ایک دن نیب کے ساتھ

آزادی کی منزل قریب تر ہے، فلسطینی قوم کا خون جلد رنگ لائے گا: خالد مشعل

آئی او کے لاپتہ چیئرمین رضی شمسی بخیر و عافیت گھر پہنچ گئے

'گجرات سے مسلم نشانیاں دانستہ مٹائی جا رہی ہیں'

’امریکا کیلئے پاکستان نے جو کیا اس کا بدلہ خون سے چکا رہے ہیں‘

افغانستان میں طالبان ہارے نہیں بلکہ پوزیشن مضبوط ہوئی ہے

’جے آئی ٹی کے ریکارڈ کردہ بیانات قابل قبول شہادت نہیں‘

انسداد مالی بدعنوانی کیلئے اجتماعی تعاون کی ضرورت

ایمپریس مارکیٹ آپریشن کے متاثرین کا کیا ہوگا؟

یمن پر سعودی جارحیت اورامریکی سعودی گٹھ جوڑ کے خلاف مظاہرہ

برطانوی وزیر خارجہ ایران پہنچ گئے

سعودی عرب نے وحشی پن کے ہتھیار کو تلوار سے آری میں تبدیل کر دیا

خاشقجی کے قاتل لاش کی باقیات ترکی سے باہر لے گئے: ترکی

دمشق کے مضافات میں امریکی میزائلوں کا انکشاف

نمائشی انتخابات کے خلاف بحرینی عوام کے مظاہرے

غزہ کے حالیہ واقعے میں تحریک حماس کی کامیابی کا اعتراف

ماڈل ٹاؤن کیس: نئی جے آئی ٹی کیلئے لارجر بنچ کی تشکیل

پاکستان نے امریکہ کے لئے کچھ نہیں کیا/ اسامہ بن لادن کو فوجی چھاؤنی کےقریب چھپا رکھا

آل سعود انسانی اقدار کو پامال کررہے ہیں

اگر کتا حملہ کردے تو آپ کو کیا کرنا چاہئے؟

پاکستان میں جعلی ادویات: اربوں کا منافع، ہزارہا جانوں کا ضیاع

علامہ سید جواد نقوی کی طاہر القادری سے ملاقات

پاراچنار، حکومت شاملات کے معاملہ میں دلچسپی لیتے ہوئے شلوزان کے عوام کو انکا حق دلائے، علامہ فدا مظاہری

وزیر اعظم، دیگر رہنماؤں کا حاجی عبدالوہاب کے انتقال پر اظہار افسوس

ماضی میں بلوچستان کےعوام کےلیےفلاحی منصوبےنہیں بنائے گئے‘ وزیراعلیٰ بلوچستان

وزیراعظم کی آرمی چیف کے ہمراہ یو اے ای کے صدارتی محل آمد

سعودی عرب کی خونخوار حکومت کی طرف سے یمن میں جنگ بندی کی باتیں فریب پر مبنی ہیں

نائیجیریا :تکفیری گروپ بوکوحرام نے دس خواتین کو اغواء کرلیا:ترک نیوز ایجنسی

’کیلیفورنیا جنگلات میں بدترین آگ ، 1000 سے زائد افراد لاپتہ‘

چین تجارتی پالیسی نہیں بدلتاتو محصولات دوگنا ہوسکتی ہیں، مائیک پنس

ایران و عراق کے درمیان تعلقات لازوال : ایرانی اسپیکر

اسرائیل اپنی طاقت کے گھمنڈ میں مبتلا نہ ہو

عراقی عوام دشمنوں کی ہر سازشوں کو ناکام بنادیں گے،سید علی خامنہ ای

عراق اور ایران اقتصادی تعاون کو 20 ارب ڈالر تک بڑھانے کے لئے پرعزم

روہنگیا مسلمانوں پرتشدد کے خلاف مذمتی قرارداد منظور

شام پر فاسفورس بموں سے حملے امریکی جرائم کی علامت ہے:سربراہ سلوواکیا کی کیمونسٹ پارٹی

اسرائیلی صرف طاقت کی زبان ہی سمجھتے ہیں !!!

