بے نظیر کی تصاویر سے ریحام کی کتاب تک

عراق: مقتدیٰ الصدر نے العبادی کیساتھ سیاسی اتحاد کا اعلان کر دیا

عمران کو میانوالی سے الیکشن لڑنے کی اجازت مل گئی

شہباز شریف 2 روزہ دورے پر کراچی پہنچ گئے

ذہنی تناؤ بینائی میں نقصان کی براہِ راست یا بالواسطہ طور پر وجہ بن سکتا ہے

فٹبال ورلڈ کپ 2018: ژکا اور شکیری کے جشن کے خلاف انکوائری

ہم ملک میں شریعت محمدیؐ کے نفاذ کیلئے اسلام آباد کا اقتدار چاہتے ہیں، مولانا فضل الرحمان

بریگزٹ کے حامیوں اور مخالفین کے مظاہرے

شکست تک عمران خان انسان نہیں بنیں گے،خواجہ سعد رفیق

سعودی عرب کو ہتھیاروں کی فروخت بند کی جائے، کوربین

گوگل کروم کا وہ فیچر جو سست کمپیوٹر کو تیز کردے

پاراچنار، 37 سال قبل صدہ سے بے دخل اہل تشیع خاندانوں کی واپسی + تصاویر

بلوچستان: پرانے چہروں کا نیا انتخاب

رجب طیب اردوغان کی کامیابی اور ایران کی مبارکباد

مقبوضہ کشمیرمیں بڑھتے ہوئے مظالم

خون پھر خون ہے ٹپکے گا تو جم جائے گا

کالعدم دہشت گرد تنظیم تحریکِ طالبان کی قیادت ایک بار پھر محسود جنگجوؤں کے ہاتھوں میں

تارکین وطن قبول نہ کرنے والی یورپی ریاستوں پر پابندی ہونی چاہیے: فرانسیسی صدر

ترکی انتخابات: رجب طیب اردوان کی فتح کا اعلان کردیا گیا

بھارت میں پاکستانی قیدیوں کو عبادت تک نہیں کرنے دی جاتی

امریکی صدر کے داماد جیرڈ کشنر اسرائیل پہنچ گئے، ہزاروں فلسطینیوں کا شدید احتجاج

ایران نے ایٹمی معاہدے سے علیحدگی کی دھمکی دے دی

اسرائیلی وزیراعظم کی سعودی ولی عہد سے اردن میں ملاقات

انگلینڈ کی پاناما اور کولمبیا کی پولینڈ کو شکست، سینیگال جاپان کا میچ برابر

چاول کے دانے سے بھی چھوٹا منفرد کمپیوٹر

فیس بک نیا اور دلفریب فیچر تیار کرنے میں مصروف

انگلینڈ کا آسٹریلیا کے خلاف ایک روزہ سیریز میں کلین سوئپ

جسمانی وزن میں کمی اور توند سے نجات کا بہترین حل

پاک افغان سرحد پر باڑ لگانے والے فوجی اہلکاروں پرفائرنگ،ایک شہید

کراچی:لاپتہ افراد کیس کی سماعت کے دوران سپریم کورٹ میں چیخ وپکار

کسی ٹکٹ کا محتاج نہیں، 25 جولائی کو مخالفین کی ضمانتیں ضبط ہوں گی: چوہدری نثار

پرویز رشید اور چوہدری نثار کی جنگ: اندرونی کہانی

افغانستان میں شیعہ عالم دین کے قتل کے واقعے کی مذمت

ہم ایران کے ساتھ ہیں: چین

سیاسی کالعدم جماعتیں اور گرے لسٹ کی تلوار

کیا ترک انتخابات ایک نئی قوم کو جنم دیں گے؟

شہید بھٹو پہلی وزیراعظم خاتون تھیں جو وزیراعظم ہوتے ہوئے بچے کی پیدائش کے عمل سے گزریں

