روس کے سابق جاسوس کو کیمیائی زہر دینے پر امریکہ کی روس پر پابندیوں کا اعلان

اسرائیلی فوج کی کارروائی، فلسطینی رکن پارلیمنٹ کی اہلیہ گرفتار

شہادت حضرت امام محمد تقی علیہ السلام

میکسیکو صحافیو ں کیلئے خطرناک ترین ملک قرار

عمران خان کی جہانگیر ترین اور علیم خان سے ملاقات

یمنی فوج نے یکطرفہ بحری جنگ بندی کی مدت کے خاتمے کا اعلان کر دیا

گورنرخیبرپختونخواکا بھی استعفیٰ دینےکافیصلہ

منی لانڈرنگ کیس: آصف زرداری کے ناقابل ضمانت وارنٹ گرفتاری جاری

روس قطب شمالی میں ’تیزی سے اپنی فوجی قوت میں اضافہ کر رہا ہے‘

بم کا خدشہ، مختلف ممالک میں 9طیاروں کی ہنگامی لینڈنگ

فلسطین کی ڈاک آٹھ سال بعد اسرائیل سے بازیاب

ایران پر دباؤ بڑھانے کے لیے امریکی ’ایکشن ٹیم‘ کا اعلان

یورپ و برطانیہ کے درمیان بریگزیٹ پر مذاکرات آج

چین امریکا کو نشانہ بنانے کی تیاری کررہا ہے، پینٹاگون کا الزام

ولادی میر پیوٹن، رجب طیب اردوگان اور حسن روحانی کے درمیان جلد ملاقات کا امکان

بھارتی ریاست کیرالا میں سیلاب، 106 افراد ہلاک، لاکھوں بے گھر

گلیشیئر پگھلا تو طیارہ نکلا

چین تحریک انصاف کی حکومت کےساتھ مل کرکام کرنےکا خواہشمند

منی لانڈرنگ کی تحقیقات، نیب نے میاں منشا کو آج صبح طلب کرلیا

الیکشن کمیشن نے ضمنی انتخابات کا شیڈول تیار کر لیا

پاکستان کا نام گرے لسٹ سے نکالنے کے سلسلے میں اہم مذاکرات اور پیشرفت

پاک بھارت ڈی جی ایم اوز کا رابطہ، پاکستان کا بھارتی اشتعال انگیزی پر تحفظات کا اظہار

عمران خان نے پارلیمانی پارٹی کا اجلاس طلب کرلیا

نیا صوبہ بنانے کے لیے کراچی میں 50 لاکھ لوگوں کے دستخط کرائیں گے، فاروق ستار

پی آئی اے کے چیف فنانشل آفیسر نیر حیات کو عہدے سے ہٹا دیا گیا

اپوزیشن صرف پی ٹی آئی کےخوف کی وجہ سے اکٹھی ہوئی، شاہ محمود

16 لاکھ عازمین حج کی سعودی عرب آمد

کابل میں ایک اور حملہ، ملٹری ٹریننگ سینٹر پر دھاوا

عبدالقدوس بزنجو نئے اسپیکر بلوچستان اسمبلی منتخب ہوگئے

مرادعلی شاہ کی تقریرمیں کچھ نیانہیں تھا، خواجہ اظہار

سانگھڑ میں گیس و تیل کا ذخیرہ دریافت کرلیا گیا

پیپلزپارٹی نے موقف بدلا ،وہی جواب دے سکتے ہیں،رانا ثناء

عید پرسیکورٹی یقینی بنانے کیلئے رینجرزکا اعلیٰ سطح کا اجلاس

انورمجید گرفتار،نگراں وزیرداخلہ کا ڈی جی ایف آئی اے سےرابطہ

ایم ڈبلیوایم کے وفدکی قائم مقام افغان سفیر سے ملاقات،تعلیمی مرکز پر حملے کی مذمت ،شہداءکیلئے فاتحہ خوانی

