نہ تھا رقیب تو آخر وہ نام کس کا تھا؟

صومالیہ: امریکی فضائی حملے میں 52 ’جنگجو‘ ہلاک

جناح سندھ میڈیکل یونیورسٹی کے ہزاروں طلبا کا مستقبل خطرے میں پڑگیا

مسلم لیگ (ق) کا اختلافات وزیراعظم کے سامنے اٹھانے کا فیصلہ

پریس ٹی وی کی اینکر کی گرفتاری، امریکی دوغلی پالیسی کی واضح مثال

یمن پرسعودی جنگی طیاروں کی جارحیت متعدد افراد شہید

حضرت فاطمہ زہرا(س) کی شہادت پر پوری دنیا سوگوار و عزادار

سانحہ ساہیوال: بچوں کی تمام تر ذمہ داری ریاست پر عائد ہوتی ہے، وزیراعظم

وزیراعلیٰ بلوچستان کی یقین دہانی کے بعد لاپتہ افراد گھروں کو لوٹنے لگے

ساہیوال واقعے کا مقدمہ سی ٹی ڈی اہلکاروں کیخلاف درج، ورثا کا احتجاج ختم

کینسر کے علاج کا نیا طریقہ دریافت

’رواں سال ملکی تاریخ میں سب سے زیادہ برآمدات کا ہدف حاصل کرلیں گے‘

میکسکو میں تیل کی پائپ لائن میں دھماکا، 21 افراد ہلاک

امریکی عدالتی کارروائی پر بھروسہ نہیں کیا جا سکتا، مرضیہ ہاشمی کے بچوں کا بیان

امریکی فوجیوں کی موجودگی کے خلاف عراقیوں کا احتجاجی اجتماع

امریکا پر ترک حکومت کی تنقید

شام میں عراقی فورسز کی کارروائی، 35 داعشی ہلاک و زخمی

افسوس حکمران اشرافیہ ملک کی خوبصورتی کونہیں سراہتی، یہی وجہ ہے ای سی ایل ان کے لیے بڑی آفت ہے، وزیراعظم

'بلاول کو سیاست کیلئے زرداری کے بجائے بھٹو بننا پڑے گا'

یمن میں بچے سکولوں سے نکل کر مزدوری کرنے لگے

ڈونلڈ ٹرمپ اور کم جونگ اُن کی دوبارہ ملاقات آئندہ چند ہفتوں میں متوقع

شام: اسلحہ ڈپو پر بمباری سے 11 افراد ہلاک

وزیراعظم کی سی پیک کے تحت اقتصادی منصوبے تیز کرنے کی ہدایت

خطے میں ایران کا کردار مثبت اور تعمیری ہے: اقوام متحدہ

امریکی اتحادی جنگی طیاروں کی بمباری 20 جاں بحق

پرامن واپسی مارچ پر فائرنگ 43 فلسطینی زخمی

الحدیدہ پر سعودی اتحاد کے حملے میں یمنی شہریوں کا جانی نقصان

مغربی حلب میں شامی فوج نے دہشت گردوں کا حملہ پسپا کر دیا

گستاخانہ خاکوں کی روک تھام کا مطالبہ

امریکہ کی ایران مخالف تجویز پر اردن کی مخالفت

افغان مفاہمتی عمل پر مایوسی کے بادل منڈلانے لگے

ڈونلڈ ٹرمپ پر وکیل کو کانگریس سے جھوٹ بولنے کی ہدایات دینے کا الزام

راحیل شریف کو سعودی فوجی اتحاد کی سربراہی کیلئے این او سی جاری

پولیس کا مختلف علاقوں میں سرچ آپریشن، 10 ملزمان گرفتار، اسلحہ برآمد

پیراگون ہاؤسنگ اسکینڈل ، خواجہ برادران کو آج احتساب عدالت میں پیش کیا جائےگا

ملٹری کورٹس فوج کی خواہش نہیں، ملک کی ضرورت ہیں، ڈی جی آئی ایس پی آر

بھارت: صحافی کے قتل کے جرم میں مذہبی پیشوا کو عمر قید کی سزا

کسی کاباپ بھی پی ٹی آئی حکومت نہیں گراسکتا،فیصل واوڈا

ممتاز دفاعی تجزیہ کار اکرام سہگل کے الیکٹرک کے نئے چیئرمین مقرر

نواز شریف کا لابنگ کےلئے قومی خزانے کے استعمال کا انکشاف ، وزیراعظم عمران خان نے نوٹس لے لیا