ورلڈ کپ میں تیونس کو بیلجیئم کے خلاف 2-5 سے شکست

مفتی نور ولی محسود تحریکِ پاکستان طالبان کے نئے امیر مقرر

کیا تیونس کا حج بائیکاٹ آل سعود کو یمن پر مظالم سے روک سکتا ہے؟

جنوبی وزیرستان: فوجی کارروائی میں 6 دہشت گرد ہلاک، 2 جوان شہید

میری خوشی کی انتہا اس وقت نہ رہی جب نیمار میرے ساتھ آ کر کھڑا ہو گیا: احمد رضا

این اے 243 کراچی: عمران خان کے کاغذات نامزدگی کےخلاف اپیل مسترد

ملا فضل اللہ کی موت پر بھارت میں کھلبلی

الحدیدہ جنگ: 25000 کا بے بس لشکر

کیا زعیم قادری نے ’قلعہ لاہور‘ میں شگاف ڈال دیا؟

بنی اسرائیل کی حقیقت قرآن مجید کی روشنی میں

ارجنٹینا فٹبال ٹیم کی شکست کی کہانی چہروں کی زبانی

دھوپ اور بارش سے محفوظ رکھنے والی ’’ڈرون چھتری‘‘

میلانیا کی جیکٹ پر لکھا جملہ: مجھے واقعی کوئی فرق نہیں پڑتا کیا آپ کو پڑتا ہے؟

میرا اختلاف نواز شریف کے فائدے میں تھا، چوہدری نثار

10 غذائیں جو آپ کو ہر عمر میں جوان رکھیں

’ لگتا ہے سیاسی وڈیروں نے پمپ کھول لئے ہیں‘

ﺑﻘﯿﻊ ﺍﻭﺭ ﻗﺪﺱ ﭘﺮ ﺳﯿﺎﺳﺖ کیوں؟

کینسر کے خطرے سے بچانے والی بہترین غذا

داعش کی معاونت پر مذہبی رہنما کو سزائے موت

اسرائیلی وزیراعظم کی اہلیہ پر بھی فرد جرم عائد

پاکستان کی طالبان امیر ملا فضل اللہ کی ہلاکت کی تصدیق

مہران یونیورسٹی میں ڈیجیٹل ٹرانسفرمیشن سینٹر قائم کیا جائیگا،ڈاکٹر عقیلی

پرویز مشرف آل پاکستان مسلم لیگ کی صدارت سے مستعفی

ڈونلڈ ٹرمپ کی روسی صدر سے ملاقات کے لیے نئی حکمت عملی تیار

یمن میں سعودی جاسوسی ڈرون طیارہ تباہ

چھوٹی سی چیری بڑے فائدوں والی

بیگم کلثوم کی طبیعت قدرے بہتر پر خطرے سے مکمل طور پر باہر نہیں: میاں نواز شریف

انتخابی نشانات کی سیاست: ووٹر حیران، امیدوار پریشان

امریکہ افغان طالبان سے بات چیت کی خواہش کیوں ظاہر کر رہا ہے؟

آیت اللہ سید خامنہ ای نے قومی فٹبال ٹیم کو اچھی کاکردگی پر سراہا

بحرینی عدالت نے شیخ علی سلمان کو جاسوسی کے الزامات سے بری کردیا

فیفا ورلڈ کپ 2018: اسپین نے ایران کو 0-1 سے شکست دے دی

آئی بی اے کراچی میں منعقدہ پاکستان کی پہلی فائنل ائیر پروجیکٹس کی آن لائن نمائش کا احوال

امریکہ کی خارجہ پالیسی بحران سے دوچار

2018-06-11 06:19:00

بے نظیر کی تصاویر سے ریحام کی کتاب تک

 

 

Book

پنجابی کی گالیوں،منٹو کے افسانوں اور مسلم لیگ( ن) کے چند قائدین کی تقریروں میں سے اگر عورت کو نکا ل دیا جائے تو صرف کومہ ، فُل سٹاپ اور نا زیبا اشارے ہی باقی بچیں گے ۔

 

بھٹو نے ڈرائنگ روم کی سیاست کو گلی محلوں تک پہنچا دیا ، جبکہ اسّی کی دہائی میں اسے کھینچ کر کوٹھے پر چڑھا دیا گیا۔ اس دور میں بے نظیر بھٹو اور نصرت بھٹو کی ہیلی کاپٹر سے پھینکوائی جانے والی قابل اعتراض تصا ویراسی’’ کوٹھائی سیاست‘‘ کی ایک کڑی تھی۔( علامہ ماچس ہر اُس تصویر کو قابل اعتراض سمجھتے ہیں جو اپنی ذاتی اہلیہ کے سامنے نہ دیکھی جا سکے )۔

 

جمائمہ خان پر مقدمہ اور عائشہ گلالئی کے الزامات تک آتے آتے بات اب ریحام خان کی کتاب تک جا پہنچی ہے ۔ مظفر گوند کے خیال میں مسلم لیگ (ن) کی سیاست میں سے اگر ان خواتین کا ذکر نکال دیا جائے تو باقی صرف چند سڑکیں ، کچھ انڈر پاس اور ایک موٹر وے ہی رہ جاتی ہے ۔