جیزان میں جارح سعودی اتحاد کے ٹھکانوں پر یمنی فوج کا جوابی حملہ

امریکی حملے میں عورتوں اور بچوں سمیت درجنوں شامی شہری جاں بحق

آیت اللہ شیخ زکزاکی کی رہائی کیلئے مظاہرے

حضرت امام زمانہ (عج) کی امامت کا آغاز منتظران کو مبارک

کیا یمن میں تاریخ انسانی کا سب سے بڑا سانحہ ہونے کو ہے؟

روہنگیا کے حقوق کی خلاف ورزیاں، اقوام متحدہ کمیٹی کی مذمت

خاشقجی کے آخری کلمات

شاعرِ اہلِ بیت سلمان اعظمی انتقال کر گئے

بلاول بھٹو زرداری کا معروف شاعر ریحان اعظمیٰ کے صاحبزادے سلمان اعظمی ٰکے انتقال پر گہرے دکھ کا اظہار

طاہر داوڑ کوئی معمولی پولیس افسر نہیں تھے

پولیس کا مولانا سمیع الحق کی قبر کشائی اور پوسٹ مارٹم کا فیصلہ

’5 برسوں میں 26 صحافی قتل، کسی ایک قاتل کو بھی سزا نہیں ہوئی‘

’افسوس ہے کہ اؔمرانہ سوچ رکھنے والا ملک کا وزیراعظم بن گیا‘

عراق کے صدر تہران پہنچ گئے

قائد آباد سے برآمد ہونے والا بم انتہائی پیچیدہ ساخت کا تھا

’’میں نے کئی مرتبہ یو ٹرن لیا ہے‘‘

سعودی عرب کے خلاف ہتھیاروں کی پابندی

امریکی فوج کے نکلنے کی وجہ روس و چین

امام حسن عسکری علیہ السلام کی پر مشقت ،مختصر زندگی اور شیعوں کی راہنمائی

امریکہ کے نوکر اور غلام عرب حکام کو ایران کے خلاف متحد ہونے کی دعوت دی ہے

سی آئی اے کا سعودی ولی عہد پر خاشقجی قتل کا الزام

’ڈیرہ غازی خان میں ڈولفن فورس کی تعیناتی کا اعلان ‘

’’عمران یوٹرن والے بیان پر بھی یوٹرن لیں گے‘‘

وحدت کیجانب اہم قدم، تحریک بیداری امتِ مصطفیٰ کا 12 ربیع الاول کو وحدتِ امت ریلی نکالنے کا اعلان

چپ تعزیہ کے جلوسوں کے روٹس اور مرکزی اجتماع گاہوں پر سکیورٹی کو غیر معمولی بنایا جائے، آئی جی سندھ

یمن میں قحط سالی کا خدشہ

امریکی بمباری میں درجنوں شامی شہری جاں بحق اور زخمی

بحرین میں خاندانی آمریت کے خلاف مظاہرہ

روہنگیا پناہ گزینوں کا میانمار حکومت کے خلاف مظاہرہ

جنگ بندی کے اعلان کے باوجود یمن پر سعودی اتحاد کے حملے جاری

مصری خاتون کا خاشقجی سے خفیہ شادی کا انکشاف

پاکستان میں ٹیکس چوری کیسے روکی جا سکتی ہے؟

خاشقجی قتل: سعودی موقف کی نفی، ترکی کے پاس ایک اور بڑا ثبوت

خودکش حملے کی داعش نے ذمہ داری قبول کی

2018-11-08 06:32:25

ایک دن نیب کے ساتھ

2

میں نیب کے کچھ زیادہ حق میں نہیں تھا مگر جب مجھے معلوم ہوا کہ نیب اب تک 297ارب قومی خزانے میں جمع کرا چکا ہے اور اس ریکوری پر نیب کے اپنے اخراجات صرف دس ارب ہوئےہیں تومجھے بڑا عجیب لگا ۔میں نے پاکستان ٹیلی ویژن (پی ٹی وی )دیکھا تھاجو سالانہ دس ارب خرچ کرتا ہے اورکماتا ڈیڑھ ارب بھی نہیں ۔قومی دولت کی اتنے بڑی لوٹ مار سیل کی شاید ہی کہیں اور ہو۔وہ وکرپٹ لوگ جو پروڈکشن کی ابجد سے بھی واقف نہیں وہ بڑے بڑے عہدوں پر ہیں۔ایسے اداروں کی موجودگی میں نیب جیسا ادارہ حیرت انگیز دکھائی دیتاہے۔ میں نے نیب کے اسلام آبادآفس کا وزٹ کیا، وہاں آفیسرز سے ملاقاتیں کیں -نیب کے طریقہ کار کو سمجھا-مجھے اندازہ ہوا کہ جب سےجسٹس جاوید اقبال نے نیب کےچیئر مین کی ذمہ داری سنبھالی ہے اس کی کارکردگی میں بے پناہ اضافہ ہو ا ہے ۔ نیب نے تقریباً تین کھرب روپےقومی خزانے میں جمع کرائے ہیں ۔

