ﺑﻘﯿﻊ ﺍﻭﺭ ﻗﺪﺱ ﭘﺮ ﺳﯿﺎﺳﺖ کیوں؟

جمال خشوگی… کیا کہیں؟

کابل : پولنگ اسٹیشن کے قریب 2 دھماکے ، متعدد افراد زخمی

پاکستان ہرفورم پرکشمیریوں کی جدوجہد کواجاگر کرتا رہے گا‘ فواد چوہدری

افغان انتخابات، اشرف غنی نے ووٹ ڈالا

جمال خاشقجی: مبینہ سعودی ’ہٹ سکواڈ‘ میں کون کون شامل تھا؟

’’ریلوے میں بھرتیوں سمیت ہر کام قانون کے تحت ہوگا‘‘

نہال ہاشمی کے فوج کے حوالے سے متنازع بیان پر پیمرا کا نوٹس

عباس ٹیسٹ کرکٹ میں گزشتہ 100سال کے بہترین باؤلر

بھارت میں ٹرین حادثے پر وزیراعظم کا افسوس

حکومتی اخراجات کا بوجھ شہریوں پرڈالاجا رہا ہے‘ نیئربخاری

خاشقجی بحران: محمد بن سلمان پر کیا اثر پڑے گا؟

غزہ میں پُرامن فلسطینی مظاہرین کا خون بہایا جا رہا ہے‘ ملیحہ لودھی

ایک اور ڈیم سے دریائے سندھ کا گلا گُھٹ جائے گا؟

’’ ہر کام میرٹ پر کیا اور کریں گے‘‘

پاکستان کے مختلف علاقوں میں 5.3 شدت کا زلزلہ

کوئٹہ میں سردی، شہریوں نے گرم کپڑے نکال لیے

’جمال خاشقجی کی موت قونصل خانے میں لڑائی کے بعد ہوئی‘

آرمی چیف سے قطری وزیرخارجہ کی ملاقات

جمال خاشقجی سعودی قونصل خانے میں قتل ہوا: سعودی عرب

وزیر خارجہ سے عراق کے سفیر کی ملاقات

’’12ووٹ چوری کرنے والا اسپیکر بنا ہوا ہے‘‘

جمال خاشقجی نے آخری کالم میں کیا لکھا؟

جمال خاشقجی کی جنگل میں تلاش

خاشقجی قتل اور یمن جنگی جرائم: امریکہ سعودی عرب کی حمایت جاری رکھے گا

قندھار: گورنر زالمے، صوبائی پولیس چیف اور صوبائی انٹیلی جنس چیف ہلاک

ایران کے دشمن بھی ایران کی طاقت اور قدرت کے معترف ہیں

سعودی سرمایہ کاری کانفرنس: امریکا کا شرکت نہ کرنے کا فیصلہ

افغان پالیسی بدلنے تک پاکستان پر دباؤ قائم رکھا جائے گا: امریکا

ایران کے خلاف پابندیوں کا امریکی ہتھکنڈہ اب اس کے ہاتھ سے نکل چکا: محمد جواد ظریف

پاکستان آسٹریلیا کیخلاف سیریز کی فتح سے5 وکٹ دور

غلط پالیسیاں، ظالمانہ اقدامات نیز خاشقجی کا قتل: بن سلمان کو برطرف کئے جانے کا مطالبہ

زندہ سعودی نامہ نگار خاشقجی کے ٹکڑے کرنے میں 7 منٹ لگے ...

فلسطینی فوٹو گرافر محمود الھمص کی لی گئی تصویر، بہترین تصویر قرار

بن سلمان اور اس کی ٹیم جنایت کاروں کی ٹیم ہے: حزب الله سربراہ

قندھار حملہ افغانستان میں امریکی ارادے پر اثر انداز نہیں ہوگا، جیمزمیٹس

برطانیہ: نفرت پر مبنی جرائم کا دائرہ وسیع

یورپ کا سب سے بڑا مالیاتی اسکینڈل

خواجہ آصف کی اہلیت سے متعلق سپریم کورٹ کا تفصیلی فیصلہ جاری

امریکی خلا باز آنکھوں سے محروم ہونے والے ہیں؟

راولپنڈی جانیوالی جعفر ایکسپریس کے قریب دھماکا

عمار بن یاسر کی شہادت اور جنگ نہروان

مقبوضہ کشمیرمیں بھارتی فورسز کی فائرنگ‘ 4 کشمیری شہید

چینی سرمایہ کاری میں کمی سے ایف ڈی آئی میں 42 فیصد تنزلی

عالمی طاقتوں کا شرکت سے انکار، سعودی سرمایہ کاری کانفرنس خطرے میں پڑ گئی

قطری وزیر خارجہ آج اسلام آباد پہنچیں گے

سب سے بڑا ’ڈرامہ کوئین‘ کون؟

پراپرٹی ڈیلرزنے پورے ملک میں فساد برپا کیا ہوا ہے‘ چیف جسٹس

تھر کی صورت حال پر وزیر اعلیٰ کاہنگامی اجلاس کل طلب

توہین عدالت کیس، ایف آئی اےجسمانی ریمانڈ کے بعد فیصل رضاعابدی کو آج عدالت میں پیش کرے گی

6لیگی ایم پی ایز کا پنجاب اسمبلی میں داخلہ بند، دیگر کا دھرنا

پوپ فرانسس شمالی کوریا جائیں گے

کراچی میں رینجرز کی کارروائی‘ ملزم گرفتار

پنجاب فوڈ اتھارٹی کا ناقص دودھ سپلائی کیخلاف کریک ڈاؤن

عمرہ زائرین کو دوسرے سعودی شہر جانے کی اجازت

ننیوا عراق: شباک کمیونٹی کی اکثریت نے شیعہ ہونے کی قیمت کیسے چکائی؟ – فناک ویب سائٹ رپورٹ