جن احباب کے کانوں تک کتاب کی بھنک پہنچی ہے ان کا یہی کہنا ہے کہ جیسے مغرب میں کئی فلموں کے اشتہارات پر لکھا جاتا ہے ’’ بالغوں کے لئے ‘‘۔ اس کتاب کے سرورق پر بھی ضرور لکھنا چاہئیے ’’ سیاسی نا بالغوں کے لئے ‘‘۔ کچھ بچے اٹھارہ سال کی عمر سے پہلے بالغ ہو جاتے ہیں لیکن کئی لیڈر تیس پینتیس سال کی سیاسی زندگی گزار کے بھی بالغ النظر نہیں ہوتے ۔اُن کی مشتاق نظریں حریف پارٹی میں کسی نہ کسی صنفِ مخالف و نازک کو تلاش کر لیتی ہیں۔ یہ کسی مرد کا بھی پھوُلا ہواپیٹ دیکھ لیں تو میٹر نٹی ہوم جانے کا مشورہ بڑی سنجیدگی سے دیتے ہیں ۔ ان کی تقاریر سُن کر صاف پتہ چلتا ہے کہ جس کُرسی پر بیٹھ کر تقریر لکھی گئی تھی انگریزی میں اُسے کموڈ اور اردو میں پتہ نہیں کیا کہتے ہیں ۔

سیانے لوگ کہتے ہیں بھانڈ کی جگت ، فقیر کی گالی ، اور سیاستدان کے الزامات کو سنجیدہ نہیں لینا چاہئیے ۔ دیکھا جائے تو ریحام خان کی کتاب دنیا کی پہلی کتاب ہو گی جس کی تقریب رونمائی اشاعت سے پہلے ہو رہی ہے ( مظفر گوند اسے تخریب رونمائی کہتا ہے)۔ کتاب اتنی چٹخارے دار لگتی ہے کہ اس کا نام Tell-Allکی بجائے ’’املی بیگم ‘‘ہونا چاہئیے۔ کتاب کی صورت میں رائی اور املی کا جو ملا جُلا پہاڑ کھڑا کیا گیا ہے، قریب الزچگی خواتین دل خراب ہونے کی صورت میں صفحے چاٹ کرتسکین قلب کر سکتی ہیں۔ مسلم لیگی قائدین تو ابھی سے چندجملے چاٹ چاٹ کر پٹاک پٹاک کی آوازیں نکال رہے ہیں۔ وسیم اکرم کی مرحوم و مغفور اہلیہ بارے جو کچھ لکھا گیا ( استغفر اللہ ) ، سعادت حسن منٹو بھی پڑھ لے، تو اپنی کتابیں پھینک کر ریحام خان سے بیعت ہو جائے ۔ کیا عجب عصمت چغتائی زندہ ہوتیں تو یہی سوچتیں کہ اگر عمران خان سے شادی کے بعد ایسی بلند پایہ Adultکتاب لکھی جا سکتی ہے ، تو ایک بار خان سے بھی شادی کر لینے میں کیا حرج ہے ؟

ریحام خان نے کتاب لکھ کر طلاق کی بھڑاس نکالی یا ڈالروں کی آس میں منہ کھولا ، اس بار ے علامہ ماچس فرماتے ہیں کہ بھڑاس اور آس بیک وقت پوری ہو جائے تو بیچ میں سے سکینڈل نکلتا ہے جس کی قیمت مضروب علیہ یعنی مخالف پارٹی کے سیاسی حالات و افواہات پر منحصر ہے۔ سر پہ کسی بڑے کا ہاتھ ہو تو پانی سے بھی دئیے جل جاتے ہیں۔ مذکورہ کتاب کسی بھارتی پبلشر کے زیر سایہ ’’ چھپاہت‘‘ کے مرحلے سے گزر رہی ہے ۔ جدیدبھارتی فلموں میں مردو عورت کے تعلقات کی جس باریکی سے وضاحت کی جاتی ہے، ان باریکیوں سے شادی کی سلور جوبلی منانے والے بھی واقف نہیں ہو تے۔
 
