس وقت تک ظہورکا احتمال بہت کم ہے۔

لیکن فلاسفہ اورمختلف نظریاتی فرقوں جیسے ہیگل، مارکس اورکانٹ وغیرہ کی نظرمیں تاریخ کا مستقبل جبری ہےاور تاریخ کے مقصد اورراستےکی تشکیل میں انسانوں کے پاس کوئی اختیارنہیں ہے۔(۴)

الہی سنتوں اوراصولوں کی بنا پربھی ہرمعاشرے کی تقدیراس معاشرے کےنقطہ نظراور ارادے سے وابستہ ہے۔ یعنی لوگوں کا اجتماعی ارادہ ، راستہ ہموارکرنےکا سبب بنتا ہے۔ یہی وجہ ہےکہ بعض روایات میں راہ ہموارکرنے والوں کی طرف اشارہ کیا گیا ہےکہ جو امام مہدی علیہ السلام کےظہورکا سبب بنیں گے:«يخرج ناس من المشرق فيوطئون للمهدى يعنى سلطانه» زمین کےمشرق سے لوگوں کا ایک گروہ نکلےگا جوامام مہدی علیہ السلام کی حکومت کی راہ ہموارکرے گا۔(۵)

مآخذ :

[1].نجم 53، آيه 40 – 39.

[2].محمد 47، آيه 7.

[3].فصلنامه انتظار، ش 7، ص 232.

 [4].ر.ك: نگارنده، آينده جهان، ص 45-34.

[5]. بحارالانوار، ج 51، ص 87 از رسول گرامى اسلام.

 

Leave a Reply

Your email address will not be published. Required fields are marked *

زمرہ جات:   Horizontal 3 ،
دیگر ایجنسیوں سے (آراس‌اس ریدر)

یادوں کے جھروکے

- سحر ٹی وی

جام جم - 24 مئی

- سحر ٹی وی