امریکی وزیر خارجہ کی خاشقجی کے بارے میں محمد بن سلمان کو 72 گھنٹوں کی مہلت

عمران خان کی اہلیت کیخلاف حنیف عباسی کی نظرثانی درخواست مسترد

ابوظبہی ٹیسٹ،پاکستان کی پوزیشن مستحکم، بیٹنگ جاری

واٹس ایپ نے پیغامات ڈیلیٹ کرنے کے فیچر میں تبدیلی کردی

’تحریک انصاف اب تحریک انتقام بن چکی ہے‘

اس آسان نسخے کی مدد سے بیماریوں سے لڑنے کی طاقت میں اضافہ کریں

’ایسپرن سے جگر کے کینسر کے خدشات میں کمی واقع ہوسکتی ہے‘

سعودی سیکیورٹی ادارے دہائیوں سے شہریوں کو اغواء یا قتل کرنے کے حوالے سے بدنام: سابق سی آئی

مائیک پومپیو کے ترک صدر رجب طیب اردوغان سے مذاکرات

جمال خاشقجی گمشدگی: آئی ایم ایف سربراہ کا مشرق وسطیٰ کا دورہ ملتوی

روس: کریمیا کے شہر کرچ میں دھماکے اور فائرنگ سے 18 ہلاک، 70 زخمی

افغانستان: بم حملے میں پارلیمانی انتخابات کے امیدوار سمیت 3 افراد جاں بحق، 7 زخمی

خاشقجی کو قتل کر کے ان کی لاش کے ٹکڑے کر دیئے گئے: امریکی میڈیا کا دعویٰ

بن سلمان بلاواسطہ جمال خاشقجی کے قتل میں ملوث ہے: گارڈین نیوز

جمال خاشقجی کے بہیمانہ قتل کے بعد سعودی عرب کے سفیر واشنگٹن سے فرار: واشنگٹن پوسٹ