شاید اسی لئے بھارتی پبلشر کا انتخاب کیا گیا ہے ۔ مسلم لیگ (ن)کو بھی ایسی کتاب کی اشد ضرورت تھی کہ کتاب کے مندرجات بمعہ صفحہ نمبر رٹ کے، لہجے میں کڑواہٹ شامل کرلی جائے تو ان کے قائدین تقریر لکھنے کے جھنجھٹ سے نکل آئیں گے ۔ جیسے صفحہ نمبر بہتر، لائن نمبر پانچ پر ریحام خان لکھتی ہیں’’ عمران خان مجھ سے زیادہ اپنے کُتے شیرو سے پیار کرتے تھے ‘‘۔( علامہ ماچس فرماتے ہیں شاید ریحام کو یہ گلہ بھی رہا ہو کہ انہیں کُتے جیسی محبت کیوں نہیں دی جاتی)۔ویسے نسلی کُتا رکھنے کے شوقین اپنے کُتے کے اس قدر مداح ہو تے ہیں کہ کُتا کہیں ساتھ لے جائیں تو خود سے پہلے کُتے کا تعارف کرا دیتے ہیں ۔شاید اس کا مقصد یہی ہو کہ وہ کُتے کی بھی اپنے جیسی عزت چاہتے ہیں ۔

تو بات چل رہی تھی مسلم لیگی قائدین کی سیاسی تقریروں کی۔ کتاب کے اگر تین چار سو صفحات بھی ہوئے تو سال بھر کی تقریروں کے لئے کافی مواد نکل آئے گا ۔ البتہ نازیبا اشارے اور القاب انہیں خود سے ڈالنے ہوں گے ۔جو لیڈر منہ سے جھاگ بھی نکال سکیں انہیں میڈیا کے Talk Showsمیں لازم مدعو کیا جائے گا ۔ علامہ ماچس کا فرمانا ہے کہ ایک دن کے ٹی وی شوز میں سیاستدانوں کے منہ سے جتنی جھاگ برآمد ہوتی ہے ، سب کو جمع کر لیا جائے ، تو تین چار سو بندو ں کی شیو آ سانی سے کی جا سکتی ہے ۔یوں بھی اس کتاب نے شائع ہونے سے پہلے ہی سیاست میں جتنی گرما گرمی پیدا کر دی ہے ، ہمیں یقین ہے کہ کتاب کا کاغذ اگر پکوڑے لپیٹنے کے لئے استعمال کیا جائے تو پکوڑے دو دن تک گرم رہیں گے ۔ کتاب کا سرورق ابھی ہم نے نہیں دیکھا لیکن ہمارا مشورہ ہے کہ سرورق ایسا ہونا چاہئیے جو جلیبیوں کا شیرہ آسانی سے چُوس لے ۔ اس کے لئے

سرورق پر کس سیاستدان کی تصویر مناسب رہے گی ، یہ فیصلہ ہم ریحام خان پر چھوڑتے ہیں ۔ علامہ ماچس ہمارے دیرینہ کرم فرما ہیں۔ آپ کسی بھی کتاب کو سونگھ کر بتا سکتے ہیں کہ پڑھنے کے قابل ہے یا بچوں کو ائیر فورس ٹریننگ کے لئے دے دی جائے۔
 
وہ تو پاؤڈر تک سونگھ کر بتا دیتے ہیں کہ پِت مارہے یا کیڑ ے مار ۔لیکن اس بار ان کی سونگھ درجہ روحانیت تک پہنچ گئی ہے ۔انہوں نے چلتے ٹی وی کو ہی سونگھ کر بتا دیا کہ ریحام خان کی کتاب کا کُل نچوڑیہ ہے’’ شہباز شریف دُنیا کے شریف ترین آدمی ہیں ، نواز شریف جیسا ایماندار اور سخی کوئی نہیں اور ہر رمضان میں شیطان کی جگہ عمران خان کو قید ہو نا چاہئیے‘‘ ۔ہمارا مسلم لیگی قائدین کو مشورہ ہے کہ اگر اس کتاب کی بنیاد پر انہیں اگلے الیکشن میں کامیابی مل جاتی ہے تو کچھ عرصے کے لئے پارٹی کا نام بدل کے مسلم لیگ( ریحام) رکھ لیا جائے۔ پیسہ ہی تو ہر کام کا صلہ نہیں ہوتا.

زاہد شجاع بٹ

زمرہ جات:  
ٹیگز:   بے نظیر ، ریحام ،
دیگر ایجنسیوں سے (آراس‌اس ریدر)

اسرائیلی ہمسفر

- اسلام ٹائمز

نئی پارٹی پرانا رواج

- ایکسپریس نیوز

صرف ایک ہی راستہ

- ایکسپریس نیوز

جمہوریت اور سیاست

- ایکسپریس نیوز

یہ محل سراؤں کے باسی

- ایکسپریس نیوز