فیس بک نے روس سے تعلق رکھنے والے سیکڑوں اکاؤنٹس اور پیجز بند کردیے

شام میں داخلے کے لئے سرحدی علاقوں میں عراقی فورسز چوکس/ امریکی داعش کے لئے جاسوسی کررہے ہیں!

’رزاق داؤدسےمجھے کوئی ذاتی مسئلہ نہیں‘

وزیراعظم کی سی پیک پر کام تیز کرنے کی ہدایت

سوڈان: روٹی کی قیمت پر احتجاج میں شدید، مزید دو افراد ہلاک

کولمبیا میں کار بم دھماکہ، 90 ہلاک و زخمی

ٹرمپ کے حکم پرانتخابات میں دھاندلی کرنے کا اعتراف

آسٹریلیا میں اسلاموفوبیا

برطانوی وزیر اعظم نئی مشکل سے دوچار

صوبائی خودمختاری برقرار رکھنے کی ضرورت ہے، جسٹس مقبول باقر

امریکہ کو ایران کا انتباہ

بحرین میں انسانی حقوق کی ابتر صورتحال

سعودی فوجی ٹھکانے پر میزائلی حملہ

بطورچیف جسٹس آصف سعید کھوسہ نے ایک گھنٹے کے اندر پہلے مقدمے کا فیصلہ سنادیا

جماعت اسلامی اور جمعیت علما اسلام نے افغان طالبان کے ساتھ مذاکرات کو خوش آئند قرار دے دیا