2018-06-22 10:37:29

ﺑﻘﯿﻊ ﺍﻭﺭ ﻗﺪﺱ ﭘﺮ ﺳﯿﺎﺳﺖ کیوں؟

ﺑﻘﯿﻊ ﺍﻭﺭ ﻗﺪﺱ ﭘﺮ ﺳﯿﺎﺳﺖ کیوں؟

ﺳﻮﺷﻞ ﻣﯿﮉﯾﺎ ﭘﺮ ﯾﻘﯿﻨﺎ ﻣﯿﺮﯼ ﻃﺮﺡ ﺁﭖ ﮐﯽ ﻧﮕﺎﮨﻮﮞ ﺳﮯ ﺑﮭﯽ ﺍﺱ ﻗﺴﻢ ﮐﯽ ﭘﻮﺳﭧ ﮔﺰﺭﯼ ﮨﻮﮔﯽ” ﮐﮩﺎﮞ ﮨﯿﮟ ﻗﺪﺱ ﮐﺎ ﭘﺮﻭﮔﺮﺍﻡ ﻣﻨﺎﻧﮯ ﻭﺍﻟﮯ؟ ﮐﮩﺎﮞ ﮨﯿﮟ ﻓﻠﺴﻄﯿﻦ ﮐﯽ ﺁﺯﺍﺩﯼ ﮐﮯ ﻟﺌﮯ ﻣﻈﺎﮨﺮﮮ ﮐﺮﻧﮯ ﻭﺍﻟﮯ؟ ﮐﮩﺎﮞ ﮨﯿﮟ ﺑﯿﺖ ﺍﻟﻤﻘﺪﺱ ﮐﮯ ﺳﻠﺴﻠﮧ ﻣﯿﮟ ﺟﻠﻮﺱ ﻧﮑﺎﻟﻨﮯ ﻭﺍﻟﮯ؟ ﺑﻘﯿﻊ ﻭﯾﺮﺍﻥ ﮨﮯ ﮨﻤﺎﺭﮮ ﭼﺎﺭ ﺍﻣﺎﻣﻮﮞ ﮐﯽ ﻗﺒﺮﯾﮟ ﺳﻨﺴﺎﻥ ﮨﯿﮟ ﻟﯿﮑﻦ ﻧﮧ ﻗﺪﺱ ﮐﮯ ﺟﻠﻮﺱ ﻧﮑﺎﻟﻨﮯ ﻭﺍﻟﻮﮞ ﮐﯽ ﺧﺒﺮ ﮨﮯ ﻧﮧ ﻓﻠﺴﻄﯿﻦ ﮐﺎ ﺩﻡ ﺑﮭﺮﻧﮯ ﻭﺍﻟﻮﮞ ﮐﺎ ﭘﺘﮧ ، ﮐﯿﺎ ﺟﻨﺖ ﺍﻟﺒﻘﯿﻊ ﮐﯽ ﻋﻈﻤﺖ ﺍﻭﺭ ﻣﻈﻠﻮﻣﯿﺖ ﺑﯿﺖ ﺍﻟﻤﻘﺪﺱ ﺳﮯ ﮐﻢ ﮨﮯ ﺟﻮ ﺁﺝ ﺍﻧﮭﺪﺍﻡ ﺟﻨﺖ ﺍﻟﺒﻘﯿﻊ ﭘﺮﻭﮦ ﻟﻮﮒ ﺧﺎﻣﻮﺵ ﮨﯿﮟ ﺟﻮ ﻗﺪﺱ ﻗﺪﺱ ﮐﺮﺗﮯ ﮔﮭﻮﻣﺘﮯ ﮨﯿﮟ؟ ” ﺷﮏ ﻧﮩﯿﮟ ﺑﯿﺖ ﺍﻟﻤﻘﺪﺱ ﮨﻮ ﮐﮧ ﺟﻨﺖ ﺍﻟﺒﻘﯿﻊ ﺩﻭﻧﻮﮞ ﮐﯽ ﺍﮨﻤﯿﺖ ﺍﭘﻨﯽ ﺍﭘﻨﯽ ﺟﮕﮧ ﻣﺴﻠﻢ ﮨﮯ ﺩﻭﻧﻮﮞ ﮐﯽ ﻗﺪﺍﺳﺖ ﻭ ﭘﺎﮐﯿﺰﮔﯽ ﺍﭘﻨﮯ ﺍﭘﻨﮯ ﻣﻘﺎﻡ ﭘﺮ ﻃﮯ ﮨﮯ ﺍﻭﺭ ﺩﻭﻧﻮﮞ ﮨﯽ ﺍﺱ ﻭﻗﺖ ﻇﺎﻟﻤﻮﮞ ﮐﮯ ﻗﺒﻀﮧ ﻣﯿﮟ ﮨﯿﮟ ﺍﮔﺮ ﺍﯾﮏ ﻗﺒﻠﮧ ﺍﻭﻝ ﮨﮯ ﺗﻮ ﺩﻭﺳﺮﮮ ﮐﺎ ﺗﻌﻠﻖ ﮐﻌﺒﮧ ﺩﻝ ﺳﮯ ﮨﮯ ﻧﮧ ﺍﻧﮭﺪﺍﻡ ﺟﻨﺖ ﺍﻟﺒﻘﯿﻊ ﮐﮯ ﺩﺭﺩ ﺍﻭﺭ ﺍﺱ ﮐﯽ ﺍﮨﻤﯿﺖ ﮐﻮ ﻧﻈﺮﺍﻧﺪﺍﺯ ﮐﯿﺎ ﺟﺎ ﺳﮑﺘﺎ ﮨﮯ ﺍﻭﺭ ﻧﮧ ﮨﯽ ﺑﯿﺖ ﺍﻟﻤﻘﺪﺱ ﮐﯽ ﺗﺎﺭﯾﺨﯽ ﺣﯿﺜﯿﺖ ﮐﻮﺍﯾﮏ ﻧﺒﯽ ﮐﯽ ﻣﻌﺮﺍﺝ ﮐﯽ ﯾﺎﺩﮔﺎﺭ ﮨﮯ ﺗﻮ ﺩﻭﺳﺮﯼ ﺍﺳﻼﻡ ﮐﯽ ﻣﻌﺮﺍﺝ ﮐﯽ، ﮐﮧ ﺑﻘﯿﻊ ﻣﯿﮟ ﻭﮦ ﺷﺨﺼﯿﺘﯿﮟ ﺩﻓﻦ ﮨﯿﮟ ﺟﻨﮑﯽ ﺯﻧﺪﮔﯽ ﺍﺳﻼﻣﯽ ﺳﻤﺎﺝ ﮐﻮﻣﻌﺮﺍﺝ ﺑﺨﺸﻨﮯ ﻣﯿﮟ ﮔﺰﺭﯼ ﺟﻨﮑﮯ ﺗﻌﻠﯿﻤﺎﺕ ﮐﮯ ﭼﺮﺍﻏﻮﮞ ﮐﯽ ﺭﻭﺷﻨﯽ ﺁﺝ ﺑﮭﯽ ﺑﺸﺮﯾﺖ ﻣﻌﺮﺍﺝ ﺑﻨﺪﮔﯽ ﺗﮏ ﭘﮩﻨﭽﻨﮯ ﮐﯽ ﺩﻋﻮﺕ ﺩﮮ ﺭﮨﯽ ﮨﮯ .