جسٹس جاوید اقبال نے بتایا کہ ’’میں جب سپریم کورٹ آف پاکستان کے قائمقام چیف جسٹس کے طور پر اپنی ذمہ داریاں سرانجام دے رہا تھا تو اس وقت میں نے کہا تھا۔’’انصاف سب کیلئے‘‘ اور آج میں جب چیئرمین نیب کی حثیت سے اپنی ذمہ داریاں سرانجام دے رہاہوں تو میری پالیسی ہے کہ’’ احتساب سب کیلئے‘‘ ۔ملک سے بد عنوانی کا خاتمہ میری اولین ترجیح اور ہم زیرو ٹالرنس اور خوداحتسابی کی پالیسی پر سختی سے عمل پیرا ہونگے ۔نیب کسی سےانتقام کیلئے نہیں بنا، ہم ریاست کے ملازم ہیں اور بلاتفریق قانون کےمطابق اپنا کام کر رہے ہیں ۔ ‘‘

 

اس وقت نیب کے پاس مختلف سیاسی پارٹیوں کےاکہتر رہنمائوں کے کیس موجود ہیں۔پیپلز پارٹی کے بیس لوگ ہیں ۔نون لیگ کے بارہ افراد ہیں۔پی ٹی آئی کے آٹھ افراد ہیں۔ایم کیو ایم کے چار رہنما ہیں اور قاف لیگ کے تین لیڈر شامل ہیں۔امکان ہے کہ اگلے ہفتے اِن پارٹیوں کے کچھ نہ کچھ رہنماگرفتار کرلئے جائیں گے ۔حکومتی پارٹی کے کچھ نام بھی سر فہرست ہیں۔کچھ صحافی اور اینکرز بھی نیب کی زد میں ہیں۔ اُن کے خلاف بھی کسی وقت کارروائی ہو سکتی ہیں ۔ایسے صحافی بھی ہیں جن کے اثاثے دس ارب سے زیادہ ہیں ۔

چیئرمین نیب کسی دباؤ اور سفارش کو خاطر میں نہیں لا رہے ۔تمام انکوائریاں قانون کے دائرے میں مکمل کی جارہی ہیں ۔سالہا سال سےفائلوں اور الماریوں میں بند مقدمات پر کام تیزی سے شروع ہے۔قومی احتساب بیورو کے چیئرمین جسٹس جاوید اقبال نے نیب کو ایک متحرک ادارہ بنا دیا ہے ۔نیب ملک سے بدعنوانی کے خاتمہ کی آواز بن چکا ہے مگر سننے میں آیا ہے موجودہ حکومت اس کے پر کاٹ دینا چاہتی ہے ۔مجھے اس بات میں کوئی صداقت نہیں دکھائی دیتی کیونکہ عمران خان کرپشن کے خاتمے کےلئے اپنی زندگی وقف کر چکے ہیں۔ مجھے پورا یقین ہے کہ ایسا کچھ نہیں ہوگا نیب سے کسی کو گرفتار کرنے کا اختیار واپس نہیں لیا جائے گا۔بلکہ نیب کو اور اختیار دئیے جائیں گے ۔

عالمی اقتصادی فورم نے کرپشن کی ریٹنگ سے متعلق سالانہ رپورٹ جاری کی ہے جس میں نیب کی کوششوں کو سراہا گیاہے۔رپورٹ کے مطابق پاکستان میں کرپشن میں نمایاں کمی واقع ہوئی ہے۔پاکستان دنیا کے 140 ممالک میں سے 107 ویں نمبر پر آ گیاہے۔سال2017 کی رپورٹ میں پاکستان 117 ویں نمبر پر تھا۔یعنی ایک سال میں پاکستان نے انسداد بد عنوانی اقدامات کے باعث 9 پوائنٹس حاصل کئےہیں۔

