روہنگیا بحران کی رپورٹنگ پر 2 صحافیوں کو مقدمات کا سامنا

جمال خاشقجی کے قتل پہ سعودی اعترافی بیان افسانہ ترازی ہے- واشنگٹن پوسٹ

ادلب: دہشت گردوں کے کیمیائی ہتھیاروں کے کارخانے میں دھماکہ، گیارہ ہلاک

اللہ تعالی نے جمال خاشقجی کے واقعہ میں سعودی عرب کو عالمی سطح پر رسوا کردیا ہے،سید حسن نصراللہ

اسرائیل کی دھمکیاں کھوکھلی ہیں: حزب اللہ کے نائب سربراہ

مہران باڈر میں طوفان کے نتیجے میں ایک زائر شہید ۱۵ زخمی

یمن: الحالی شہر پر سعودی بمباری پانچ عام شہری شہید، متعدد زخمی

نواز شریف، شاہد خاقان عباسی کے خلاف بغاوت کیس کی سماعت ملتوی

’’خاشقجی کے قتل کی وضاحت ضروری ہے‘‘

افغانستان میں دھماکا، بچوں اور عورتوں سمیت 11 شہری ہلاک

پاکستان ایران گیس پائپ لائن کا ٹھیکہ روس نے لے لیا

تائیوان میں خطرناک ٹرین حادثہ، 18 افراد ہلاک، درجنوں زخمی

اسرائیلی وزیراعظم نے فلسطینی آبادی کو مسمار کرنے کا ارادہ مؤخر کردیا

صحافی جمال خشوگی کی ہلاکت پر سعودی وضاحت ناکافی ہیں، جرمن چانسلر مرکل

کراچی: ’غلط چالان‘ پر خودسوزی کرنے والا رکشہ ڈرائیور چل بسا

آئندہ ای سی ایل میں نام کی اطلاع 24 گھنٹے میں کردی جائے گی: سیکریٹری داخلہ

9کشمیریوں کی شہادت پر وادی میں مکمل ہڑتال

مشترکہ تربیتی مشقوں کیلئے روسی فوجی دستے کی پاکستان آمد

’’جعلی اکاؤنٹس معاملہ، سندھ حکومت تعاون نہیں کر رہی‘‘

جنوبی پنجاب صوبے کا خواب پی ٹی آئی کے دور میں پورا ہوگا، وزیراعلیٰ پنجاب

وقت آگیاہےبھارت مسئلہ کشمیرکومذاکرات سےحل کرے، وزیراعظم عمران خان

جمال خاشقجی کا قتل ایک سنگین غلطی تھی: عادل الجبیر

وزیر اعظم عمران خان کی بنی گالہ رہائش گاہ کو بچانے کی کوششیں

ڈیرہ غازی خان میں دو بسوں میں خوفناک تصادم، 19 افراد جاں بحق

امریکا اور روس آمنے سامنے: ایٹمی ہتھیاروں کے معاہدے کی منسوخی پر روس کی امریکا کو دھمکی

عالمی قوتوں کا صحافی کی موت پر سعودی وضاحت کو ماننے سے انکار، ٹرمپ یو ٹرن لینے پر مجبور

ایم ڈبلیوایم رہنما ناصرشیرازی کا وفد کے ہمراہ دورہ بہاولنگر، پولیس گردی کا نشانہ بننے والے خاندان سے اظہار یکجہتی