ﻟﯿﮑﻦﺍﻓﺴﻮﺱ ﮐﺎ ﻣﻘﺎﻡ ﮨﮯ ﮐﭽھ ﮐﺞ ﻓﮑﺮ ﺍﻭﺭ ﭼﻠﯿﭙﺎ ﻃﺮﺯ ﻓﮭﻢ ﺭﮐﮭﻨﮯ ﻭﺍﻟﮯ ﻧﺎﻋﺎﻗﺒﺖ ﺍﻧﺪﯾﺸﻮﮞ ﻧﮯ ﺍﻥ ﺩﻭﻧﻮﮞ ﻣﺴﺌﻠﻮﮞ ﮐﻮ ” ﺍﻧﺎ” ﮐﯽ ﺳﯿﺎﺳﺖ ﮐﯽ ﻧﺬﺭﮐﺮ ﺩﯾﺎ ﮨﮯ . ﻋﺠﯿﺐ ﺑﺎﺕ ﺗﻮ ﯾﮧ ﮨﮯ ﮐﮧ ﻗﺪﺱ ﮐﮯ ﺳﻠﺴﻠﮧ ﻣﯿﮟ ﭘﯿﺶ ﭘﯿﺶ ﺭﮨﻨﮯ ﻭﺍﻟﮯ ﺗﻮ ﺁﭖ ﮐﻮ ﺍﻧہﺪﺍﻡ ﺟﻨﺖ ﺍﻟﺒﻘﯿﻊ ﮐﮯ ﻣﻮﻗﻊ ﭘﺮ ﺿﺮﻭﺭ ﺩﯾﮑﮭﻨﮯ ﮐﻮ ﻣﻠﯿﮟ ﮔﮯ ﻟﯿﮑﻦ ﺍﻧﮭﺪﺍﻡ ﺟﻨﺖ ﺍﻟﺒﻘﯿﻊ ﮐﮯ ﺳﻠﺴﻠﮧ ﮨﻮﻧﮯ ﻭﺍﻟﮯ ﭘﺮﻭﮔﺮﺍﻣﻮﮞ ﮐﮯ ﻣﻨﺘﻈﻤﯿﻦ ﻭ ﺍﺭﺍﮐﯿﻦ ﻗﺪﺱ ﮐﮯ ﻣﻮﻗﻊ ﭘﺮ ﺷﺎﺫ ﻭ ﻧﺎﺩﺭ ﮨﯽ ﻧﻈﺮ ﺁﺋﯿﮟ ﮔﮯ ﺍﺳﮑﯽ ﺍﯾﮏ ﺍﺩﻧﯽ ﺳﯽ ﻣﺜﺎﻝ ﺟﻮ ﻣﯿﺮﮮ ﭘﯿﺶ ﻧﻈﺮ ﮨﮯ ﺷﮭﺮﻣﻤﺒﺌﯽ ﮨﮯ ﺟﮩﺎﮞ ﻗﺪﺱ ﮐﻤﯿﭩﯽ ﻭ ﺁﺋﯽ ﻭﺍﺋﯽ ﺍﯾﻒ ﮐﮯ ﻣﺸﺘﺮﮐﮧ ﺗﻌﺎﻭﻥ ﺳﮯ ﻗﺪﺱ ﮐﺎ ﭘﺮﻭﮔﺮﺍﻡ ﺑﮭﯽ ﺷﺎﻧﺪﺍﺭ ﻃﺮﯾﻘﮧ ﺳﮯ ﮨﻮﺗﺎ ﮨﮯ ﺍﻭﺭ ﺍﻧﮭﺪﺍﻡ ﺟﻨﺖ ﺍﻟﺒﻘﯿﻊ ﭘﺮ ﺑﮭﯽ ﻣﺨﺘﻠﻒ ﭘﺮﻭﮔﺮﺍﻡ ﻣﻨﻌﻘﺪ ﮨﻮﺗﮯ ﮨﯿﮟ ﺟﺒﮑﮧ ﺍﺱ ﮐﮯ ﺑﺮﺧﻼﻑ ﺟﻨﺖ ﺍﻟﺒﻘﯿﻊ ﮐﮯ ﺍﻧﮭﺪﺍﻡ ﮐﯽ ﻣﻨﺎﺳﺒﺖ ﻭ ﺩﯾﮕﺮ ﭘﺮﻭﮔﺮﺍﻣﻮﮞ ﮐﮯ ﻣﻨﺘﻈﻤﯿﻦ ﻭ ﻋﻤﺎﺋﺪﯾﻦ ﺯﯾﺎﺩﮦ ﺗﺮ ﻗﺪﺱ ﮐﮯ ﭘﺮﻭﮔﺮﺍﻡ ﻣﯿﮟ ﻏﺎﺋﺐ ﮨﯽ ﺭﮨﺘﮯ ﮨﯿﮟ . ﻣﯿﮟ ﮨﺮﮔﺰ ﻋﻮﺍﻡ ﮐﯽ ﺑﺎﺕ ﻧﮩﯿﮟ ﮐﺮ ﺭﮨﺎ ﺑﮯ ﭼﺎﺭﮮ ﻋﻮﺍﻡ ﮨﯽ ﺗﻮ ﺩﻭﻧﻮﮞ ﺟﮕﮧ ﮐﮯ ﭘﺮﻭﮔﺮﺍﻣﻮﮞ ﮐﯽ ﮐﺎﻣﯿﺎﺑﯽ ﮐﯽ ﮐﻠﯿﺪ ﮨﯿﮟ .