’’سندھ حکومت نہیں گرا رہے، خود گرنے والی ہے‘‘

کراچی میں پانی و سیوریج لائنیں ٹوٹنے پر سعید غنی برہم

کسی کو صوبوں کا حق چھیننے نہیں دیں گے، چیئرمین پیپلز پارٹی

پریس ٹی وی کی اینکر کی عالمی سطح پررہائی کا مطالبہ

اقوام متحدہ کے خصوصی ایلچی کی شامی وزیر خارجہ سے ملاقات

جسٹس آصف سعید کھوسہ نے 26ویں چیف جسٹس کے عہدے کا حلف اٹھالیا

آسٹریلین اوپن، جوکووچ نے تیسرے راؤنڈ میں جگہ بنالی

زلمے خلیل زاد کی وزیر خارجہ سے ملاقات

پیغام پاکستان۔۔۔۔۔ ابھی بہت کچھ کرنا باقی ہے

’ہمارے اراکین پارلیمنٹ ای سی ایل میں نام آنے سے خوفزدہ کیوں؟‘

کراچی: رینجرز نے ڈکیتی کی کوشش ناکام بنادی

اماراتی فضائی کمپنی کا شام کےلیے فلائیٹ آپریشن بحال کرنے کا اشارہ

عمران خان 5 نہیں 10 سال نکالیں گے، سینیٹر فیصل جاوید

وزیراعظم کے ٹوئٹ پر مخالفت کرنےوالوں کووزیراطلاعات کاکراراجواب

وزیر اعلیٰ سندھ تعاون کریں تو زیادہ نوکریاں دے سکتا ہوں: آصف زرداری

مسجد الاقصی کے دفاع کا عزم

2018-08-31 14:17:02

نہ تھا رقیب تو آخر وہ نام کس کا تھا؟

139

پاک امریکہ جیسے تعلقات شاید دنیا کے کسی بھی دو ملکوں کے درمیان نہ ہوں گے۔ ستر برسوں کے یہ دوطرفہ تعلقات کی تاریخ دلچسپ بھی ہے عجیب وغریب بھی اور عبرت ناک بھی۔۔لیکن تاریخ میں کبھی کبھی ایسا بھی ہوتا رہا ہے کہ اچانک محبوب کو اپنے عاشق بدحال پہ اپنے ہی مفادات کیلئے سہی ترس بھی آیا ہے اور محبت بھی۔ 1950ء سے لیکر 1960ء کے عشرے میں سینٹو اور سیٹو سے ہوتے ہوئے بڈھ بیر کے فضائی اڈے کی فراہمی تک سب اسی محبت نابکار کے شاخسانے تھے کہ ہم اپنا سب کچھ لٹانے پر بھی تیار ہوئے، اس غرض سے کہ امریکہ بہادر اتنی قربانی کے بدلے ہمیں اپنے خونخوار اور متعصب پڑوسی کی جارحیت کی صورت میں کم ازکم اپنے پیسوں پر اسلحہ ضرور فراہم کرے گا۔ اس مقصد کیلئے باقاعدہ معاہدہ کیا گیا لیکن جب 1965ء میں وہ لمحہ آیا تو معاہدے کی تاویل یہ پیش کی گئی کہ وہ روسی جارحیت سے بچاؤ کیلئے تھا۔

بھارت تمہارا پڑوسی ہے تم جانو اور وہ جانے۔ اسی جنگ کے بعد ایوب خان کو پتہ چلا کہ دوستی کرنے کیلئے اپنے برابر کے لوگوں کو دیکھنا چاہئے۔ اپنے سے بڑوں کیساتھ دوستی کے بظاہرکتنے ہی بلند وبانگ نعرے اور مظاہرے کئے جائیں بڑا آخر اپنے آپ کو آقا ہی سمجھتا ہے۔ اسی لئے الطاف گوہر (سیکرٹری اطلاعات) کو جنرل ایوب کی طرف سے ’’آقا نہیں، دوست‘‘ نامی کتاب لکھنا پڑی۔ اس کتاب میں عبرت کا بڑا سامان ہے اور شاید بھٹو صاحب نے اسی سے سبق لیتے ہوئے روس اور اسلامی ممالک کیساتھ تعلقات استوار اور مضبوط کرنے کی بنیاد ڈالی اور شاید لاہور اسلامی سربراہ کانفرنس کے اعلامیے ہی آقاؤں کو اچھے نہ لگے اور ذوالفقار علی بھٹو اُن کی آنکھوں میں خار کی طرح کھٹکنے لگے۔

ذوالفقار علی بھٹو کے جانے کے بعد ضیاء دور میں پاکستان کو گھاس ڈالنے کے قابل بھی نہیں سمجھا جا رہا تھا کہ اچانک افغانستان پر روس نے تاریخی غلطی کرتے ہوئے حملہ کر دیا۔ جس کی وجہ سے ایک دفعہ پھرپاکستان کی اہمیت اور ضرورت محسوس ہوئی اور دونوں بالخصوص سی آئی اے اور آئی ایس آئی نے کمال اشتراک عمل کا مظاہرہ کرتے ہوئے روس جیسی سپرطاقت کو کئی ملکوں میں تقسیم کرکے دکھایا اور اس کے بعد ایک دفعہ پھر پاکستان نظرانداز ہوا لیکن جب 9/11 کا واقعہ ہوا تو افغانستان پر حملہ کیلئے پاکستان کی اشد بلکہ ناگزیر ضرورت محسوس کرکے پرویز مشرف کو آدھی رات کو آرمٹیج نے فون کر کے وہ کچھ حاصل کیا جو اُن کے وہم وگمان میں نہ تھا۔ ڈونلڈ ٹرمپ نے صدر بننے سے پہلے پاکستان اور عالم اسلام کے بعض دیگر ممالک کے بارے میں سخت لائحہ عمل کا عندیہ دیا تھا لیکن صدر بننے کے بعد پاکستان اور پاکستان کے حوالے سے بڑی خوشگوار گفتگو سامنے آئی جس کی بہت جلد اپنے بعد کے بیانات میں تردید کی گئی۔