نیب نے احتساب سب کیلئے کی پالیسی کے تحت 503بدعنوان عناصر سے لوٹی گئی قومی دولت کی واپسی کیلئے کارروائی کی ہے اور اکتوبر 2017ءسے لیکر ستمبر 2018ءکے اختتام تک بد عنوان عناصر کے خلاف کی جانے والی کارروائیوں میں نمایاں اضافہ ہوا ہے ۔سال 2018ءکے دوران نیب کو 44ہزار315شکایات موصول ہوئیں ، جن میں سے 1713شکایات کی ویریفیکیشن ، 877انکوائریاں اور 227انوسٹیگیشنز کی گئیں ، جن کے نتیجہ میں نیب نے قومی دولت لوٹنے والے بدعنوان عناصر سے 2580ملین روپے کی وصولی کی جو ملک میں بدعنوانی کے خلاف کام کرنے والے کسی بھی ادارے کی کارکردگی سے کہیں بہتر ریکارڈ ہے۔

نیب نے مختلف احتساب عدالتوں میں بد عنوانی کے 440ریفرنسز دائر کئے جبکہ اس وقت احتساب عدالتوں میں قانون کے تحت 1210ریفرنسز زیر سماعت ہیں۔ یہ بات قابل فخر ہے کہ ملک سے بدعنوانی کے خاتمہ کیلئے کام کرنے والے ادارے نیب کا کردار نہ صرف دیگر اداروں کیلئے رول ماڈل ہے بلکہ پورے سارک ممالک میں نیب کی کارکردگی متاثر کن ہے۔نیب کی کارکردگی کی وجہ سے پاکستان میں بدعنوانی کی شرح کا انڈیکس175ویں پوزیشن سے کم ہوکر 116ویں پوزیشن پر آگیا ہے ۔ پاکستان وہ واحد ملک ہے جہاں پر بدعنوانی کے انڈیکس میں مسلسل کمی ہو رہی ہے اور بھارت سمیت دیگر سارک ممالک نے پاکستان میں نیب کی کارکردگی کو سراہا ہے ۔ نیب کو سارک کے اینٹی کرپشن فورم کا بلا مقابلہ چیئرمین منتخب کیا گیا جو نیب کی کاوشوں کی وجہ سے پاکستان کی ایک بڑی کامیابی ہے ۔

پاکستان اور چین نے بدعنوانی کے خاتمہ کیلئے (ایم او یو) پر بھی دستخط کئے ہیں اور پاکستان اور چین سی پیک منصوبے میں شفافیت یقینی بنانے کیلئے ملکر کام کر رہے ہیں ۔ پل ڈاٹ ، مشال پاکستان ، گیلپ اور گیلانی سروے ، ٹرانسپیرنسی انٹرنیشنل اور ورلڈ اکنامک فورم سمیت کئی بین الاقوامی ادارے نیب کی کارکردگی کے معترف ہیں۔ نیب بلا تفریق بدعنوانی کے خاتمہ کیلئے پرعزم ہے اور ملک سے بدعنوانی کے خاتمہ کیلئے قانون کے تحت جامع حکمت عملی کے مطابق اقدامات جاری ہیں

جسٹس جاوید اقبال سرکاری پروٹوکول لیتے ہیں اور نہ ہی کسی قسم کی مراعات ۔انہوں نے آتے ہی ہر طرح کے سرکاری کھانوں، دفاتر میں چائے اور بسکٹ پر مکمل پابندی عائد کر دی تھی اور یہ ہدایت کی تھی کہ اگر کوئی افسر اپنے دفتر میں چائے بسکٹ سے مہمانوں کی تواضع کرے گا تو وہ اپنی جیب سے بل ادا کرے گا، اب نیب میٹنگز کے دوران بھی چائے ، ریفریشمنٹ اورکھانا پیش نہیں کیا جاتا -افسران سےاضافی سرکاری گاڑیاں واپس لے لی تھیں۔ انہوں نےایبٹ آباد کمیشن کی سربراہی کے عوض ملنے والے61لاکھ روپے قومی خزانے میں جمع کروا دیئے تھے ۔

 

Leave a Reply

Your email address will not be published. Required fields are marked *

زمرہ جات:   پاکستان ،
ٹیگز:   نیب ، دن ،
دیگر ایجنسیوں سے (آراس‌اس ریدر)