صحیفہ سجادیہ میں اسلامی سیاست کے طور طریقے موجود ہیں

33 ہزار پاکستانی زائرین ایران کے راستے کربلا کیلئے روانہ

سعودی عرب نے خاشقجی کے قتل کے بارے میں تمام حقائق بیان نہیں کئے

سعودی تعاون مگر کس قیمت پہ؟

ایرانی محافظوں کی بازیابی کیلئے آرمی چیف سے مدد کی درخواست

جمال خشوگی کیس، سعودی وضاحت سے مطمئن نہیں، ٹرمپ

بابری مسجد کی شہادت میں ملوث ہندو انتہا پسند شہری نے اسلام قبول کرلیا

کراچی این اے 247 میں 12 امیدوارمیدان میں

این اے 247 ضمنی الیکشن‘ صدر پاکستان ڈاکٹرعارف علوی نےاپنا ووٹ کاسٹ کردیا

نئے پاکستان کی تعمیر کی جدوجہد میں سب کوکردار ادا کرنا ہوگا ‘ عثمان بزدار

ملتان، جعلی ڈگریاں فروخت کرنے والال ٹیچر گرفتار

زائرین کو درپیش مسائل کیخلاف علمائے بلتستان کا احتجاج

شام: داعش نے 27 مغویوں میں سے دو خواتین اور 4 بچوں کو رہا کر دیا

روز لیلة الہریر

سینیٹر رحمن ملک کا وزیراعظم کو خط

جمال خاشقجی قونصل خانے کے اندر جھگڑے میں مارا گیا: سعودی اٹارنی جنرل

مقبوضہ کشمیر: بھارتی فوج کا ریاستی جبر جاری، مزید 3 کشمیری جاں بحق

کابل پولنگ اسٹیشن دھماکہ: 5 پولیس اہلکاروں سمیت 15 افراد جاں بحق

آئی این ایف معاہدہ: ’روس نے خلاف ورزی کی، امریکہ اس معاہدے سے نکل جائے گا‘

جمال خاشقجی کی ہلاکت کے معاملے پر برطرف کیے گئے جنرل احمد العسیری کون ہیں؟

قندھار حملہ: ’طالبان اور پاکستان مخالف‘ جنرل عبدالرازق کون تھے؟

ایران کے خلاف امریکی اقدامات، مشرق وسطیٰ بحران کے لئے زہر قاتل: پیوٹن

غزہ: اسرائیلی فوج کا فلسطینیوں پر طاقت کا وحشیانہ استعمال، دسیوں افراد زخمی

ساڑھے تین منٹ میں 300 فلسطینیوں کو شہید کر دیا تھا: ایہود باراک

ضمنی الیکشن: قومی وصوبائی اسمبلیوں کی 3 نشستوں پر پولنگ جاری

غزہ: فلسطین کا بچہ بچہ سروں پر کفن باندھ کر دشمن کے خلاف میدان جہاد میں اترے گا: القسام

خشوگی کی لاش حوالے کی جائے، حقوق انسانی کی تنظیم کا سعودی عرب سے مطالبہ

افغانستان کے خونریز پارلیمانی انتخابات

پاکستانی زائرین اربعین کے لئے ایران میں سہولتیں

امریکی اراکین کانگریس کا سعودی عرب کے ساتھ تعلقات پر نظرثانی کی ضرورت پر زور

جمال خاشقجی کے قاتلوں کے نام اور تفصیلات

عمران خان کا نیا پاکستان عوام کیلئے ڈراؤنا خواب بن چکا ہے، بلاول بھٹو

آئی ایم ایف سے لیا جانے والا موجودہ قرضہ آخری ہوگا، اسد عمر

وزیراعلیٰ سندھ نے بجلی بریک ڈاؤن کا نوٹس لے لیا

’’صوبہ بنانے کیلئے آئینی طریقہ کار موجود ہے‘‘

اساتذہ کی تربیت کے لیے عالمی اسکالرز کو پاکستان بلائیں گے: صوبائی وزیر تعلیم

سانحہ ماڈل ٹاؤن پر لاہور ہائی کورٹ کافیصلہ سپریم کورٹ میں چیلنج

’’بجلی بریک ڈاؤن، وفاق، نیپرا کے الیکٹرک سے جواب طلب کرے‘‘

کاروبارمیں اتارچڑھاؤآتے رہتے ہیں پریشان نہیں ہونا چاہیے‘ اسد عمر

خاشقجی کے دو مشتبہ قاتلوں کی نئی تصاویر منظرعام پر

پاکستان کیلئےکھیلوں کی دنیا سےایک اوراعزاز

سعودی صحافی بہیمانہ قتل:خطیب جمعہ تہران کا سعودی عرب کے سنگین اور مجرمانہ جرائم کی طرف اشارہ

عرب علاقوں پر صیہونی قبضہ علاقے میں بدامنی کی سب سے بڑی وجہ: بشار جعفری

شیعہ سعودی شہری انتہائی سخت حالات میں زندگی بسر کر رہے ہیں: ہیومن رائٹس

2018-07-11 10:25:06

روہنگیا بحران کی رپورٹنگ پر 2 صحافیوں کو مقدمات کا سامنا

گرفتار صحافی وا لون کو مقدمے سے قبل ہونے والی پیشی میں پولیس کی کڑی نگرانی میں عدالت لایا جارہا ہے—فوٹو: اے ایف پی