ﺑﺎﺕ ﺍﻥ ﻟﻮﮔﻮﮞ ﮐﯽ ﮨﮯ ﺟﻮ ﺻﻨﻒ ﻋﻠﻤﺎﺀ ﺳﮯ ﻣﺘﻌﻠﻖ ﮨﯿﮟ ﯾﺎ ﮐﺴﯽ ﺍﺩﺍﺭﮦ ﻭ ﭨﺮﺳﭧ ﺳﮯﺟﮍﮮ ﮨﻮﻧﮯ ﯾﺎ ﺧﺎﻧﺪﺍﻥ ﻭ ﻭﺭﺍﺛﺖ ﮐﯽ ﺑﻨﺎ ﭘﺮ ﺧﺎﺹ ﮨﯿﮟ . ﻣﯿﺮﺍ ﺳﻮﺍﻝ ﺍﻧﮩﯿﮟ ﺧﺎﺹ ﻟﻮﮔﻮﮞ ﺳﮯ ﮨﮯ ﺟﻮ ﮐﺲ ﺍﯾﮏ ﭘﺮﻭﮔﺮﺍﻡ ﮐﻮ ﺩﻭﺳﺮﮮ ﭘﺮ ﺗﺮﺟﯿﺢ ﺩﯾﺘﮯ ﮨﯿﮟ ﺍﻭﺭ ﺩﻭﺳﺮﮮ ﭘﺮﻭﮔﺮﺍﻡ ﻣﯿﮟ ﺟﺎﻧﺎ ﺑﮭﯽ ﮔﻮﺍﺭﺍ ﻧﮩﯿﮟ ﮐﺮﺗﮯ ﮐﮧ ﺁﺧﺮ ﺍﻧﮑﮯ ﺍﺱ ﻋﻤﻞ ﮐﮯ ﭘﯿﭽﮭﮯ ﮐﻮﻧﺴﯽ ﻣﻨﻄﻖ ﮐﺎﺭ ﻓﺮﻣﺎ ﮨﮯ ﮐﮩﯿﮟ ﺍﯾﺴﺎ ﺗﻮ ﻧﮩﯿﮟ ﺟﺎﻧﮯ ﺍﻧﺠﺎﻧﮯ ﮐﺴﯽ ﺍﯾﮏ ﭘﺮﻭﮔﺮﺍﻡ ﮐﻮ ﮐﻤﺰﻭﺭ ﮐﺮ ﮐﮯ ﻭﮦ ﺩﺷﻤﻦ ﮐﮯ ﺧﯿﻤﮧ ﮐﻮ ﻣﻀﺒﻮﻁ ﮐﺮ ﺭﮨﮯ ﮨﯿﮟ؟ ﮐﮧ ﺍﻥ ﻣﯿﮟ ﺳﮯ ﮐﻮﺋﯽ ﺍﯾﮏ ﺑﮭﯽ ﭼﺎﮨﮯ ﻭﮦ ﺟﻨﺖ ﺍﻟﺒﻘﯿﻊ ﮨﻮ ﯾﺎ ﻗﺪﺱ ﺳﯿﺎﺳﺖ ﮐﺎ ﺷﮑﺎﺭ ﮨﻮ ﮐﺮ ﺍﻧﺠﺎﻧﮯ ﻣﯿﮟ ﺩﺷﻤﻨﻮﮞ ﮐﯽ ﻧﯿﺮﻧﮕﯿﻮﮞ ﮐﯽ ﺑﮭﭩﯽ ﮐﮯ ﮨﺘﮭﮯ ﭼﮍﮪ ﮔﯿﺎ ﺗﻮ ﺁﺝ ﻧﮩﯿﮟ ﺗﻮ ﮐﻞ ﺍﺱ ﮐﺎ ﺩﮬﻮﺍﮞ ﮨﻤﺎﺭﯼ ﺁﻧﮑﮭﻮﮞ ﻣﯿﮟ ﺟﺎﻧﮯ ﻭﺍﻻ ﮨﮯ . ﺍﮔﺮ ﮐﺴﯽ ﮐﮯ ﺫﮨﻦ ﻣﯿﮟ ﯾﮧ ﺧﯿﺎﻝ ﮨﮯ ﮐﮧ ﺟﻨﺖ ﺍﻟﺒﻘﯿﻊ ﮐﯽ ﻣﻈﻠﻮﻣﯿﺖ ﺍﻭﺭ ﺁﻝ ﺳﻌﻮﺩ ﮐﮯ ﻣﻈﺎﻟﻢ ﺗﻮ ﺑﮩﺮﺣﺎﻝ ﻣﺴﻠﻤﺎﻧﻮﮞ ﮐﺎ ﺩﺍﺧﻠﯽ ﻣﺴﺌﻠﮧ ﮨﮯ ﺗﻮﻭﮦ ﺍﻣﺎﻡ ﺧﻤﯿﻨﯽ ﺭﮦ ﮐﮯ ﺍﻥ ﺟﻤﻠﻮﮞ ﭘﺮﻏﻮﺭ ﮐﺮﮮ ” ﺍﮔﺮ ﮨﻢ ﺻﺪﺍﻡ ﮐﻮ ﻣﻌﺎﻑ ﺑﮭﯽ ﮐﺮ ﺩﯾﮟ، ﻗﺪﺱ ﮐﻮ ﺑﮭﻼ ﺑﮭﯽﺩﯾﮟ، ﺍﻣﺮﯾﮑﮧ ﮐﯽ ﺑﺮﺑﺮﯾﺖ ﮐﻮ ﺑﮭﻮﻝ ﺑﮭﯽ ﺟﺎﺋﯿﮟ ﻟﯿﮑﻦ ﺁﻝ ﺳﻌﻮﺩ ﮐﻮ ﮐﺒﮭﯽ ﻧﮩﯿﮟ ﺑﺨﺸﯿﮟ ﮔﮯ ﺍﻧﺸﺎﺀ ﺍﻟﻠﮧ ﺍﭘﻨﮯ ﺩﻟﻮﮞ ﮐﮯ ﺯﺧﻤﻮﮞ ﮐﯽ ﺣﺪﺕ ﮐﻮﻣﻨﺎﺳﺐ ﻭﻗﺖ ﻣﯿﮟ ﺍﻣﺮﯾﮑﮧ ﻭ ﺁﻝ ﺳﻌﻮﺩ ﺳﮯ ﺍﻧﺘﻘﺎﻡ ﻟﯿﮑﺮ ﮨﯽ ﭨﮭﻨﮉﺍ ﮐﺮﯾﮟﮔﮯ، ﺍﺳﯽ ﻃﺮﺡ ﺍﮔﺮ ﮐﻮﺋﯽ ﯾﮧ ﺳﻮﭼﺘﺎ ﮨﮯ ﮐﮧ ﻗﺪﺱ ﺗﻮ ﺍﮬﻠﺴﻨﺖ ﺳﮯ ﻣﺘﻌﻠﻖ ﮨﮯ ﻓﻠﺴﻄﯿﻦ ﻣﯿﮟ ﮐﻮﻥ ﺳﮯ ﺷﯿﻌﮧ ﮨﯿﮟ ﺗﻮ ﻭﮦ ﻗﺮﺁﻥ ﮐﯽ ﺍﺱ ﺁﯾﺖ ﮐﺎ ﺟﻮﺍﺏ ﺩﯾﮟ ﮔﮯ ﺟﺲ ﻣﯿﮟ ﺍﺭﺷﺎﺩ ﮨﻮ ﺭﮨﺎ ﮨﮯ” ﺍﻭﺭ ﺗﻤﮩﯿﮟ ﮐﯿﺎ ﮨﻮ ﮔﯿﺎ ﮨﮯ ﮐﮧ ﺗﻢ ﺍﻟﻠﮧ ﮐﯽ ﺭﺍﮦ ﻣﯿﮟ ﻗﺘﺎﻝ ﻧﮩﯿﮟ ﮐﺮﺗﮯ ﺍﻭﺭ ﻣﺴﺘﻀﻌﻔﯿﻦ ﮐﮯ ﻟﺌﮯ ﻧﮩﯿﮟ ﻟﮍﺗﮯ ﺟﻦ ﮐﮯ ﻣﺮﺩ، ﺑﭽﮯ، ﺍﻭﺭ ﻋﻮﺭﺗﯿﮟ ﻓﺮﯾﺎﺩ ﮐﺮ ﺭﮨﮯ ﮨﯿﮟ ﮐﮧ ﺍﺋﮯﻣﺎﻟﮏ !