ہم ترکی کے ساتھ کھڑے ہیں:قطر نے اعلان کر دیا

خواجہ آصف کے خلاف انکوائری کرنے کی منظوری

چلی میں بزرگوں کے مرکزمیں آگ لگنے سے 10 خواتین ہلاک

وزارت عظمیٰ کیلئے عمران خان اور شہباز شریف کے کاغذات منظور

پرویز الٰہی پنجاب اسمبلی کے اسپیکر منتخب،حلف اٹھا لیا

سوڈان : کشتی ڈوبنے سے اسکول کے 21 بچے ہلاک

تینتیس روزہ جنگ کو بارہ سال مکمل ہونے پر سید حسن نصر اللہ کا خطاب

نبی کریم ﷺکی مکہ معظمہ آمد

ایران کی جانب سے کابل دھماکے کی مذمت

بیت المقدس اور قلقیلیہ میں مکانات مسماری کی شرانگیز صہیونی مہم!

غزہ ۔ غرب اردن کے درمیان تجارتی راہ داری ایک ماہ بعد کھول دی گئی

ٹرمپ نے سابق سی آئی اے چیف کو بلیک لسٹ کر دیا

مسجد نبویﷺ کے خطیب ڈاکٹر حسین بن عبدالعزیزآل الشیخ خطبۂ حج دیں گے

یمن اور بحرین پر جارحیت کرنے والے شیطان سے بدتر ہیں، اہلسنت عالم دین

پاکستان کی افغان دارالحکومت کابل میں دہشت گردی کی مذمت

امریکا اقتصادی پابندیوں کے ذریعے ایران کو جھکانا چاہتا ہے: ایرانی نائب صدر

کمبوڈیا کے پارلیمانی انتخابات ،حکمران جماعت فاتح

دنیا کے کسی بھی ملک کو امریکہ پر کبھی اعتماد نہیں کرنا چاہئے:حزب اللہ لبنان

پاکستان کے یوم آزادی پر کینیڈا کے وزیراعظم کا پیغام

ایم ایم اے کا وزیراعظم کے لئے شہباز شریف کو ووٹ نہ دینے کا عندیہ

پرچم کشائی کی تقریب کے دوران بھارتی جھنڈ زمین پر آگرا

عمران نااہلی کیس، جسٹس اطہر من اللہ کی معذرت، بنچ ٹوٹ گیا

’’پہلے پٹائی کرو پھر دباؤ ڈال کر صلح کرلو‘‘

’’وزیر اعظم کی تقریب حلف برداری سادگی سے ہو گی‘‘

کوئٹہ میں کوئلے کی کان سے مزید 2 لاشیں نکال لی گئیں

علیم خان کے وکیل کو جواب دینے کیلئے آخری مہلت

محمود خان خیبرپختونخوا کے وزیراعلیٰ منتخب

جسٹس (ر) دوست محمد نے وزیر اعلیٰ ہاؤس خالی کردیا

مسجد اقصیٰ جل رہی ہے

پنجاب اسمبلی کا پہلا اجلاس، صوبہ بنانے کی قرار دادسامنےآگئی

غزہ میں حماس کے ساتھ جنگ بندی معاہدے کے قریب ہیں: اسرائیلی عہدیدار

اسرائیل کے خلاف مسلح مزاحمت جاری رکھیں گے، انصاراللہ ،حزب اللہ

طالبان کا ریڈ کراس کو محفوظ راستہ نہ دینے کا اعلان

ترک عوام اردغان کی شام مخالف پالیسی کے خلاف ہیں:سینئر ترک صحافی

افغانستان: مہدیؑ موعود شیعہ یونیورسٹی پر حملہ

یورپ ایران مخالف امریکی دباؤ کے سامنے سر نہیں جھکائے گا:جرمن وزیر خزانہ

2018-08-09 07:46:19

روس کے سابق جاسوس کو کیمیائی زہر دینے پر امریکہ کی روس پر پابندیوں کا اعلان

20

امریکہ کا کہنا ہے کہ وہ برطانیہ میں سابق روسی جاسوس کو زہریلے مواد کے ذریعے ہلاک کرنے کی کوشش پر روس کے خلاف تازہ پابندیاں عائد کرے گا۔سابق روسی جاسوس اور اُن کی بیٹی رواں سال مارچ میں برطانیہ کے علاقے سیلسبری کے شاپنگ سینٹر کے بینچ پر بے ہوش پائے گئے تھے۔ جس کے بعد پولیس نے ‘احتیاطی تدبیر’ کے طور پر وہ ریسٹورینٹ بھی بند کروا دیا تھا۔برطانیہ کے تفتیش کاروں نے اس حملے کا الزام روس پر عائد کیا ہے لیکن روس نے اس حملے میں اپنے ملوث ہونے کی تردید کی ہے۔روس کے سابق جاسوس سرگئے سکرپیل روسی فوج میں انٹیلیجنس آفیسر تھے اور 2006 میں برطانیہ کے لیے جاسوسی کرنے کے جرم میں انھیں 13 سال قید کی سزا ہوئی تھی۔انھیں امریکہ اور روس کے مابین 2010 میں طے پانے والے ‘جاسوسوں کے تبادلے کے معاہدے’ کے تحت رہا کیا گیا تھا۔ اس معاہدے کے تحت روس نے دس امریکی جاسوس رہا کیے تھے جبکہ ماسکو نے چار قیدیوں کو رہا کیا تھا۔کرنل سکرپیل بعد میں برطانیہ آ گئے تھے۔

روس نے امریکہ کی جانب سے ان نئی پابندیوں پر تنقید کرتے ہوئے اسے ‘ظالمانہ’ قرار دیا ہے۔بدھ کو جاری ہونے والے بیان میں امریکہ کے محکمہ خارجہ نے روس کے خلاف پابندیوں کے اطلاق کی تصدیق کی۔محکمہ خارجہ کی ترجمان ہیتھر نوریٹ نے کہا کہ اس بات کی تصدیق ہو گئی ہے کہ ‘بین الااقوامی قوانین کی خلاف ورزی کرتے ہوئے کیمیائی یا بائیولوجیکل ہتھیار استعمال کیے یا پھر اپنے ہی شہری کے خلاف کیمیائی مہلک ہتھیار استعمال کیے ہیں۔’برطانوی حکومت نے روس کے خلاف امریکہ کی ان اقدامات کا خیر مقدم کیا ہے۔برطانیہ کے محکمہ خارجہ نے اپنے بیان میں کہا کہ ‘سیلسبری میں کیمیائی ہتھیار کے استعمال پر بین الاقوامی برادری کے منہ توڑ جواب سے روس کو یہ پیغام جاتا ہے کہ اُس کے جارہانہ اور غیر محتاط رویے کو ایسے ہی نظر انداز نہیں کیا جائے گا۔’امریکہ میں روس کے سفارت خانے نے امریکی پابندیوں پر تنقید کرتے ہوئے کہا ہے کہ اس حملے میں روس کو ملوث کرنے کے الزامات ‘مبالغہ آرائی’ پر مبنی ہیں۔روسی سفارت خانے نے کہا کہ ‘روس کو شواہد اور حقائق نہ سننے کی اب عادت ہو گئی ہے۔’ بیان میں کہا گیا ہے کہ ‘ہم سیلسبری میں اس جرم کرنے والے کا پتہ لگانے کے لیے شفاف انکوائری کے حق میں ہیں۔’

روس پر عائد نئی پابندیوں کا اطلاق 22 اگست سے ہو گا اور اس کے بعد روس حساس الیکٹرانک آلات اور دیگر ٹیکنالوجی کو درآمد نہیں کر سکتا ہے۔امریکی محکمہ خارجہ کا کہنا ہے کہ اگر روس نے دوبارہ کیمیائی ہتھیار استعمال نہ کرنے کی یقین دہانی نہیں کروائی اور اقوام متحدہ کے معائنہ کاروں کو اجازت نہ دی تو پھر روس کے خلاف 90 دن کے بعد مزید ‘سخت’ پابندیاں عائد کی جائیں گی۔’ایک اہلکار نے بتایا کہ یہ تیسری مرتبہ ہے جب امریکہ نے روس پر شہریوں کے خلاف کیمیائی اور بائیولوجیکل ہتھیاروں کے استعمال کرنے کی تصدیق کی ہے۔ماضی میں کیمیائی ہتھیاروں کا استعمال شام اور شمالی کوریا میں کیا گیا۔

Leave a Reply

Your email address will not be published. Required fields are marked *

زمرہ جات:   دنیا ،
دیگر ایجنسیوں سے (آراس‌اس ریدر)