یانگون: میانمار کی عدالت نے برطانوی خبر رساں ادارے رائٹرز سے تعلق رکھنے والے 2 صحافیوں پر روہنگیا کے خلاف قتل عام کی رپورٹنگ کے دوران راز داری برتنے کے ملکی قانون کی خلاف ورزی پر مقدمات چلانے کے احکامات دے دیے۔فرانسیسی خبر رساں ادارے ’اے ایف پی‘ کی رپورٹ کے مطابق مذکورہ فیصلے کے دن کو ملکی تاریخ میں آزادانہ صحافت کا سیاہ دن قرار دیا جارہا ہے۔خیال رہے کہ میانمار کے شہری صحافی 32 سالہ ’وا لون‘، اور 28 سالہ ’یا سوئی او‘ کو دسمبر 2017 میں گرفتار کیا گیا تھا اور ان پر الزام عائد کیا گیا تھا کہ ان کے پاس رخائن اسٹیٹ میں سیکیورٹی آپریشن سے متعلق حساس نوعیت کی دستاویزات تھیں۔دونوں صحافی باضابطہ مقدمہ چلنے سے 7 ماہ قبل سے ہی زیر حراست ہیں، جنہیں میانمار کے راز داری برتنے کے قانون کے تحت گرفتار کیا گیا تھا۔

اس سلسلے میں مقدمے کی پہلی سماعت کے لیے 16 جولائی کی تاریخ مقرر کی گئی، دونوں صحافیوں پر اگر الزام ثابت ہوگیا تو انگریز دور کے بنے ہوئے قانون کے تحت انہیں 14 سال تک کی سزا ہوسکتی ہے۔اس حوالے سے خبر رساں ادارے کا کہنا تھا کہ دونوں صحافی بے گناہ ہیں اور وہ ستمبر میں روہنگیا مسلمانوں کے خلاف ہونے والے قتل عام کی رپورٹنگ کر کے صرف اپنی صحافتی ذمہ داری ادا کررہے تھے، ادارے نے عدالت پر زور دیا کہ دونوں صحافیوں کے خلاف مقدمہ خارج کیا جائے۔تاہم اس حوالے سے عدالت نے فیصلہ کیا کہ صحافیوں کے خلاف اس الزام کے کافی شواہد موجود ہیں کہ وہ سرکاری افسران سے معلومات اکھٹی کررہے تھے۔دوسری جانب صحافیوں کے خلاف عدالتی حکم کو دائیں بازو کی تنظیموں اور غیر ملکی مبصرین کی جانب سے تنقید کا نشانہ بنایا گیا اور اسے آزادی صحافت کے منافی قرار دیا گیا جبکہ اسے روہنگیا بحران کی رپورٹنگ کو روکنے کے مترادف دیکھا جارہا ہے۔
ادھر ایمنسٹی انٹرنیشنل، ہیومن رائٹس واچ اور آزادانہ تقریر کی تنظیم آرٹیکل 19 نے اس اقدام کو آزادی اظہار رائے کا گلہ گھوٹنے کی کوشش قرار دیا۔اس سلسلے میں ایمنسٹی انٹرنیشنل کی ڈائریکٹر آف کرائسز رسپانس ترانہ حسن کا کہنا تھا کہ یہ ’میانمار میں صحافت کے لیے تاریک دن ہے‘، اس کے ساتھ انہوں نے عدالتی حکم کو مضحکہ خیز اور سیاسی اقدام قرار دیا۔اس حوالے سے آرٹیکل 19 کا کہنا تھا کہ یہ فیصلہ میانمار کی جانب سے رخائن اسٹیٹ میں جاری بحران کی رپورٹنگ روکنے کے سلسلے کی ایک کڑی ہے اور حکومت کی انسانی حقوق کی تنظیموں کی آنکھوں میں دھول جھونکنے کی کوششیں ہیں۔

زمرہ جات:   Horizontal 2 ، دنیا ،
دیگر ایجنسیوں سے (آراس‌اس ریدر)

یادوں کے جھروکے

- سحر ٹی وی

عمران خان کے استاد

- بی بی سی اردو