اس وقت امریکہ اور پاکستان کے درمیان تعلقات بہت گہری پیچیدگیاں لئے ہوئے بہت کشیدہ ہیں۔ اتنے کشیدہ کہ شاید اس سے پہلے کبھی ایسے ہوئے ہوں۔ اصل کشیدگی افغانستان کے حوالے سے ہے۔
پاکستان کا مؤقف واضح اور مبنی بر حقائق یہ ہے کہ پاکستان نے اس جنگ میں آج تک جو نقصان اُٹھایا ہے اتنا دنیا کے کسی دوسرے ملک نے نہیں اُٹھایا۔ اس کے باوجود امریکہ اس کا اعتراف تو درکنار اُلٹا پاکستان کو معاشی وعسکری مشکلات میں دھکیل رہا ہے۔ گزشتہ چند مہینوں میں امریکہ نے پاکستان کیخلاف جو رویہ اختیار کیا ہے یقینا وہ ستر برس پر محیط تعلقات اور پاکستان کی قربانیوں پر پانی پھیرنے کے مترادف ہے۔

پاکستان میں تحریک انصاف کی نئی حکومت کیساتھ امریکہ کی طرف سے ابتدائی طور پر اچھی خبریں آنا شروع ہوگئی تھیں اور پاکستانی عوام توقع کر رہے تھے کہ ان دو اہم ملکوں کے درمیان خوشگوار تعلقات سے بہت جلد خطے میں امن کو فروغ ملنا شروع ہو جائیگا۔ عمران خان نے بھی امریکہ کو خیر سگالی کا پیغام بھیجا تھا لیکن پومپیو کی ایک کال نے نیا مخمصہ کھڑا کیا ہے جو حقیقت میںکچھ بھی نہیں ہے۔ بھئی اکثر ایسا ہوتا رہتا ہے جب دو ملکوں کے درمیان بدگمانی ہوتی ہے تو بات چیت کے دوران اور وہ بھی ٹیلیفون کے ذریعے، ایک طرف سے ایک بات ہو جاتی ہے جو دوسری طرف کے مزاج یا نظریات اور پالیسی ومفادات یا حقائق کیخلاف ہوتی ہے لہٰذا اسے ان سنی کرتے ہوئے بیان دینا پڑتاہے کہ ایسی کوئی بات ہوئی ہی نہیں ہے۔

پاکستان میں اپوزیشن کو جو عمران خان کی مخالفت بلکہ دشمنی پر اُدھار کھائے بیٹھی ہے ایک بات مل گئی ہے لہٰذا صبح وشام اب اس کا ورد ہے کہ ریکارڈنگ منظرعام پر لائی جائے۔ بھئی کیوں؟ نوازشریف اور دیگر حکمرانوں سے امریکہ کے حکمرانوں نے کئی ایسی باتیں کی ہیں۔ ابھی ٹرمپ نے پاکستانیوں کی تعریف کی اور بعد میں مکر گئے۔ لہٰذا سیاستدانوں کو ایسی باتوں کا بتنگڑ بنانے سے پرہیز کرتے ہوئے پاکستانی وزارت خارجہ کی بات پر صاد کر لینا چاہئے اور انتظار کرنا چاہئے کہ پومپیو کے دورہ پاکستان سے کیا چیز سامنے آتی ہے۔ باقی پومپیو کے فون میں بقول شاعر جو نیا سلام بھیجا گیا ہے وہ ضرور ہمارے رقیب کے نام تھا لیکن ہم پھر بھی نظرانداز کئے دیتے ہیں۔۔

تمہارے خط میں نیا اک سلام کس کا تھا
نہ تھا رقیب تو آخر وہ نام کس کا تھا

زمرہ جات:   Horizontal 5 ، دنیا ،
ٹیگز:   پاکستان ، انڈیا ، امریکہ ،
دیگر ایجنسیوں سے (آراس‌اس ریدر)

Couple shot, injured in Karachi

- اے آر وائی