ﮨﻤﯿﮟ ﺍﺱ ﻗﺮﯾﮧ ﺳﮯ ﻧﺠﺎﺕ ﺩﮮ ﺟﻮ ﻇﺎﻟﻤﯿﻦ ﮐﺎ ﻣﺴﮑﻦ ﮨﮯ ﺍﻭﺭﮨﻤﺎﺭﮮ ﻟﺌﯿﮯ ﺍﭘﻨﮯ ﭘﺎﺱ ﺳﮯ ﺍﯾﮏ ﻭﻟﯽ ﻭ ﻣﺪﺩﮔﺎﺭ ﻗﺮﺍﺭ ﺩﮮ ﺟﻮ ﮨﻤﺎﺭﯼ ﻣﺪﺩ ﮐﺮ ﺳﮑﮯ،، ﺳﻮﺭﮦ ﻧﺴﺎﺀ ۷۵۔
ﮐﯿﺎ ﺑﯿﺖ ﺍﻟﻤﻘﺪﺱ ﮨﻤﺎﺭﯼ ﻣﯿﺮﺍﺙ ﻧﮩﯿﮟ، ﮐﯿﺎ ﻓﻠﺴﻄﯿﻦ ﮐﮯ ﻣﻈﻠﻮﻡ ﺍﺱ ﺁﯾﺖ ﮐﮯ ﻣﻮﺟﻮﺩﮦ ﺩﻭﺭ ﻣﯿﮟ ﻣﺼﺪﺍﻕ ﻧﮩﯿﮟ؟ ﮐﯿﺎ ﯾﮧ ﺁﯾﺖ ﻣﻨﺴﻮﺥ ہو ﮔﺌﯽ؟ ﮐﯿﺎﺍﺱ ﮐﮯ ﻣﺨﺎﻃﺐ ﮨﻢ ﻧﮩﯿﮟ؟ ….ﮨﻢ ﻣﯿﮟ ﺳﮯ ﺑﻌﺾ ﮐﺞ ﻓﮑﺮ ﻟﻮﮒ ﺟﺲ ﺑﻘﯿﻊ ﮐﻮ ﻗﺪﺱ ﺳﮯ ﻣﺘﺼﺎﺩﻡ ﮐﺮﻧﮯ ﮐﮯ ﺩﺭ ﭘﮯ ﮨﯿﮟ ﺍﺱ ﻗﺒﺮﺳﺘﺎﻥ ﻣﯿﮟ ﺳﻮﻧﮯ ﻭﺍﻻ ﺍﮬﻠﺒﯿﺖ ﺍﻃﮭﺎﺭ ﻋﻠﯿﮭﻢ ﺍﻟﺴﻼﻡ ﺳﮯ ﻣﺘﻌﻠﻖ ﺍﯾﮏ ﺍﯾﮏ ﻓﺮﺩ ﺩﻧﯿﺎ ﮐﮯ ﻣﻈﻠﻮﻣﻮﮞ ﺍﻭﺭ ﻧﺎﺩﺍﺭﻭﮞ ﮐﯽ ﭘﻨﺎﮦ ﮔﺎﮦ ﺗﮭﺎ ﮐﯿﺎ ﺑﻘﯿﻊ ﻭ ﻗﺪﺱ ﮐﮯ ﺗﺼﺎﺩﻡ ﺳﮯ ﺍﻥ ﺭﻭﺣﻮﮞ ﮐﻮ ﺍﺫﯾﺖ ﻧﮩﯿﮟ ﭘﮩﻨﭽﺘﯽ ﮨﻮﮔﯽ ﺟﻨﮩﻮﮞ ﻧﮯ ﺍﻧﺴﺎﻧﯽ ﺣﺮﯾﺖ ﻭ ﺁﺯﺍﺩﯼ ﮐﮯ ﻟﺌﮯ ﻃﻮﻕ ﺳﻼﺳﻞ ﭘﮩﻨﻨﺎ ﮔﻮﺍﺭﺍ ﮐﯿﺎ ﻟﯿﮑﻦ ﺑﺸﺮﯾﺖ ﮐﻮ ﻏﻼﻣﯽ ﺳﮯ ﻧﺠﺎﺕ ﺩﻻﻧﮯ ﮐﺎ ﻧﺴﺨﮧ ﺑﻌﻨﻮﺍﻥ ”ﮐﺮﺑﻼ” ﮨﻤﺎﺭﮮ ﺣﻮﺍﻟﮧ ﮐﺮ ﮔﺌﮯ ﺍﻭﺭ ﺁﺝ ﮨﻢ ﻣﯿﮟ ﺳﮯ ﮨﯽ ﺑﻌﺾ ﺍﻥ ﮐﮯ ﻣﻨﺸﻮﺭ ﺣﺮﯾﺖ ﺳﮯ ﻧﮧ ﺻﺮﻑ ﻏﺎﻓﻞ ﺑﻠﮑﮧ ﺍﺱ ﮐﯽ ﻏﻠﻂ ﺗﻔﺴﯿﺮ ﮐﺮ ﺭﮨﮯ ﮨﯿﮟ …ﺟﺲ ﺑﻘﯿﻊ ﮐﮯ ﻟﺌﮯ ﺁﺝ ﮨﻢ ﺳﻮﮔﻮﺍﺭ ﮨﯿﮟ ﺍﺳﯽ ﺑﻘﯿﻊ ﮐﯽ ﻗﺴﻢ ﺑﯿﺖﺍﻟﻤﻘﺪﺱ ﺍﻭﺭ ﻓﻠﺴﻄﯿﻦ ﮐﺎ ﻣﺴﺌﻠﮧ ﺷﯿﻌﮧ ﺳﻨﯽ ﮐﺎ ﻧﮩﯿﮟ ﯾﮧ ﺑﺎﻟﮑﻞ ﺑﻘﯿﻊ ﮐﯽ ﻃﺮﺡ ﻣﺴﺘﻀﻌﻒ ﻭ ﻣﺴﺘﮑﺒﺮﯾﻦ ﮐﮯ ﻣﺎ ﺑﯿﻦ ﺟﻨﮓ ﮐﺎ ﻣﺴﺌﻠﮧ ﮨﮯ ﮐﮧ ﻗﺮﺁﻥ ﻧﮯ ﺑﮭﯽ ﻣﺴﺘﻀﻌﻒ ﻭ ﻣﺴﺘﮑﺒﺮ ﮐﮯ ﻣﺴﺌﻠﮧ ﮐﻮ ﺍﮨﻢ ﺟﺎﻧﺎ ﮨﮯ ﭼﻨﺎﻧﭽﮧ ﺍﯾﮏ ﯾﮭﻮﺩﯼ ﺍﻭﺭ ﻣﺴﻠﻤﺎﻥ ﮐﮯ ﺩﺭﻣﯿﺎﻥ ﺍﺧﺘﻼﻑ ﮨﻮﺍ ﺍﻭﺭ ﺣﻖ ﯾﮩﻮﺩﯼ ﮐﮯ ﺳﺎﺗﮫ ﺗﮭﺎ ﯾﮩﻮﺩﯼ ﻧﮯ ﮐﮩﺎ ﮐﮧ ﭘﯿﻐﻤﺒﺮ (ﺹ ) ﮐﻮ ﺍﭘﻨﺎ ﺣﮑﻢ ﻗﺮﺍﺭ ﺩﯾﺘﮯ ﮨﯿﮟ ﺟﻮ ﻓﯿﺼﻠﮧ ﻭﮦ ﮐﺮﯾﮟ ﺍﺳﮯ ﺗﺴﻠﯿﻢ ﮐﯿﺎ ﺟﺎﺋﮯ ﮔﺎ ﻟﯿﮑﻦ ﻣﺴﻠﻤﺎﻥ ﻧﮯ ﺍﺱ ﺗﺠﻮﯾﺰﮐﻮ ﯾﻮﮞ ﺭﺩ ﮐﺮ ﺩﯾﺎ ﮐﮧ ﺟﺎﻧﺘﺎ ﺗﮭﺎ ﭘﯿﻐﻤﺒﺮ (ﺹ ) ﮐﺎ ﻓﯿﺼﻠﮧ ﮐﯿﺎ ﮨﻮﮔﺎ ﺍﺳﯽ ﻟﺌﮯ ﯾﮩﻮﺩﯼ ﮐﯽ ﺑﺎﺕ ﻧﮧ ﻣﺎﻥ ﮐﺮ ﯾﮩﻮﺩﯾﻮﮞ ﮐﮯ ﺍﯾﮏ ﺳﺮﺩﺍﺭ ” ﮐﻌﺐ ﺑﻦﺍﺷﺮﻑ” ﮐﮯ ﭘﺎﺱ ﭘﮩﻨﭽﺎ ﮐﮧ ﻭﮦ ﺩﻭﻧﻮﮞ ﮐﮯ ﺩﺭﻣﯿﺎﻥ ﻓﯿﺼﻠﮧ ﮐﺮﮮ ﺍﺱ ﻟﺌﮯ ﮐﮧ ﺭﺷﻮﺕ ﺩﮮ ﮐﺮ ﻓﯿﺼﻠﮧ ﺍﭘﻨﮯ ﺣﻖ ﻣﯿﮟ ﮐﺮﺍﻧﺎ ﺗﮭﺎ ﻣﺴﻠﻤﺎﻥ ﻧﮯ ﯾﮧ ﭼﺎﻝ ﭼﻠﯽ ﺍﺳﯽ ﻣﻘﺎﻡ ﭘﺮ ﺁﯾﺖ ﻧﺎﺯﻝ ﮨﻮﺋﯽ ” ﮐﮧ ﺑﻌﺾ ﻟﻮﮒ ﺩﻋﻮﺍﺋﮯ ﺍﺳﻼﻡ ﺗﻮ ﮐﺮﺗﮯ ﮨﯿﮟ ﻟﯿﮑﻦ ﻃﺎﻏﻮﺕ ﺳﮯ ﻣﺨﺎﻟﻔﺖ ﮐﯽ ﺟﺐ ﺑﺎﺕ ﺁﺗﯽ ﮨﮯ ﺗﻮﻣﺨﺎﻟﻔﺖ ﺗﻮ ﺩﻭﺭ ﻓﯿﺼﻠﮧ ﮐﺮﻧﮯ ﻭﺍﻻ ﮨﯽ ﺍﺳﮯ ﺑﻨﺎ ﺩﯾﺘﮯ ﮨﯿﮟ” ۶۰ ﺳﻮﺭﮦﻧﺴﺎﺀ۔
ﻣﺬﮐﻮﺭﮦ ﻣﺎﺟﺮﮮ ﻣﯿﮟ ﻗﺮﺁﻥ ﺍﯾﮏ ﻣﺴﻠﻤﺎﻥ ﮐﮯ ﻃﺮﯾﻘﮧ ﻋﻤﻞ ﮐﻮ ﺭﺩ ﮐﺮ ﮐﮯ ﯾﮩﮭﻮﺩﯼ ﮐﻮ ﺣﻖ ﭘﺮ ﻗﺮﺍﺭ ﺩﮮ ﺭﮨﺎ ﮨﮯ ﯾﻌﻨﯽ ﻗﺮﺁﻥ ﮐﺎ ﻭﺍﺿﺢ ﺍﻋﻼﻥ ﮐﮧ ﺍﮔﺮ ﻣﺴﻠﻤﺎﻥ ﮨﻮﺗﮯ ﮨﻮﺋﮯ ﻋﺪﺍﻟﺖ ﻭ ﺍﻧﺼﺎﻑ ﮐﯽ ﻗﺪﺭ ﺳﮯ ﻋﺎﺭﯼ ﮨﻮ ﺗﻮﺳﺐ ﺳﮯ ﭘﮩﻠﮯ ﺗﻤﮩﺎﺭﯼ ﺟﻮ ﻣﺬﻣﺖ ﮐﺮﮮ ﮔﺎ ﻭﮦ ﻗﺮﺁﻥ ﮨﻮﮔﺎ ﺍﻭﺭ ﺍﺱ ﮐﮯ ﺑﺮﺧﻼﻑ ﺍﮔﺮ ﯾﮭﻮﺩﯼ ﮨﻮﺗﮯ ﮨﻮﺋﮯ ﻣﻨﺼﻒ ﮨﻮﮔﮯ ﺗﻮ ﻗﺮﺁﻥ ﺗﻤﮩﺎﺭﯼ ﺣﻤﺎﯾﺖ ﮐﺮﮮ ﮔﺎ ﺑﺎﻟﮑﻞ ﺍﯾﺴﮯ ﮨﯽ ﺟﻨﺖ ﺍﻟﺒﻘﯿﻊ ﻭ ﻗﺪﺱ ﮐﺎ ﻣﻌﺎﻣﻠﮧ ﮨﮯ ﺷﯿﻌﮧ ﮨﻮﺗﮯ ﮨﻮﺋﮯ ﺑﮭﯽ ﺍﮔﺮ ﮨﻢ ﻣﻈﻠﻮﻣﻮﮞ ﺳﮯ ﻏﺎﻓﻞ ﮨﯿﮟ ﺑﻠﮑﮧ ﯾﮩﻮﺩ ﻭ ﺍﺳﺘﮑﺒﺎﺭﮐﻮ ﺣﮑﻢ ﻗﺮﺍﺭ ﺩﮮ ﺭﮨﮯ ﮨﯿﮟ ﺑﻘﯿﻊ ﮐی ﭘﺎﻣﺎﻟﯽ ﻗﺪﺱ ﮐﺎ ﺳﺒﺐ ﺑﻨﺎ ﺭﯾﮯ ﮨﯿﮟ ﺗﻮ ﯾﻘﯿﻨﺎ ﻣﺤﺎﻓﻈﯿﻦ ﻗﺮﺁﻥ ﻗﺒﺮﺳﺘﺎﻥ ﺑﻘﯿﻊ ﻣﯿﮟ ﺳﻮﻧﮯ ﻭﺍﻟﮯ ﻭﺍﺭﺛﺎﻥ ﻗﺮﺁﻥ ﮨﻢ ﺳﮯ ﻧﺎﺧﻮﺵ ﮨﯿﮟ ﮐﮧ ﻗﺮﺁﻥ ﺳﮯ ﺯﯾﺎﺩﮦ ﻋﺰﯾﺰ ﺍﻧﮩﯿﮟ ﮐﭽﮫ ﻧﮩﯿﮟ ﺍﺏ ﺍﮔﺮ ﺍﻥ ﮐﮯ ﺍﭘﻨﮯ ﮨﯽ ﻣﺎﻧﻨﮯ ﻭﺍﻟﮯ ﻗﺮﺁﻥ ﮐﮯ ﺧﻼﻑ ﺟﺎﺋﯿﮟ ﺗﻮ ﻭﮦ ﮐﯿﺴﮯ ﺑﺮﺩﺍﺷﺖ ﮐﺮﯾﮟ ﮔﮯ .ﺁﺝ ﭘﻮﺭﯼ ﺍﯾﮏ ﻻﺑﯽ ﮨﮯ ﺟﻮ ﮐﺎﻡ ﮐﺮ ﺭﮨﯽ ﯾﮯ ﮐﮧ ﻗﺪﺱ ﮐﻮ ﺍہلسنت ﮐﺎ ﻣﺴﺌﻠﮧ ﺑﻨﺎﺩﯾﺎ ﺟﺎﺋﮯ ﺍﻭﺭ ﺑﻘﯿﻊ ﮐﻮ ﺷﯿﻌﻮﮞ ﺳﮯ ﻣﺨﺼﻮﺹ ﮐﺮ ﺩﯾﺎ ﺟﺎﺋﮯ ﻟﯿﮑﻦ ﮐﯿﺎ ﮐﮩﻨﺎ ﮨﻤﺎﺭﮮ ﺍﻣﺎﻡ ﮐﺎ ﺟﻮ ﻓﺮﻕ ﺷﮕﺎﻓﺘﮧ ﮐﮯ ﺳﺎﺗﮫ ﺁﺧﺮ ﻭﻗﺖ ﻣﯿﮟ ﮨﻤﺎﺭﮮ ﮨﺎﺗﮭﻮﮞ ﻣﻌﯿﺎﺭ ﺩﮮ ﮔﯿﺎ ” ﮐﻮﻧﺎ ﻟلظالم ﺧﺼﻤﺎ ﻭﻟﻠﻤﻈﻠﻮﻡ ﻋﻮﻧﺎ. ﯾﮧ ﻧﮩﯿﮟ ﮐﮩﺎ ﮐﮧ ﻇﺎﻟﻢ ﮐﻮﻥ ﮨﻮ ﯾﮧ ﺑﮭﯽ ﻧﮩﯿﮟ ﮐﮩﺎ ﮐﮧ ﻣﻈﻠﻮﻡ ﮐﻮﻥ ﮨﻮ۔ ﮨﻢ ﻧﮯ ﻋﻠﯽ (ﻉ ) ﮐﯽ ﻭﺻﯿﺖ ﺳﮯ ﯾﮩﯽ ﺳﻤﺠﮭﺎ ﮐﮧ ﻇﺎﻟﻢ ﺟﻮ ﺑﮭﯽ ﮨﻮﺍﺱ ﺳﮯ ﺗﻌﻠﻖ ﺭﮐﮭﻨﺎ ﻋﻠﯽ ﮐﺎ ﻣﺮﺍﻡ ﻧﮩﯿﮟ ﻣﻈﻠﻮﻡ ﺟﻮ ﺑﮭﯽ ﮨﻮ ﺍﺱ ﺳﮯ ﺍﻇﮭﺎﺭ ﮨﻤﺪﺭﺩﯼ ﻣﮑﺘﺐ ﻋﻠﯽ (ﻉ ) ﮐﺎ ﺷﯿﻮﮦ ﮨﮯ … ﺑﻘﯿﻊ ﮐﮯ ﺯﺧﻤﻮﮞ ﮐﻮﺳﻨﺒﮭﺎﻟﮯ ﺁﺝ ﺍﻧﮭﺪﺍﻡ ﺑﻘﯿﻊ ﮐﮯ ﻣﻮﻗﻊ ﭘﺮ ﺟﺲ ﻃﺮﺡ ﮨﻢ ﺍﭘﻨﮯ ﻏﻢ ﻣﯿﮟ ﻏﻤﮕﯿﻦ ﮨﯿﮟ ﻭﯾﺴﮯ ﮨﯽ ﺍﺭﺽ ﻓﻠﺴﻄﯿﻦ ﮐﯽ ﺁﺯﺍﺩﯼ ﻭ ﺑﯿﺖ ﺍﻟﻤﻘﺪﺱ ﮐﯽ ﺑﺎﺯﯾﺎﺑﯽ ﮐﮯ ﻟﺌﯿﮯ ﺑﮭﯽ ﺩﻋﺎﺀ ﮔﻮ ﮨﯿﮟ ﺍﻭﺭ ﻟﺒﻮﮞ ﭘﺮ ﯾﮧ ﺯﻣﺰﻣﮧ ﮨﮯ ﭘﺮﻭﺭﺩﮔﺎﺭ ! ﺍﺏ ﻭﺍﺭﺙ ﺣﯿﺪﺭ ﮐﺮﺍﺭ ﮐﻮ ﺑﮭﯿﺞ ﺩﮮ ﮐﮧ ﺩﻧﯿﺎ ﺍﻧﺪﮬﯿﺮ ﮨﮯ . ﺍﻟﻠﮭﻢﺍﺭﻧﯽ ﺍﻟﻄﻠﻌﮧ ﺍﻟﺮﺷﯿﺪﮦ

زمرہ جات:   Horizontal 3 ، اسلام ،
دیگر ایجنسیوں سے (آراس‌اس ریدر)